உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر: وزیر ریل درشنا جاردوش کشمیر کے دورے پر، کہا- لوگوں کو ملے گی راحت

    جموں وکشمیر: وزیر ریل درشنا جاردوش کشمیر کے دورے پر، کہا- لوگوں کو ملے گی راحت

    جموں وکشمیر: وزیر ریل درشنا جاردوش کشمیر کے دورے پر، کہا- لوگوں کو ملے گی راحت

    وزیر برائے ریلوے درشنا جاردوش کشمیر کے دورے پر ہیں۔ انہوں نے جموں وکشمیر میں ریلوے نیٹرک کے کئی جاری پروجیکٹس کا دورہ کیا۔ سری نگر ریلوے اسٹیشن پر درشنان جاردوش نے پریس کانفرنس کی۔ اس دوران انہوں نے کہا کہ ہمالیائی خطہ میں بس رہے لوگوں کو راحت پہنچانے کے لئے ریلوے انتظامیہ کام کر رہی ہے۔

    • Share this:
    بارہمولہ: وزیر برائے ریلوے درشنا جاردوش کشمیر کے دورے پر ہیں۔ انہوں نے جموں وکشمیر میں ریلوے نیٹرک کے کئی جاری پروجیکٹس کا دورہ کیا۔ سری نگر ریلوے اسٹیشن پر درشنان جاردوش نے پریس کانفرنس کی۔ اس دوران انہوں نے کہا کہ ہمالیائی خطہ میں بس رہے لوگوں کو راحت پہنچانے کے لئے ریلوے انتظامیہ کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مودی سرکار ’آتم نربھر بھارت‘ کے تحت ملک بھر میں کئی پروجیکٹس پر کام کر رہی ہے۔
    ادھمپور، سرینگر،بارہمولہ ریل لنک نیشنل پروجیکٹ کے حوالے سے جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ اس پروجیکٹ کے بننے سے لوگوں کا کافی راحت ہوگی کیونکہ موسم کیسا بھی ہو لوگوں کے لئے ٹرین جاری رہے گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس پروجیکٹ سے روزگار کے ساتھ ساتھ کاروبار بھی بڑے گا۔ جاردوش نے کہا کہ چونکہ ہمالیائی خطہ ہے اور ہمالیہ کافی اونچا ہے، اس لئے پروجیکٹ میں کئی رکاوٹیں آرہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس پروجیکٹ میں کئی ساری ٹنلیں بھی بنیں گی کیونکہ پہاڑی کافی زیادہ ہے۔

    وزیر برائے ریلوے درشنا جاردوش کشمیر کے دورے پر ہیں۔ انہوں نے جموں وکشمیر میں ریلوے نیٹرک کے کئی جاری پروجیکٹس کا دورہ کیا۔
    وزیر برائے ریلوے درشنا جاردوش کشمیر کے دورے پر ہیں۔ انہوں نے جموں وکشمیر میں ریلوے نیٹرک کے کئی جاری پروجیکٹس کا دورہ کیا۔


    انہوں نے کہا کہ پہاڑی پر تعمیراتی جگہوں تک سامان پہنچانے کے لئے مشینری  کے لئے گاڑیاں پہنچانے کے لئے سڑکیں اور کئی پل بنانے پڑے اور ریلوے نے دو سو پانچ کلو میٹر روڈ بنایا، جس کے لئے دو ہزار کروڑ روپئے کی لاگت آئی۔ درشنان جاردوش نے کہا کہ اس پروجیکٹ میں کئی رکاوٹیں ہیں، لیکن اس پروجیکٹ کے بننے سے کشمیر کو ملک کے دوسرے حصوں کے ساتھ جوڑا جائے گا۔ اس ریل پروجیکٹ کی کل لمبائی دو سو بہتر کلو میٹر ہے۔ اس پروجیکٹ کو چار حصوں میں بانٹا گیا ہے، جس میں ادھمپور سے کٹرا تک، کٹرا سے بانیہال تک، بانیہال سے قاضی گنڈ تک اور قاضی گنڈ سے بارہمولہ تک ہے۔

    انہوں نے کہا کہ ان چار حصوں میں سے تین مکمل ہو چکے ہیں اور کٹرا بانیہال والے حصہ پر کام جاری ہے۔ کٹرا بانیہال ریل سروس کی جانکاری دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس میں 87 فیصد جو لمبائی ہے، وہ صرف ٹنلز کی ہے، یعنی 111 کلو میٹر میں سے 97 کلو میٹر پر ٹنلز ہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس حصہ میں انجینئرنگ کے کارنامے بھی ہے دنیا کا سب سے اونچا پل دی۔ چناپ پل اسی حصہ میں ہے۔ وہیں پہلا کیبل پل انجلی پل بھی اسی میں ہے۔ وہیں جب ان سے پوچھا گیا کہ 2017 میں یہ اعلان کیا گیا تھا کہ بارہمولہ بانیہال کے درمیان پانچ نئے اسٹیشنز بنایے جائیں گے، تو انہوں نے کہا کہ دو پر کام جلد مکمل ہو آج کہ بقیہ تین کے لئے پھر سے اسکریننگ کی جائے گی۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: