உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنا اور ان کا سماجی تحفظ یقینی بنانا مرکزی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل

     مرکزی وزیر مملکت نے کہا کہ جموں و کشمیر کے نوجوانوں کو سود کے بغیر قرضے فراہم کئے جارہے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ نوجوانوں کو ای شرم کارڈ فراہم کرکے  بے روزگار کے مسئلے سے نمٹا جارہا ہے۔

    مرکزی وزیر مملکت نے کہا کہ جموں و کشمیر کے نوجوانوں کو سود کے بغیر قرضے فراہم کئے جارہے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ نوجوانوں کو ای شرم کارڈ فراہم کرکے بے روزگار کے مسئلے سے نمٹا جارہا ہے۔

    مرکزی وزیر مملکت نے کہا کہ جموں و کشمیر کے نوجوانوں کو سود کے بغیر قرضے فراہم کئے جارہے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ نوجوانوں کو ای شرم کارڈ فراہم کرکے بے روزگار کے مسئلے سے نمٹا جارہا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir, India
    • Share this:
      رمیش امباردار:
      جموں و کشمیر کے نوجوانوں کو روزگار کے بہتر مواقع فراہم کرنے اور ان کا سماجی تحفظ یقینی بنانا مرکزی سرکار کی اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ یہ بات  لیبر اینڈ ایمپلائیمنٹ کے مرکزی وزیر مملکت  رامیشور تیلی نے  سرینگر میں میڈیا کے نمائیندوں سے بات کرتے ہوئے بتائی۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی سرکار نے جموں و کشمیر یو ٹی کے عوام خاصکر نوجوانوں کی بہبود کے لئے کئی سکیمی شروع کی ہیں جنکا براہ راست فائیدہ یہاں کے عوام کو مل رہا ہے۔ انہوں نےکہا کہ یو ٹی میں اسوقت کئی ترقیاتی پروجیکٹوں پر کام  شدو مد سے جاری ہے  اور یہ سارے پروجیکٹ مقررہ وقت میں مکمل کئے جائیں گے تاکہ جلد سے جلد لوگ ان ترقیاتی کاموں کا استفادہ کر سکیں۔

      مرکزی وزیر مملکت نے کہا کہ جموں و کشمیر کے نوجوانوں کو سود کے بغیر قرضے فراہم کئے جارہے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ نوجوانوں کو ای شرم کارڈ فراہم کرکے  بے روزگار کے مسئلے سے نمٹا جارہا ہے۔ انہوں نےکہا کہ مرکزی سرکار نے ملک میں اڑتیس کروڈ نوجوانوں کوای شرم کارڈ مہیا کرانے کا نشانہ مقرر کیا ہے جس میں سے ابتک تیس کروڈ کارڈ نوجوانون کو اجرا کئے گئے ہیں۔ وزیر نے یہ بھی بتایا کہ جموں و کشمیر یو ٹی میں  بچہ مزدوری  کےمسلے سے نمٹنے کا معاملہ بھی مرکزی سرکار سے اٹھایا جائے گا تاکہ اس مسئلے کو نمٹایا جاسکے اور کہیں پر بھی بچہ مزدوری ہونے نہ پائے۔

      جبل پور ہائی کورٹ کا بڑا فیصلہ، دو بالغ کرسکتے ہیں دوسرے مذہب میں شادی

      سرکاری راشن لینے والوں کیلئے حکومت نے بنایا نیا قانون، راشن ڈیلرس پر کسا شکنجہ



      وزیر نے اس کے بعد ٹریڈ یونین کوارڈنیشن سینٹر کے  مندوب کے ایک کنوینشن میں بھی شرکت کی ۔ اس کنونشن میں یونین کے ممبران،لیڈروں اور دیگر ورکروں نے  مختلف سرکاری محکموں  میں  کام کررہے سیزنل اورعارضی ملازمین کے مسائیل اور مطالبات پر غور و خوض کیا۔  اس کنونشن سے خطاب کرتےہوئے  وزیر نے مندوبین کو بھروسہ دلایا کہ انکے مسائیل اور مطالبات کو مرکزی سرکار  اور یو ٹی انتظامیہ کے سامنےرکھا جائے گا  تاکہ انکے مسائل کو جلد سے جلد دور کیا جاسکے۔ وزیر نے اس موقع پر مرکزی سرکارکے ان اقدامات کو اجاگر کیا جو وہ  ورکروں کی بہبود کے لئے اٹھارہی ہے۔ بعد میں وزیر نے ای شرم رجسٹریشن کیمپکا بھی افتتاح کیا  اور اجولا سکیم کے مستحقین کو سینکشن لیٹرس بھی فراہم کیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: