உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر: پرویندر کور کرنا چاہتی ہے گائیکی کے میدان میں اپنا نام روشن

    جموں وکشمیر: پرویندر کور کرنا چاہتی ہے گائیکی کے میدان میں اپنا نام روشن

    جموں وکشمیر: پرویندر کور کرنا چاہتی ہے گائیکی کے میدان میں اپنا نام روشن

    جموں وکشمیر میں بہت سے باصلاحیت فنکار ہیں جن میں متعلقہ شعبوں میں شاندار کارکردگی دکھانے کی صلاحیت ہے، لیکن ایسا کوئی پلیٹ فارم نہ ہونے یا اچھی پشت پناہی نہ ہونے کی وجہ سے وہ ایکسل کرنے میں ناکام رہتے ہیں۔ جموں سے تعلق رکھنے والے باصلاحیت گلوکار پرویندر کور بھی ایسے ہی فنکاروں میں سے ایک ہیں جن کے پاس بہت زیادہ صلاحیتوں کے باوجود گلوکاری کے میدان میں اچھا پلیٹ فارم نہیں ہے۔

    • Share this:
      جموں: جموں وکشمیر میں بہت سے باصلاحیت فنکار ہیں، جن میں متعلقہ شعبوں میں شاندار کارکردگی دکھانے کی صلاحیت ہے، لیکن ایسا کوئی پلیٹ فارم نہ ہونے یا اچھی پشت پناہی نہ ہونے کی وجہ سے وہ ایکسل کرنے میں ناکام رہتے ہیں۔  جموں سے تعلق رکھنے والے باصلاحیت گلوکار پرویندر کور بھی ایسے ہی فنکاروں میں سے ایک ہیں جن کے پاس بہت زیادہ صلاحیتوں کے باوجود گلوکاری کے میدان میں اچھا پلیٹ فارم نہیں ہے۔

      جموں کے گول گجرال علاقے میں رہنے والی ایک بہت ہی باصلاحیت گلوکار پرویندر کور سے ہماری ملاقات ہوئی، جو ایک نہایت ہی سریلی آواز کی مالک ہیں۔ ابھی تک  کور نے کئی بھگتی گیت اور غزلیں گائی ہیں اور لوگوں نے ان کی آواز کو کافی پسند کیا ہے۔

      ان کے گانے کا انداز منفرد ہے اور انہیں سامعین کی جانب سے بہت واہ واہی مل رہی ہے۔” میرے تین بچے ہیں اور میرے شوہر ڈرائیور کا کام کرتے ہیں، جس سے صرف گھر کے اخراجات ہی پورے کئے جاسکتے ہیں۔ پیسوں کی قلت کی وجہ سے میں گائکی کے میدان میں زیادہ اُبھر نہیں پارہی ہوں۔ “

      پرویندر کور کا کہنا ہے کہ ’’میں نے حال ہی میں اتراکھنڈ کے شہر ہری دوار میں منعقدہ قومی گلوکاری کے مقابلے میں اوپن کیٹیگری میں دوسرا انعام جیتا، جس کے بعد اب مجھے آنے والے دنوں میں انٹرنیشنل گائیکی مقابلے میں حصہ لینے کا موقع ملے گا"۔

      نیوز 18 اردو سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ”مجھے بچپن سے ہی گائیکی کا شوق ہے، میں گلوکاری کے میدان میں بہترین کارکردگی دکھانا اور نام اور شہرت بنانا چاہتی ہوں، لیکن مالی تنگی اور مناسب پلیٹ فارم نہ ہونے کی وجہ سے میں ابھی تک اپنے سپنوں کو حقیقت کی شکل نہیں دے پائی، لیکن پھر بھی میں اپنے گائیکی کے شوق کو ایک پہچان دینے میں کامیاب رہی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اب میں چاہتی ہوں کہ حکومت آگے آئے اور میرے دیرینہ خوابوں کو پورا کرنے میں میری مدد کرے۔“

      اس باصلاحیت گلوکارہ کو اپنے خواب کو پورا کرنے میں خاندان اور خاص طور پر بچوں کی طرف سے کافی تعاون حاصل ہے، لیکن ہزاروں باصلاحیت گلوکاروں اور فنکاروں کو متعلقہ شعبوں میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کے لئے حکومت کی جانب سے بہت زیادہ حمایت کی ضرورت ہے، تاکہ جموں وکشمیر کے وہ فنکار جو مالی کمی ہونے کی وجہ سے اپنی فن کو اپنے تک ہی محدود رکھتے ہیں، اُنہیں ایسا نہ کرنا پڑے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: