ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

اہم خبر: جموں وکشمیر میں 4 جی نیٹ ورک بحال کرنے پر سپریم کورٹ کا انکار

سپریم کورٹ نے فی الحال جموں وکشمیر میں 4 جی انٹرنیٹ بحال کرنے کا حکم دینے سے انکار کر دیا ہے۔

  • Share this:
اہم خبر: جموں وکشمیر میں 4 جی نیٹ ورک بحال کرنے پر سپریم کورٹ کا انکار
کاشی ۔ متھرا تنازعہ: ہندو تنظیم کے بعد جمعیتہ علماء ہند نے بھی سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا۔

نئی دہلی۔ جموں وکشمیر میں 4 جی انٹرنیٹ بحالی کی مانگ والی عرضی پر سپریم کورٹ کا بڑا فیصلہ آیا ہے۔ سپریم کورٹ نے فی الحال جموں وکشمیر میں 4 جی انٹرنیٹ بحال کرنے کا حکم دینے سے انکار کر دیا ہے۔ سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت سے فورا ایک اعلیٰ اختیاراتی کمیٹی کی تشکیل کر عرضی دہندگان کے لئے متبادل انتظامات پر غور کرنے کو کہا ہے۔ عدالت نے کہا کہ یہ کمیٹی داخلہ سکریٹری کی قیادت میں ہو گی۔


دراصل، جموں وکشمیر میں 4 جی انٹرنیٹ خدمات کی بحالی کی مانگ سے متعلق عرضی پر سماعت کے بعد سپریم کورٹ نے سبھی فریقوں کی دلیلیں سننے کے بعد پچھلے پیر کے روز فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔ مرکزی حکومت نے عرضی کی مخالفت کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ قومی سلامتی سے منسلک معاملہ ہے لہذا ریاست میں انٹرنیٹ خدمات پر کنٹرول داخلی سلامتی کے لئے ضروری ہے۔ یہ فیصلہ مرکزی حکومت پر چھوڑ دینا چاہئے۔ ملک کی خود مختاری سے جڑے ایسے مسئلہ پر عوامی طور پر یا عدالت میں بحث نہیں کی جا سکتی۔



فاونڈیشن فار میڈیا پروفیشنلز کی طرف سے سماعت کے دوران دلیل دی گئی تھی کہ موجودہ 2 جی سروس کی وجہ سے ریاست میں بچوں کی آن لائن پڑھائی اور تاجروں کو کاروبار میں دقت آ رہی ہے۔ اتنا ہی نہیں، کورونا وائرس کے درمیان ریاست میں لوگ ويڈيو كال کے ذریعے ڈاکٹروں سے ضروری مشورہ تک نہیں لے پا رہے ہیں۔ انٹرنیٹ کے ذریعہ ڈاکٹروں تک پہنچنے کا حق جینے کے حق کے تحت آتا ہے۔ لوگوں کو ڈاکٹر تک پہنچنے سے روکنا ان کے بنیادی حق کے خلاف ہے۔

سشیل پانڈے کی رپورٹ
First published: May 11, 2020 12:34 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading