உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: پلوامہ میں پولیس نے سائبر کرائم کے حوالے سے اسکولوں میں شروع کی بیداری مہم

    J&K News: پلوامہ میں پولیس نے سائبر کرائم کے حوالے سے اسکولوں میں شروع کی بیداری مہم

    J&K News: پلوامہ میں پولیس نے سائبر کرائم کے حوالے سے اسکولوں میں شروع کی بیداری مہم

    Jammu and kashmir News : جموں و کشمیر پولیس نے سائبر کرائم کے نئے رجحانات سے عام لوگوں اور خاص کر نوجوانوں کو آگاہ کرنے کے لیے پولیس کی جانب سے سرکاری اور نجی اسکولوں میں سائبر کرائم سے متعلق بیداری پروگرام کا انعقاد کیا جارہا ہے۔ پولیس کی جانب سے پروفیسرز، لیکچررز، اساتذہ، طلبہ، بینک ملازمین کے علاوہ عام لوگوں کو مدعو کیا جاتا ہے۔

    • Share this:
    پلوامہ : نوجوان طالب علموں کو مختلف سائبر جرائم سے دور رکھنے کے لیے جموں کشمیر پولیس کی ایک بہترین پہل اسکولوں میں چلایی جارہی ہے ۔ جموں کشمیر کے ملی ٹنسی متاثر ضلع پلوامہ میں پولیس کی جانب سے طالب علموں میں پولیس کے ماہرین طلبہ کو سائبر کرایم سے آگاہ کررہے ہیں ۔ تفصیلات کے مطابق جموں و کشمیر پولیس نے سائبر کرائم کے نئے رجحانات سے عام لوگوں اور خاص کر نوجوانوں کو آگاہ کرنے کے لیے پولیس کی جانب سے سرکاری اور نجی اسکولوں میں سائبر کرائم سے متعلق بیداری پروگرام کا انعقاد کیا جارہا ہے۔ پولیس کی جانب سے پروفیسرز، لیکچررز، اساتذہ، طلبہ، بینک ملازمین کے علاوہ عام لوگوں کو مدعو کیا جاتا ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: J&K News: وقف املاک پر قابض افراد کے خلاف چلایا جائے گا بلڈوزر، وقف بورڈ کی چیئرپرسن کی وارننگ


    بیداری مہم ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر پلوامہ کی سربراہی میں چلایی جارہی ہے ۔ سائبر جرائم پیشہ افراد کے ذریعہ کئے جانے والے آن لائن سائبر فراڈ کے حوالے سے بھی آگاہ کیا جارہا ہے ۔ مقررین نے والدین کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ بچے کی سماجی نشوونما میں والدین کی زیادہ ذمہ داری ہوتی ہے، کیونکہ وہ اپنے وارڈ کے پہلے اساتذہ اور رہنما کے طور پر کام کرتے ہیں۔

     

    یہ بھی پڑھئے : سری نگر میں دہشت گردوں نے پولیس اہلکارکو ماری گولی، سنگین حالت میں اسپتال میں داخل


    ایس ایچ او پی ایس پلوامہ نے انہیں سائبر خطرات/سرگرمیوں مثلاً شناخت کی چوری، کریڈٹ کارڈ فراڈ، ڈیٹا چوری، سائبر اسٹالنگ، لڑکیوں کی تذلیل، فحاشی پھیلانے وغیرہ کے بارے میں بھی بریفنگ دی۔ اس کے بعد سائبر ماہرین نے یہ بھی معلومات فراہم کی کہ سائبر جرائم پیشہ افراد کس طرح انٹرنیٹ کے ذریعے سائبر کرائمز کو انجام دیتے ہیں۔

    میلویئر، غیر قانونی معلومات، تصاویر یا دیگر مواد پھیلانے کے لیے کمپیوٹر یا آلات کے استعمال کے دوران سوشل میڈیا پلیٹ فارم، ویب سائٹس وغیرہ۔ شرکا کو ای کاپ ایپلیکیشن اور اس کی خصوصیات کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: