உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یکم فروری کو جاری ہوگا بجٹ، جموں وکشمیر کے تاجروں اور عوام بجٹ سے کس طرح کی رکھ رہے ہیں امید: جانیں یہاں

    Youtube Video

    اطلاعات کے مطابق وزیر خزانہ منگل کے روز لگ بھگ گیارہ بجے لوک سبھا میں بجٹ پیش کریں گی۔ جموں وکشمیر کی مختلف تجارتی انجمنوں اور عام لوگوں نے اس بجٹ کے ساتھ کئی توقعات وابستہ کررکھی ہیں۔

    • Share this:
    جموں وکشمیر: وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن کل یعنی یکم فروری کو مالی برس 2022۔ 2023 کا عام بجٹ پیش کریں گی۔ اطلاعات کے مطابق وزیر خزانہ منگل کے روز لگ بھگ گیارہ بجے لوک سبھا میں بجٹ پیش کریں گی۔ جموں وکشمیر کی مختلف تجارتی انجمنوں اور عام لوگوں نے اس بجٹ کے ساتھ کئی توقعات وابستہ کررکھی ہیں۔ کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کے صدر شیخ عاشق کا کہناہے کہ کشمیر کی تاجر برادری پر امید ہیں کہ رواں بجٹ میں جموں وکشمیر میں تجارت کی صنعت کو فروغ دینے کے لیے خصوصی اقدامات کا اعلان کیاجائے گا۔ نیوز18اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز چاہتا ہے کہ مرکزی سرکار جموں وکشمیر کے تاجروں کے لئے خصوصی مالی پیکیج کا اعلان کرے۔ شیخ عاشق نے کہا،" ہم چاہتے ہیں کہ سرکار وادی کے تاجروں اور صنعت کاروں کو درپیش مالی مشکلات دور کرنے کے لئے خصوصی مالی پیکیج کا اعلان کرے نوجوان صنعت کاروں کو نئے تجارتی و صنعتی یونٹ قائم کرنے کے لیے آسان شرائط پر قرضہ جات فراہم کرنے کا اعلان کرے تاکہ وادی میں بڑھتی ہوئی بے روزگاری پر قابو پایا جاسکے۔

    " انہوں نے کہا،" گزشتہ کئی برسوں سے کشمیر سے قالین اور دیگر دستکاریاں دنیا کے دیگر ممالک کو برآمد کرنے میں نمایا کمی واقع ہوئی ہے لہٰذا ہم چاہتے ہیں کہ مرکزی سرکار عام بجٹ میں کچھ ایسے اقدامات کا اعلان کرے تاکہ کشمیر سے بیرون ممالک بھیجے جانے سے متعلق کاروبار کو فروغ مل سکے۔ جموں چیمبر آف کامرس کے صدر ارون گپتا کا کہنا ہے کہ جموں خطے کی تاجر برادری کو کل پیش ہونے والے عام بجٹ سے کافی امیدیں وابستہ ہیں۔ نیوز18اردو کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے گپتا نے کہا کہ جموں کی تاجر تنظیمیں چاہتی ہیں کہ اس خطے میں صنعتی شعبے کو مزید فروغ دینے کے لیے خصوصی صنعتی پالیسی کا اعلان کیا جائے۔ گپتا نے کہا ،" جموں خطے میں کافی تعداد ایسے تاجروں کی ہے جو ایکسپورٹ کا کاروبار کرتے ہیں تاہم انہیں کئی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ہم چاہتے ہیں کہ سرکار موجودہ بجٹ میں جموں میں ایک ڈرائی پورٹ  Dry port  قائم کرنے کا اعلان کرے تاکہ برآمدات کے شعبے کو فروغ حاصل ہو" گپتا نے کہاکہ جموں خطے کے پہاڑی علاقوں میں سیاحت کو فروغ دینے کی کافی گنجائش موجود ہے لہذا سرکار موجودہ بجٹ میں ان مقامات کو سیاحت کے نقشے پر لانے کے لیے خصوصی مالی پیکیج کا اعلان کرے۔

    جموں وکشمیر وئیر ہاؤس مارکیٹ ایسوسی ایشن کے صدر دیپک گپتا نے کہا جموں کے تاجر چاہتے ہیں کہ سرکار رواں بجٹ میں جی ایس ٹی جمع کروانے کے عمل کو آسان کرے۔ نیوز18اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ تاجر برادری کو جی ایس ٹی جمع کروانے میں کئی ماہ لگ جاتے ہیں جس کی وجہ سے انہیں ذہنی کوفت کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ کشمیری مائیگرنٹ لیڈر اجے بھارتی کاکہناہے کہ سرکار کشمیری مہاجرین کی بازآبادکاری کے لئے خصوصی مالی پیکیج کا اعلان کرے۔ نیوز18اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے بھارتی نے کہا،" ہم چاہتے ہیں کہ سرکار رواں بجٹ میں کشمیری مہاجرین کی بہبود کےلئے وافر رقومات فراہم کرنے کا اعلان کرے تاکہ کشمیری مائیگرینٹس کی ماہانہ ریلیف کو بڑھانے کے ساتھ ساتھ خصوصی کیمپوں میں رہائش پذیر لوگوں کے حالات زندگی کو بہتر بنانے کیلئے قدم اٹھائیں جائیں۔

    انہوں نے کہاکہ فنڈس واگزار کئے جانے سے سرکار وزیراعظم روزگار پیکیج کے تحت کشمیر کے مختلف اضلاع میں کام کررہے کشمیری پنڈت مہاجرین کے لیے رہائش کی سہولت دستیاب رکھ سکتی ہے۔ ادھر کشمیر ٹریڈرس اینڈ منی فیکچریرس کے صدر بشیر کنگپوش نے کہا،" جب ہم نے بجٹ تجاویز پیش کی تھیں ان میں ہم نے ریونیو جنریشن کی بات کی تھی ہم نے میمورنڈم میں بار بار یہ ذکر کیاکہ آمدنی حاصل کئے جانے کے لیے بجلی پیدا کرنے کے نئے پراجیکٹ تعمیر کئے جائیں جس سے کشمیر میں بجلی کی قلت کم ہو جائے گی۔اور سرکار کو آمدنی بھی حاصل ہوگی۔ اس کے علاوہ ہم چاہتے ہیں کہ تاجروں کے پاس واجب الآدا جی ایس ٹی پر لگایا گیا سود ختم کیا جائے"بٹہ مالو ٹریڈرس ایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری ابرار احمد نے کہاکہ کشمیر کا تاجر طبقہ دوہزار انیس سے  کافی مشکل دور سے گزر رہاہے نیوز18اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا ،" اس وقت کشمیر کے تاجروں کو ایک Bailout پیکیج کی ضرورت ہے ہمیں امید ہے کہ وزیر خزانہ ہمارے حالات کا سنجیدہ نوٹس لیں گی اور ایک ریلیف پیکیج کا اعلان کریں گی۔جموں وکشمیر عام لوگوں نے موجودہ بجٹ سے متعلق اپنی آرا ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ بجٹ میں سرکار کچھ ایسے اقدامات کا اعلان کرے گی جسے بڑھتی ہوئی مہنگائی پر قابو پایا جاسکے اور یوٹی کے بے روزگار نوجوانوں کے لیے روزگار کے نئے مواقع میسر ہوسکیں۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: