اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ترقی کے کاموں میں جموں و کشمیر آخر کیوں پچھڑ رہا؟ وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہی یہ بات

    ترقی کے کاموں میں جموں و کشمیر آخر کیوں پچھڑ رہا؟ وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہی یہ بات۔ فائل فوٹو ۔

    ترقی کے کاموں میں جموں و کشمیر آخر کیوں پچھڑ رہا؟ وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہی یہ بات۔ فائل فوٹو ۔

    Ladakh News: ملک کے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ آزادی کے بعد جموں و کشمیر میں بنیادی ڈھانچے کی ترقی نہیں ہونے کی وجہ سے دہشت گردی لگاتار بڑھتی چلی گئی ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir | Ladakh | Srinagar
    • Share this:
      لداخ : ملک کے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ آزادی کے بعد جموں و کشمیر میں بنیادی ڈھانچے کی ترقی نہیں ہونے کی وجہ سے دہشت گردی لگاتار بڑھتی چلی گئی ۔ جمعہ کے روز انہوں نے لداخ میں بارڈر روڈز آرگنائزیشن کی طرف سے بنائے جارہے 75 پروجیکٹس کو ملک کے نام وقف کیا۔ ان پروجیکٹس کے تحت 45 برج، 27 سڑکیں، دو ہیلی پیڈ اور کاربن فری گھر بنائے جانے ہیں ۔ ان سبھی پروجیکٹس کی پہنچ سات ریاستوں اور دو مرکز کے زیر انتظام خطوں تک ہوگی ۔ ان میں سے 20 پروجیکٹ صرف جموں و کشمیر کے لئے ہیں۔ لداخ اور اروناچل پردیش میں 18، اتراکھنڈ میں 5 اور سکم، ہماچل پردیش، پنجاب اور راجستھان کیلئے 14 دیگر پروجیکٹس ہیں ۔

      اس موقع پر مرکزی وزیر راجناتھ سنگھ نے کہا کہ سرکار کی کوششوں سے اب ان علاقوں میں امن اور ترقی کی نئی صبح ہورہی ہے ۔ ہمارا مقصد سبھی ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں ترقی کو برقرار رکھنا ہے ۔ بہت جلد ملک کے دیہی اور دور دراز علاقے بھی ملک سے جڑ جائیں گے اور ہم سبھی مل کر ملک کو ترقی کی نئی بلندیوں پر لے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سرحد کے قریب رہنے والے لوگ ہماری حکمت عملی کا حصہ ہیں۔ سرحدی علاقوں میں انفراسٹرکچر کی ترقی زبردست رفتار سے ہو رہی ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ملک بھر کی پولیس کی ہوگی ایک ہی وردی؟وزیر اعظم نے پیش کیا 'ون  نیشن ون یونیفارم'کا آئیڈیا


      یہ بھی پڑھئے: جموں کشمیر:باندی پورہ میں فوجی گاڑی کو اڑانے کی سازش ناکام، دہشت گردوں کی تلاش میں چلی مہم


      پروجیکٹ سے وابستہ 10 اہم باتیں
      کئی اہم پروجیکٹ کی لاگت 2180 کروڑ روپے ہے ۔
      وزیر دفاع نے کہا کہ موسمی چیلنجز کے باوجود بی آر او نے اس ہدف کو حاصل کیا ۔
      ان پروجیکٹ سے ملک کا سیکورٹی نظام مزید مضبوط ہوگا اور سرحدی علاقوں میں اقتصادی ترقی ہوگی ۔
      ڈی ایس ۔ ڈی بی او روڈ پر 14 ہزار فٹ کی اونچائی پر بنا 120 میٹر لمبا شیوک سیتو توجہ کا مرکز ہے ۔
      اس سیتو سے مسلح افواج کیلئے ضروری سامان پہنچانا آسان ہوجائے گا ۔
      مشرقی لداخ میں ہینلے اور ٹھاکنگ میں بنائے جارہے ہیلی پیڈ ہندوستانی فضائیہ کی طاقت بڑھائیں گے ۔
      ہینلے میں ہی بی آر او کاربن فری رہائش گاہ بنا رہا ہے ۔ یہ 19 ہزار فٹ کی اونچائی پر ہوگا ۔
      اس میں خطرناک سرد موسم کے درمیان 75 جوان آرام کرسکیں گے ۔
      وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے چنڈی گڑھ میں بن رہے ہمانک ایئر ڈسپیچ کمپلیکس کا بھومی پوجن بھی کیا ۔
      لیہہ میں بھی ایک بی آر او میوزیم بنایا جارہا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: