ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

راجوری میں لائن آف کنٹرول پر گولہ باری، کسی نقصان کی اطلاع نہیں

جموں وکشمیر کے ضلع راجوری میں لائن آف کنٹرول پر ہفتے کے روز ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا تاہم فی الوقت کسی جانب کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 09, 2021 04:33 PM IST
  • Share this:
راجوری میں لائن آف کنٹرول پر گولہ باری، کسی نقصان کی اطلاع نہیں
راجوری میں لائن آف کنٹرول پر گولہ باری، کسی نقصان کی اطلاع نہیں

جموں: جموں وکشمیر کے ضلع راجوری میں لائن آف کنٹرول پر ہفتے کے روز ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا تاہم فی الوقت کسی جانب کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع راجوری کے نوشہرہ سیکٹر میں ایل او سی پر ہفتے کے روز قریب ایک بجے پاکستانی فوج نے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرکے بھارتی چوکیوں کو نشانہ بنایا۔

انہوں نے بتایا کہ وہاں تعینات بھارتی فوجی جوانوں نے حملوں کا بھر پور جواب دیا تاہم فی الوقت کسی بھی جانب کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

قابل ذکر ہے کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان سال 2003 میں جنگ بندی معاہدہ طے پانے کے باوجود بھی جموں و کشمیر کے سرحدوں پر طرفین کے درمیان ایک دوسرے کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کا سلسلہ تواتر کے ساتھ جاری ہے۔

جموں و کشمیر کی سرحدوں پر طرفین کے درمیان گذشتہ تین برسوں کے دوران زائد از ساڑھے آٹھ ہزار بار جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی ہوئی ہے۔

وزارت امور داخلہ نے جموں کے ایک کارکن کی طرف سے دائر ایک آر ٹی آئی کے جواب میں انکشاف کیا ہے کہ یکم جنوری 2018 سے سال رواں کے ماہ جولائی تک جموں و کشمیر میں سرحدوں پر پاکستان نے 8 ہزار 5 سو 71 بار جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Jan 09, 2021 04:33 PM IST