உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہشت گردوں نے بہار کے 19 سالہ نوجوان کا جموں و کشمیر میں گولی مار کر ڈالا قتل

    جموں وکشمیر:

    جموں وکشمیر:

    Bihar Boy Killed in Bandipora: خبر رساں ایجنسی اے این آئی کے مطابق مہلوک کی شناخت بہار سے تعلق رکھنے والے 19 سالہ لڑکے محمد امریج کے طور پر کی گئی ہے۔

    • Share this:
      Target Killing in Bandipora: جموں و کشمیر کے بانڈی پورہ ضلع میں جمعہ کو دہشت گردوں نے ایک اور مہاجر کا گولی مار کر قتل کر دیا۔ خبر رساں ایجنسی اے این آئی کے مطابق مہلوک کی شناخت بہار سے تعلق رکھنے والے 19 سالہ لڑکے محمد امریج کے طور پر کی گئی ہے۔ پولیس کے مطابق یہ واقعہ ضلع بانڈی پورہ کی تحصیل اجس کے گاؤں سادونارہ میں پیش آیا۔ امریج مدھے پورہ ضلع کے بیساد گاؤں کا رہنے والا تھا۔ ان کے والد کا نام محمد جلیل بتایا جاتا ہے۔ امریج یہاں کام کرنے آیا تھا۔ اس کے بارے میں دیگر معلومات اکٹھی کی جا رہی ہیں۔

      خبر رساں ایجنسی اے این آئی نے جموں و کشمیر پولیس کے حوالے سے بتایا کہ جمعرات کی آدھی رات کو دہشت گردوں نے بانڈی پورہ کے سوڈنارا سنبل میں بہار کے ایک مہاجر مزدور پر فائرنگ کر کے اسے زخمی کر دیا۔ مزدور کو علاج کے لیے اسپتال لے جایا گیا جہاں اس نے دم توڑ گیا۔

      قابل ذکر ہے کہ اس سے قبل 4 اگست کو پلوامہ کے گدورہ علاقے میں دہشت گردوں کے گرینیڈ حملے میں ایک مہاجر مزدور ہلاک اور دو دیگر زخمی ہو گئے تھے۔ مہلوک مزدور کی شناخت محمد ممتاز کے طور پر ہوئی تھی جو بہار کے ساکوا پارسا کا رہنے والے تھے۔ زخمیوں کا پلوامہ کے سرکاری ضلع اسپتال میں علاج کیا گیا۔ ان کی شناخت محمد عارف اور محمد مجبور کے نام سے ہوئی ہے۔ دونوں بہار کے رام پور کے رہنے والے تھے۔

      Pakistanکے اس خونخوار دہشت گرد کی حمایت میں اترا چین،UNمیں ہندستان کی تجویز پرپھرلگائی روک

      یہ ایک مرحلہ ہے، کسی بھی وقت پلٹ سکتے ہیں Nitish Kumar، شندے کے وزیر نے کہہ ڈالی بڑی بات

       

      Kashmir News: آرمی کیمپ پر فدائین حملے کی کوشش، 3 دہشت گردڈھیر، 3 جوان بھی شہید

      دہشت گردوں کے ہاتھوں وادی میں غیر کشمیریوں کی ہلاکتوں کا سلسلہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا۔ اپریل میں، ایک شخص کو جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام کے علاقے کاکران میں دہشت گردوں نے گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا۔ جس کی شناخت ستیش سنگھ راجپوت کے نام سے ہوئی تھی۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ کشمیر گھاٹی میں سرگرم دہشت گرد تنظیموں نے بھی غیر مقامی لوگوں کو یہاں سے نکل جانے کی تنبیہ کی ہے۔ وزیر اعظم کے بحالی پیکج کے تحت وادی میں تعینات کشمیری پنڈت برادری کے سرکاری ملازمین کو بھی دہشت گرد نشانہ بنا رہے ہیں۔ وادی کشمیر میں ٹارگٹ کلنگ کی وجہ سے سرکاری ملازمین، مہاجر مزدور خوف و ہراس میں ہیں۔ ماضی میں دہشت گرد یہاں ٹی وی فنکاروں، بینک ورکرز، سرکاری ملازمین کو بھی نشانہ بناتے رہے ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: