ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: سری نگر میں دہشت گردوں نے برسائیں گولیاں، ایک پولیس اہلکار شہید

سری نگر کے کنی پورہ علاقے (Kanipora area of Srinagar) میں ایک دہشت گرد نے گولیاں برسائیں، جس کی وجہ سے ریاستی پولیس کے ایک جوان جاوید احمد کی شہید ہوگئی۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: سری نگر میں دہشت گردوں نے برسائیں گولیاں، ایک پولیس اہلکار شہید
جموں وکشمیر: سری نگر میں دہشت گردوں نے برسائیں گولیاں، ایک پولیس اہلکار شہید

نئی دہلی: جموں وکشمیر (Jammu-Kashmir) میں منگل کو ایک بار دہشت گردانہ سانحہ (Terror Incident) پیش آیا ہے۔ سری نگر کے کنی پورا علاقے میں ایک دہشت گرد نے گولیاں برسائیں، جس کی وجہ سے ریاستی پولیس کے ایک جوان کی شہادت ہوگئی ہے۔ ٹھیک پانچ دن پہلے 18 جون کو بھی سری نگر میں ایسا ہی ایک سانحہ پیش آیا تھا، جس میں ایک دیگر پولیس اہلکار کی شہادت ہوئی تھی۔ وادی کے سید پورہ علاقے میں جاوید احمد نام کے جوان پر دہشت گردوں نے گولیاں برسا دی تھیں۔


واضح رہے کہ جموں وکشمیر کے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس دلباغ سنگھ نے پیر کو ہی کہا تھا کہ وادی میں ’اچھی خاصی تعداد‘ میں غیر ملکی دہشت گرد موجود ہیں، حالانکہ وہ سامنے نہیں آرہے ہیں۔ دلباغ سنگھ نے کہا کہ اس سال کشمیر میں دو تصادم میں صرف دو غیر ملکی دہشت گرد مارے گئے ہیں۔


ڈی جی پی نے کہا تھا، ’دونوں سوپور میں (شمالی کشمیر کے بارہمولہ ضلع میں) میں مارے گئے ہیں۔ ان میں سے ایک پیر کے روز مارا گیا۔ دونوں لشکر طیبہ سے تھے، جس سے واضح اشارہ ملتا ہے کہ غیر ملکی دہشت گرد یہاں موجود ہیں۔ وہ سامنے نہیں آرہے ہیں۔ ہمارے پاس ان کے بارے میں اطلاعات موجود ہیں، جس کی بنیاد پر ہماری مہم چلائی جارہی ہیں۔


’جموں وکشمیر میں ڈرون کے ذریعہ ہتھیار پہنچائے جا رہے ہیں‘

آج سی ڈی ایس بپن راوت نے کہا ہے کہ سیز فائر کے باوجود جموں وکشمیر میں ڈرون کے ذریعہ ہتھیار پہنچائے جا رہے ہیں۔ بپن راوت نے کہا ہے کہ ایل او سی پر سیز فائر نافذ ہے، جو ایک مثبت بات ہے، لیکن ٹھیک اسی وقت ہم ہتھیاروں کی دراندازی بھی دیکھ رہے ہیں۔ یہ دراندازی ڈرون کا استعمال کرکے کی جارہی ہے۔ یہ دونوں ممالک کے درمیان امن کے لئے صحیح نہیں ہے کیونکہ اس سے امن وامان کے عمل میں رخنہ اندازی ہوتی ہے۔ اگر امن میں رخنہ اندازی ہوتی ہے تو ہم پھر یہ نہیں کہہ پائیں گے کہ سیز فائر صحیح طریقے سے کام کر رہا ہے۔ سیز فائر کا مطلب یہ نہیں کہ سرحدوں پر امن برقرار رہے، لیکن داخلی حصوں میں ہنگامہ پیدا کرنے کی کوشش کی جائے۔ ہم چاہتے ہیں کہ پورے جموں وکشمیر علاقے میں امن وامان برقرار رہے۔

 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jun 23, 2021 08:34 AM IST