உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jammu-Kashmir:سیکورٹی فورس کو ملی بڑی کامیابی، شوپیاں سے گرفتار ہوا لشکر کا دہشت گرد جہانگیر نائیکو

    سیکورٹی فورس کو ملی  بڑی کامیابی۔ (فائل فوٹو)

    سیکورٹی فورس کو ملی بڑی کامیابی۔ (فائل فوٹو)

    یہ گرفتاری ایسے وقت عمل میں آئی ہے جب دہشت گرد مسلسل وادی میں ناپاک حرکتوں کو انجام دینے میں لگے ہوئے ہیں۔ سیکورٹی فورس ان کے صفائے کے لئے لگاتار مہم چلارہی ہے۔ حال ہی میں سیکورٹی فورس کو سوپور اور باندی پورہ علاقے میں بھی بڑی کامیابی ملی تھی جس میں لشکر (LeT) کے چھ دہشت گرد معاونین کو گرفتار کیا گیا تھا۔

    • Share this:
      سرینگر: جموں و کشمیر (Jammu-Kashmir) میں سیکورٹی (Security Force) کو بڑی کامیابی ملی ہے۔ سیکورٹی فورس نے لشکر طیبہ (Lashkar-e-Taiba) کے دہشت گرد جہانگیر نائیکو کو گرفتار کیا ہے۔ یہ گرفتاری شوپیاں کے چدورا بڈگام سے کی گئی ہے۔ جموں و کشمیر پولیس کی جانبسے دی گئی جانکاری کے مطابق فوج کی مشترکہ ٹیم نے جمعرات کو لشکر کے دہشت گرد جہانگیر نائیکو کو گرفتار کیا۔

      یہ گرفتاری ایسے وقت عمل میں آئی ہے جب دہشت گرد مسلسل وادی میں ناپاک حرکتوں کو انجام دینے میں لگے ہوئے ہیں۔ سیکورٹی فورس ان کے صفائے کے لئے لگاتار مہم چلارہی ہے۔ حال ہی میں سیکورٹی فورس کو سوپور اور باندی پورہ علاقے میں بھی بڑی کامیابی ملی تھی جس میں لشکر (LeT) کے چھ دہشت گرد معاونین کو گرفتار کیا گیا تھا۔ ان چھ دہشت گردوں کے قبضے سے بڑی مقدار میں گولہ بارود اور ہتھیار برآمد کیے گئے تھے۔


      دہشت گردوں نے کیا تھا سی آر پی ایف بنکر پر حملہ
      اس سے پہلے بدھ کو فوج کی مہم سے بوکھلائے دہشت گردوں نے اننت ناگ میں سی آر پی ایف بنکر پر فائرنگ کی تھی۔ جانکاری کے مطابق کے پی روڈ پر بنے سی آر پی ایف بنکر پر دہشت گردوں نے فائرنگ کردی تھی۔ فائرنگ کی آواز سنتے ہی لوگوں میں بھگدڑ مچ گئی۔ وہیں سیکورٹی فورس نے فوری علاقے کی گھیرابندی کرتے ہوئے تلاشی مہم شروع کردی۔ بتایا جارہا ہے کہ دہشت گردوں نے کے پی روڈ پر ایف ایم گلی میں سی آر پی ایف بنکر پر حملہ کیا تھا۔

      اس کے علاوہ سینئر عہدیداروں نے اتوار کو جانکاری دیتے ہوئے بتایا تھا کہ جموں و کشمیر میں پاکستان کے لئے کرایہ پر کام کررہے لوگ کشمیری نوجوانوں کو دہشت گردی میں دھکیلنے کی کوشش کررہے ہیں اور اُن کا استعمال صرف ’دہشت گرد پیادے‘ کے طو رپر کیا جارہا ہے۔ اگر کشمیری نوجوان تشدد کا راستہ چھوڑنا چاہیں تو کرایہ پر کام کررہے متعلقہ عناصر اُن کا قتل بھی کرسکتے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: