ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: بی جے پی ترجمان سید شاہنواز حسین نے کہا- 70 برسوں کے بعد ہوئی ہے جمہوریت کی جیت

بی جے پی کے قومی ترجمان سید شاہنواز حسین نے کہا ہے کہ جموں و کشمیر میں منعقد ہوئے ڈی ڈی سی انتخابات کو ملک کی انتخابی تاریخ میں سنہرے لفظوں سے لکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کے انتخابات کی تاریخ میں پہلی بار ایسا ہوا کہ پولنگ کے دوران کسی بھی علاقے میں کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 21, 2020 11:38 PM IST
  • Share this:
جموں وکشمیر: بی جے پی ترجمان سید شاہنواز حسین نے کہا- 70 برسوں کے بعد ہوئی ہے جمہوریت کی جیت
سید شاہنواز حسین نے کہا- جموں وکشمیر میں 70 برسوں کے بعد جمہوریت کی جیت ہوئی ہے۔ تصویر: اے این آئی

سری نگر: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے قومی ترجمان سید شاہنواز حسین نے کہا ہے کہ جموں و کشمیر میں منعقد ہوئے ڈی ڈی سی انتخابات کو ملک کی انتخابی تاریخ میں سنہرے لفظوں سے لکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کے انتخابات کی تاریخ میں پہلی بار ایسا ہوا کہ پولنگ کے دوران کسی بھی علاقے میں کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔ قومی ترجمان نے ان باتوں کا اظہار پیر کے روز یہاں ایک ہوٹل میں منعقدہ پریس کانفرنس سے اپنے خطاب کے دوران کیا۔ شاہنواز حسین پارٹی کی طرف سے کشمیر میں الیکشن انچارج تھے اور انہوں نے یہاں کئی انتخابی ریلیوں میں شرکت کی۔

انہوں نے کہا: ’جموں و کشمیر میں ہفتے کے روز اختتام پذیر ڈی ڈی سی انتخابات کو ملک کی انتخابی تاریخ میں سنہرے الفاظ میں لکھا جائے گا۔ پہلی بار ایسا دیکھا گیا کہ پولنگ کے دوران کسی بھی علاقے میں ایک ناخوشگوار واقعہ بھی پیش نہیں آیا اور کسی نے کوئی شکایت نہیں کی ہم نے بھی کوئی شکایت نہیں کی‘۔ شاہنواز حسین نے کہا کہ میں یہاں یہ اعلان کرتا ہوں کہ جموں وکشمیر میں 70 برسوں کے بعد جمہوریت کی جیت ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا: ’جموں وکشمیر میں پہلی بار اتنی بھاری تعداد میں لوگ ووٹ ڈالنے کے لئے نکلے، چند ایک کے بغیر تمام پولنگ بوتھوں پر رائے دہندگان کی لمبی لمبی قطاریں دیکھی گئیں جس سے یہ صاف ظاہر ہوجاتا ہے کہ جموں وکشمیر میں جمہوریت کی جیت ہوئی ہے‘۔


شاہنواز حسین نے کہا کہ آج کی اس پریس کانفرنس کا انعقاد یہ اعلان کرنے کے لئے کیا گیا کہ اب کی بار بی جے پی اپنی موجودگی کا احساس دلائے گی۔ انہوں نے کہا: ’ڈی ڈی سی انتخابات کے نتائج کا انتظار ہے، ہم کسی کو شکست دیں گے یا نہ دیں گے لیکن میں یہ بات واضح کرنا چاہتا ہوں کہ جموں و کشمیر میں ہم کانگریس کو ضرور شکست دیں گے‘۔
شاہنواز حسین نے کہا کہ آج کی اس پریس کانفرنس کا انعقاد یہ اعلان کرنے کے لئے کیا گیا کہ اب کی بار بی جے پی اپنی موجودگی کا احساس دلائے گی۔ انہوں نے کہا: ’ڈی ڈی سی انتخابات کے نتائج کا انتظار ہے، ہم کسی کو شکست دیں گے یا نہ دیں گے لیکن میں یہ بات واضح کرنا چاہتا ہوں کہ جموں و کشمیر میں ہم کانگریس کو ضرور شکست دیں گے‘۔


شاہنواز حسین نے کہا کہ آج کی اس پریس کانفرنس کا انعقاد یہ اعلان کرنے کے لئے کیا گیا کہ اب کی بار بی جے پی اپنی موجودگی کا احساس دلائے گی۔ انہوں نے کہا: ’ڈی ڈی سی انتخابات کے نتائج کا انتظار ہے، ہم کسی کو شکست دیں گے یا نہ دیں گے لیکن میں یہ بات واضح کرنا چاہتا ہوں کہ جموں و کشمیر میں ہم کانگریس کو ضرور شکست دیں گے‘۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر میں تین جماعتوں نے ڈی ڈی سی انتخابات میں حصہ لیا ایک پیپلز الائنس برائے گپکار اعلامیہ، بقول ان کے ’گپکار گینگ‘، کانگریس اور بی جے پی نے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے 80 انتخابی حلقوں پر اپنے امیدوار کھڑے کئے تھے جبکہ باقی 2 سو حلقوں پر آزاد امیدواروں کی حمایت کی۔

بی جے پی کے قومی ترجمان شاہنواز حسین نے کہا کہ آنجہانی اٹل بہاری واجپائی کا خواب کشمیریت، انسانیت اور جمہوریت اب شرمندہ تعبیر ہوا ہے اور ڈی ڈی سی انتخابات نے یہ ثابت کیا ہے کہ جمہوریت ہی کشمیریت اور انسانیت کی ریڑھ کی ہڈی ہے۔ 4 جی موبائل انٹرنیٹ سروس کی بحالی کے بارے میں پوچھے جانے پر انہوں نے کہا: ’امید ہے کہ جموں وکشمیر میں 4 جی موبائل انٹرنیٹ سروس کو جلد بحال کیا جائے گا‘۔ نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی جائیداد کو انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کی طرف سے منسلک کرنے کے بارے میں پوچھے جانے پر سید شاہنواز حسین نے کہا: ’ایجنسیاں اپنا کام آزادانہ طور پر کر رہی ہیں، ان کے ساتھ سیاست کو جوڑنا مناسب نہیں ہے، کرپشن (بدعنوانی) کا سیاست یا انتقام گری سے کوئی تعلق نہیں ہے، جن پر بدعنوانی کے الزامات عائد ہیں، وہ عدالت میں جا کر اپنا اسٹینڈ پیش کرسکتے ہیں‘۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 21, 2020 11:38 PM IST