உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: آزاد کے ساتھ سیاستدانوں کے ملاپ کا اپنی پارٹی پر نہیں پڑے گا کوئی اثر: رفیع احمد میر

    J&K News: آزاد کے ساتھ سیاستدانوں کے ملاپ کا اپنی پارٹی پر نہیں پڑے گا کوئی اثر: رفیع احمد میر

    J&K News: آزاد کے ساتھ سیاستدانوں کے ملاپ کا اپنی پارٹی پر نہیں پڑے گا کوئی اثر: رفیع احمد میر

    Jammu and Kashmir News: جموں کشمیر اپنی پارٹی کے جنرل سیکریٹری رفیع احمد میر نے نیوز 18 کے ساتھ خاص بات چیت میں کہا کہ نئی پارٹیوں کی تشکیل سے جموں و کشمیر کی موجودہ سیاسی صورتحال پر کوئی اثر نہیں پڑے گا، کیونکہ یہاں پر ایک مختلف سیاسی نظام کی ضرورت ہے اور نئی دہلی کو یہاں کے مسائل حل کرانے میں ایک کلیدی رول ادا کرنا ہوگا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir | Jammu | Srinagar
    • Share this:
    جموں و کشمیر: ملکی سطح پر سیاست کے میدان میں اپنی چھاپ چھوڑنے والے سیاستدان غلام نبی آزاد کے کانگریس چھوڑنے کے بعد لگاتار سیاسی لیڈران کا ردعمل سامنے آ رہا ہے۔ جبکہ آزاد کے ساتھ شامل ہونے کیلئے لگاتار سیاستدان اپنی پارٹیوں سے کنارہ کر رہے ہیں۔ درىں اثنا جموں کشمیر اپنی پارٹی بھی اب اس سیاسی اتھل پتھل کی شکار ہوتی نظر آ رہی ہے۔ جہاں حال ہی میں اپنی پارٹی کے ایک لیڈر اور کانگریس کے سابق اسمبلی ممبر شعیب نبی لون نے کھلے خط کے ذریعہ غلام نبی آزاد پر اپنا اعتماد ظاہر کیا تو وہیں خطہ چناب اور دیگر علاقوں کے جموں کشمیر اپنی پارٹی کے 12 ارکان و لیڈران نے پارٹی کو اپنا استعفیٰ پیش کیا اور غلام نبی آزاد کے ساتھ شامل ہونے کا اعلان کیا۔ تاہم اس کے باوجود بھی اپنی پارٹی کے لیڈران کا کہنا ہے کہ پارٹی کارڈر مضبوط ہے اور آزاد لہر کا اپنی پارٹی پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

    پارٹی کے سربراہ سید الطاف بخاری نے کہا تھا کہ اپنی پارٹی تیزی سے ابھرنے والی جماعت ہے اور آزاد کا کانگریس سے نکلنا پارٹی پر کسی صورت اثر انداز نہیں ہوگا ۔ وہیں جموں کشمیر اپنی پارٹی کے جنرل سیکرٹری رفیع احمد میر نے بھی کچھ اسی طرح کا بیان دیا ہے ۔ جموں کشمیر اپنی پارٹی کے جنرل سیکریٹری رفیع احمد میر نے نیوز 18 کے ساتھ خاص بات چیت میں کہا کہ نئی پارٹیوں کی تشکیل سے جموں و کشمیر کی موجودہ سیاسی صورتحال پر کوئی اثر نہیں پڑے گا، کیونکہ یہاں پر ایک مختلف سیاسی نظام کی ضرورت ہے اور نئی دہلی کو یہاں کے مسائل حل کرانے میں ایک کلیدی رول ادا کرنا ہوگا۔

     

    یہ بھی پڑھئے:  راجوری اور پونچھ سے دراندازی کی پاکستان کیوں کررہا سازش؟ ماہرین نے بتائی یہ وجہ


    رفیع میر نے مزید کہا کہ غلام نبی آزاد کا کانگریس سے نکلنا یقینی طور پر کانگریس کیلئے پریشانی بنا لیکن اپنی پارٹی پر کوئی اثر مرتب نہیں ہوگا، کیونکہ اپنی پارٹی کو یہاں کے عوام کا منڈیٹ حاصل ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپنی پارٹی کا دفعہ 370، نوکریوں اور زمین کے تحفظ کو لیکر ایجنڈا بھی بالکل واضح ہے اور اپنی پارٹی نے اپنا ایجنڈا لوگوں کے سامنے رکھا ہے، جس کی وجہ سے یہ پارٹی عوامی اعتماد حاصل کرنے میں کامیاب ہوئی ہے اور اسی وجہ سے آزاد کا اپنی پارٹی پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

     

    یہ بھی پڑھئے: جے کے سی اے منی لانڈرنگ کیس میں فاروق عبداللہ کو ضمانت


    شعیب لون کا آزاد پر اعتماد ظاہر کرنے کے ایک سوال کے جواب میں رفیع میر نے کہا کہ شعیب لون نے جمہوری حق سے اپنی نجی رائے کا اظہار کیا اور وہ نہیں جانتے ہیں کہ شعیب لون نے کس تناظر میں یہ بیان دیا تھا ۔ تاہم یہ بات بھی واضح ہے کہ شعیب لون کے بیان کا اپنی پارٹی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

    اسے قبل نیوز18 کے ساتھ ایک خاص انٹرویو میں اپنی پارٹی کے سربراہ سید الطاف بخاری نے کہا تھا کہ غلام نبی آزاد دوہرا میعار اپنا کر اب جموں و کشمیر کے لوگوں کے ترجمان بننے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ جبکہ حقیقت یہ ہے کہ آزاد ہی جموں و کشمیر کی موجودہ صورتحال کیلئے ذمہ دار ہیں اور دفعہ 370 کے خاتمہ کیلئے براہ راست طور پر غلام نبی آزاد ہی ذمہ دار ہیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: