ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: ضلع شوپیاں کو سیاحتی نقشے پرجگہ نہیں ملنے سے حکومت پر عائدکیا گیا یہ بڑا الزام

کشمیر قدرتی خوبصورتی کا حامل ہے اور اس کی خوبصورتی کا موازنہ سوئٹزر لینڈ سے کیا جاتا ہے، لیکن حکومت نے کشمیر کے صرف چند نامزد علاقوں جیسے گلمرگ، پہلگام اور سونمرگ پر توجہ دی گئی جبکہ وادی کے خوبصورت ترین علاقوں پر کوئی توجہ نہیں دی گئی۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: ضلع شوپیاں کو سیاحتی نقشے پرجگہ نہیں ملنے سے حکومت پر عائدکیا گیا یہ بڑا الزام
جموں وکشمیر: ضلع شوپیاں کو سیاحتی نقشے پرجگہ نہیں ملنے سے حکومت پر عائدکیا گیا یہ بڑا الزام۔ فائل فوٹو

ارشاد احمد ملک


شوپیاں: کشمیر قدرتی خوبصورتی کا حامل ہے اور اس کی خوبصورتی کا موازنہ سوئٹزر لینڈ سے کیا جاتا ہے، لیکن حکومت نے کشمیر کے صرف چند نامزد علاقوں جیسے گلمرگ، پہلگام اور سونمرگ پر توجہ دی گئی جبکہ وادی کے خوبصورت ترین علاقوں پر کوئی توجہ نہیں دی گئی۔ اسی طرح، شاداب کریوہ وادی کا سب سے خوبصورت، پرکشش اور پُر امن علاقہ ہے۔ ٹھنڈی ہوائیں ہمیشہ گاؤں میں چلتی رہتی ہیں، جو ایک تازگی آلے کا کام کرتی ہیں۔


مقامی لوگوں نے الزام لگایا کہ اس علاقے کو نظرانداز کردیا گیا ہے اور علاقائی قدرتی خوبصورتی کو عوام کی نظر میں نہیں لایا گیا ہے۔ مقامی لوگوں کا کہنا تھا کہ اگر شاداب کریوہ پر توجہ دی جائے تو یہ جگہ سیاحوں کے لئے ایک پرکشش مقام بن جائے گا، جو مقامی نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرے گا، لیکن حکومت نے عوام کی نظر میں اس طرح کی خوبصورتی کو سامنے لانے کی کبھی کوشش نہیں کی۔

اس علاقے کی مقامی سماجی کرکون، قاضی محمد آصف کا کہنا تھا کہ اگر حکومت شاداب کریوہ کے سیاحتی مقام پر اپنی ترقی کی طرف تھوڑا بہت دھیان دے گی، جو گلمرگ اور دیگر سیاحتی مقامات کے مقابلے زائرین کی توجہ اپنی طرف راغب کرے گی۔ مقامی افراد کا مطالبہ ہے کہ اس علاقے کو سیاحت کے نقشے پر لایا جانا چاہئے تاکہ قدرتی اثاثہ ضائع نہ ہو۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 28, 2020 09:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading