ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : بانڈی پورہ میں سسرال والوں کے ہاتھوں بہو کے مبینہ قتل کے خلاف احتجاج ، پولیس پر بھی لگا یہ بڑا الزم

بانڈی پورہ کے آیت مولہ علاقہ سے تعلق رکھنے والی 28 سالہ فریاد بیگم کی شادی چند سال قبل چِٹھے بانڈی میں ہوئی تھی ۔ 10 جولائی کو فرہاد بیگم پراسرار حالت میں سسرال میں جھلس گئی اور اُس وقت اس کو خودکشی کا واقعہ قرار دیا گیا ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : بانڈی پورہ میں سسرال والوں کے ہاتھوں بہو کے مبینہ قتل کے خلاف احتجاج ، پولیس پر بھی لگا یہ بڑا الزم
جموں و کشمیر : بانڈی پورہ میں سسرال والوں کے ہاتھوں بہو کے مبینہ قتل کے خلاف احتجاج ، پولیس پر بھی لگا یہ بڑا الزم

محمد سعید بیگ


جموں و کشمیر کے بانڈی پورہ چٹھے بانڈے میں مبینہ طور سسرال والوں کے ہاتھوں بہو کو قتل کئے جانے کے خلاف آج لڑکی کے رشتہ داروں نے بانڈی پورہ مارکیٹ میں احتجاج کیا ۔ احتجاجی لوگ مطالبہ کر رہے تھے کہ اس مبینہ قتل میں ملوث تمام لوگوں کو گرفتار کرکے انہیں انصاف فراہم کیا جائے ۔ تفصیلات کے مطابق بانڈی پورہ کے آیت مولہ علاقہ سے تعلق رکھنے والی 28 سالہ فریاد بیگم کی شادی چند سال قبل چِٹھے بانڈی میں ہوئی تھی ۔ 10 جولائی کو فرہاد بیگم پراسرار حالت میں سسرال میں جھلس گئی اور اُس وقت اس کو خودکشی کا واقعہ قرار دیا گیا ۔ 11 جولائی کو فرہاد بیگم کا اسپتال میں انتقال ہوگیا۔


بتایا جارہا ہے کہ مرنے سے قبل فرہاد بیگم نے پولیس کو یہ بیان دیا ہے کہ اس کی ساس اور نند اسے ستاتی تھی ۔ ادھر پولیس نے کل لڑکی کی ساس کو گرفتار کرلیا ۔ تاہم اسے سینٹرل جیل منتقل کرنے سے پہلے جب کووڈ ٹیسٹ کرایا گیا تو وہ مثبت پائی گئی ، جس کے بعد اس کو جیل کی بجائے فی االحال اسپتال بھیج دیا گیا ہے ۔


یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پولیس نے اس معاملہ میں پہلے لگائی دفعات میں اب دفعہ 306 بھی جوڑدیا ہے اور یوں اب سسرال والوں پر اپنی بہو کو خود کشی کیا مجبور کرنے کا الزام لگایا گیا ہے ۔ ادھر آج مہلوک لڑکی کے رشتہ داروں نے الزام لگایا کہ اس معاملہ میں قانون کے مطابق کاروائی نہیں کی جارہی ہے اور پیسہ کے دم پر ملوث لوگوں کو بچانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔

تاہم پولیس نے تمام تر الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اس معاملہ میں قانون کے مطابق ہی کارروائی جاری ہے اور مہلوک لڑکی کے لواحقین کو پولیس کے ساتھ تعاون کرکے ان پر اعتماد کرنا چاہئے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 19, 2020 05:30 PM IST