اپنا ضلع منتخب کریں۔

    نئی صنعتی پالیسی کی بدولت جموں۔کشمیر کے نوجوانوں کو میسر ہو رہے ہیں روزگار کے مواقع: ارُون کمار مہتا

      انہوں نے کہا کہ زیادہ سے زیادہ نجوانوں کو اپنے یونٹ قائم کرنے کی طرف راغب کرنےکے ضرورت ہے تاکہ بے روزگاری کے مسئلے پر قابو پایا جاسکے۔

    انہوں نے کہا کہ زیادہ سے زیادہ نجوانوں کو اپنے یونٹ قائم کرنے کی طرف راغب کرنےکے ضرورت ہے تاکہ بے روزگاری کے مسئلے پر قابو پایا جاسکے۔

    انہوں نے کہا کہ زیادہ سے زیادہ نجوانوں کو اپنے یونٹ قائم کرنے کی طرف راغب کرنےکے ضرورت ہے تاکہ بے روزگاری کے مسئلے پر قابو پایا جاسکے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir, India
    • Share this:
      جموں و کشمیر یو ٹی کے چیف سیکریٹری ڈاکٹر ارُون کمار مہتا نے کہا ہے کہ نئی صنعتی پالیسی کی بدولت یہاں کے نوجوانوں کو روزگار کے مواقع میسر ہو رہے ہیں۔ چیف سیکریٹری جموں و کشمیر میں نئی صنعتی پالیسی کے تحت یو ٹی میں نئے صنعتی یونٹوں کے قیام کی پیش رفت کا جائزہ لینے کے لئے بلائی گئی ایک میٹنگ سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ زیادہ سے زیادہ نجوانوں کو اپنے یونٹ قائم کرنے کی طرف راغب کرنےکے ضرورت ہے تاکہ بے روزگاری کے مسئلے پر قابو پایا جاسکے۔ میٹنگ میں بتایا گیا کہ سال 2022-23 کے دوران اب تک جموں صوبے میں ایک سو ستانوے نئے یونٹوں نے کام کرنا شروع کیا ہے جن کے لئے پانچ سو بیالیس کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری ہوئی ہے۔

      اس موقع پر چیف سیکریٹری کو یہ بھی جانکاری دی گئی کہ ان یونٹوں کے قیام اور ان کے چالو ہونے سے دو ہزار دو سو دو نوجوانوں کو روزگار فراہم ہو رہا ہے جبکہ کشمیر صوبے میں ایسے چار سو ایک یونٹ قائم کئے گئے ہیں۔ جن کی بدولت چار ہزار ایک سو بیس لوگوں کو روزگار مہیا ہوا ہے اور ان یونٹوں کے قیام پر تین سو کروڑ روپئے کا سرمایہ لگایا گیا ہے۔ میٹنگ میں یہ بھی جانکا ری دی گئی کہ ایسے یونٹوں کے قیام سے مجموعی طور پر دو لاکھ آٹھ ہزار نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کا نشانہ مقرر کیا گیا ہے۔

      اس موقع پریہ بھی بتایا گیا کہ یونٹوں کے قیام کے لئے اب تک تین سو چوداں لیز ڈیڈس کو جاری کیا گیا ہے جبکہ مزید دو سو پچانوے لیز ڈیڈس کو جاری کرنے کا عمل جاری ہے۔ علاوہ ازیں جموں صوبے میں پانچ سو اُنیس نئے یونٹوں جبکہ کشمیر صوبےمیں ایک ہزار ایک سو بائیس یونٹوں کے لئے زمیں الاٹ کی گئی ہے۔ چیف سیکریٹری کو مطلع کیا گیا کہ مختلف صنعتی یونٹ قائیم کرنے والفے نوجوانوں کو مختلف مراعات بھی فراہم کی جارہی ہیں تاکہ وہ بہ آسانی اپنے یونٹ چلا کر اپنے اور دیگر لوگوں کے لئے روزگار کے وسائیل پیدا کر سکیں۔

       

      3روزہ اسپورٹس فیسٹیول میں دیہی علاقوں کےنوجوانوں اور بچوں کو ایک پلیٹ فارم مہیاکرنے کی پہل

      کشمیر محفوظ وامن کی جگہ ہے، ایرانی سفارت خانے کے کلچرل کونسلر ڈاکٹر محمد علی ربانی کا بیان

      چیف سیکرٹری نے اس موقع پر افسران پر زور دیا کہ وہ اسبات کو یقینی بنائیں کہ وہ مختلف صنعتی یونٹ قائیم کرنے کے خواہشمند لوگوں کو اپنے یونٹ قائیم کرنے میں مدد کریں تاکہ انہیں ایسے یونٹ قائیم کرنے میں کسی قسم کی دقت کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ ارون کمار مہتا نے افسران سےکہا کہ وہ متعلقہ محکموں سے قریبی تال میل رکھ کر اس بات کو یقینی بنائیں کہ یونٹ قائیم کرنے والے نوجوانوں کو زیا دہ دفتری طوالت سے نہ گزرنا پڑے اور انکا وقت ضایع نہ ہو۔ میٹنگ میں انڈسٹریز اینڈ کامرس کے پرنسپل سیکریٹری، سڈکو اور سیکاپ کے ایم ڈیز کے علاوہ دیگر متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: