ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر میں تعینات سیکورٹی اہلکاروں میں خودکشی کا بڑھتا رجحان، 12 دنوں میں 5 اہلکاروں کی خود کشی

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ہندوارہ کے ولگام میں قائم ایس ایس بی کیمپ میں تعینات پیرا ملٹری جوان امت کمار نے گذشتہ رات دیر گئے خود پر گولی چلا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کر لیا۔ انہوں نے کہا کہ پولیس نے معاملے میں کیس درج کر کے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہو پایا ہے کہ مذکورہ جوان نے یہ انتہائی سخت قدم کیوں اٹھایا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 12, 2020 10:59 AM IST
  • Share this:
جموں و کشمیر میں تعینات سیکورٹی اہلکاروں میں خودکشی کا بڑھتا رجحان، 12 دنوں میں 5 اہلکاروں کی خود کشی
علامتی تصویر

سری نگر۔ شمالی ضلع کپوارہ کے ہندوارہ میں تعینات سشستر سیما بل کے ایک جوان نے مبینہ طور پر اپنے آپ پر گولی چلا کر خود کشی کر لی ہے۔ مبینہ خود کشی کا یہ واقعہ ولگام ہندوارہ میں واقع ایس ایس بی کیمپ میں اتوار اور پیر کی درمیانی رات کو پیش آیا ہے۔ جموں و کشمیر میں ماہ رواں کے دوران بھارتی فوج یا پیرا ملٹری فورسز کے کسی اہلکار کی خود کشی کا یہ پانچواں واقعہ ہے۔ یعنی محض 12 دنوں کے دوران کم از کم پانچ سکیورٹی اہلکاروں نے خود کشی جیسا سنگین اقدام اٹھا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا ہے۔


سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ہندوارہ کے ولگام میں قائم ایس ایس بی کیمپ میں تعینات پیرا ملٹری جوان امت کمار نے گذشتہ رات دیر گئے خود پر گولی چلا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کر لیا۔ انہوں نے کہا کہ پولیس نے معاملے میں کیس درج کر کے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہو پایا ہے کہ مذکورہ جوان نے یہ انتہائی سخت قدم کیوں اٹھایا ہے۔ جموں و کشمیر کے حالات پر گہری نظر رکھنے والے مبصرین کا کہنا ہے کہ سکیورٹی فورسز اہلکاروں میں خودکشی کے بڑھتے ہوئے رجحان کی وجہ سخت ڈیوٹی، اپنے عزیز و اقارب سے دوری اور گھریلو و ذاتی پریشانیاں ہیں۔


انہوں نے کہا کہ اگرچہ حکومت نے سیکورٹی اہلکاروں کے لئے یوگا اور دیگر نفسیاتی ورزشوں کو لازمی قرار دیا ہے لیکن باوجود اس کے جموں و کشمیر میں جوانوں کی جانب سے خودکشی کے واقعات گھٹنے کی بجائے بڑھ رہے ہیں۔ سرکاری اعداد وشمار کے مطابق سال 2010 سے 2019 تک ملک میں 1113 فوجی اہلکاروں کی خودکشی کے 1113 مشتبہ واقعات درج کیے گئے۔ اگرچہ سرکاری اعداد و شمار میں کشمیر میں خودکشی کرنے والے سیکورٹی اہلکاروں کی تفصیلات الگ سے نہیں دی گئیں، تاہم سمجھا جا رہا ہے کہ سب سے زیادہ معاملات یہیں درج ہوئے ہوں گے۔


وزیر مملکت برائے دفاعی امور شریپد نائیک نے گذشتہ برس دسمبر میں لوک سبھا میں ایک سوال کے تحریری جواب میں کہا تھا کہ خودکشی کے ان 1113 معاملوں میں سے فوج میں 891، بھارتی فضائیہ میں 182 اور بحری فوج میں 40 اہلکاروں نے یہ انتہائی قدم اٹھایا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 12, 2020 10:59 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading