உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر میں پہلا وِیل چیئر کرکٹ میچ قومی اور عالمی سطح کے کھلاڑی تیار کرنے کا منصوبہ

    کشمیر میں پہلا وِیل چیئر کرکٹ میچ قومی اور عالمی سطح کے کھلاڑی تیار کرنے کا منصوبہ

    کشمیر میں پہلا وِیل چیئر کرکٹ میچ قومی اور عالمی سطح کے کھلاڑی تیار کرنے کا منصوبہ

    کمپوزٹ ریجنل سنٹر سرینگر میں حال ہی میں تیار کیا گیا کرکٹ گروانڈ جمعہ کو ویل چیرس سے بھرا تھا۔ ان چیئرس کے سہارے زندگی گُذارنے والے نوجوانوں میں خوشی اور جوش دیکھنے لایق تھا۔ ریجنل کمپوزٹ سنٹر اور وِیل چیر کرکٹ ایسوسی ایشن جموں کشمیر نے اپنی نوعیت کے پہلے ایسے کرکٹ میچ کا انعقاد کیا۔

    • Share this:
    سری نگر: کمپوزٹ ریجنل سنٹر سرینگر میں حال ہی میں تیار کیا گیا کرکٹ گروانڈ جمعہ کو ویل چیرس سے بھرا تھا۔ ان چیئرس کے سہارے زندگی گُذارنے والے نوجوانوں میں خوشی اور جوش دیکھنے لایق تھا۔ ریجنل کمپوزٹ سنٹر اور وِیل چیر کرکٹ ایسوسی ایشن جموں کشمیر نے اپنی نوعیت کے پہلے ایسے کرکٹ میچ کا انعقاد کیا۔ میدان میں تماشائی تو کم ہی تھے لیکن جوش اور حوصلے کی ایک الگ ہی فضا چھائی ہوئی تھی۔ سری نگر الیون اور بڈگام الیون کی ٹیمیں آمنے سامنے تھیں۔ یہ ایک الگ ہی منظر تھا۔ ہاتھوں کے سہارے پہیے گھما کر فیلڈنگ، بلے بازی اور گیند بازی کرنے والے یہ نوجوان زندگی سے بیزار کسی بھی شخص کو جینے کا نیا حوصلہ دینے کی قابلیت رکھتے ہیں۔

    کمپوزٹ ریجنل سنٹر سرینگر میں حال ہی میں تیار کیا گیا کرکٹ گروانڈ جمعہ کو ویل چیرس سے بھرا تھا۔ ان چیئرس کے سہارے زندگی گُذارنے والے نوجوانوں میں خوشی اور جوش دیکھنے لایق تھا۔
    کمپوزٹ ریجنل سنٹر سرینگر میں حال ہی میں تیار کیا گیا کرکٹ گروانڈ جمعہ کو ویل چیرس سے بھرا تھا۔ ان چیئرس کے سہارے زندگی گُذارنے والے نوجوانوں میں خوشی اور جوش دیکھنے لایق تھا۔


    ریجنل کمپوزٹ سنٹر  کے ڈائریکٹر  ڈاکٹر ظفر کے مطابق یہ مقابلہ کووڈ  حالات میں عام انسانوں سے زیادہ مشکلات سے جوج رہئے ان نوجوانوں کو راحت دینے کے لئے کرایا گیا۔ انھوں  نے کہا کہ یہ نوجوان جسمانی طور ناخیز ضرور ہیں، لیکن قابلیت کے معاملے میں کسی سے کم نہیں۔ میچ میں حصہ لے رہے بڈگام کے نوجوان  ظفر نے کہا کہ وہ اس مقابلے کے انعقاد سے کافی خوش ہیں اور چاہتے ہیں کہ ایسے مقابلے ہونے چاہیے  تاکہ وہ بھی اپنی قابلیت کا لوہا منوا سکیں۔

    سری نگر الیون اور بڈگام الیون کی ٹیمیں آمنے سامنے تھیں۔ یہ ایک الگ ہی منظر تھا۔
    سری نگر الیون اور بڈگام الیون کی ٹیمیں آمنے سامنے تھیں۔ یہ ایک الگ ہی منظر تھا۔


    وِیل چیر کرکٹ ایسوسیشن جموں کشمیر کے صدر نے کہا کہ اُن کا مقصد ایسے کرکٹر تیار کرنا ہئے جو قومی اور عالمی سطح پر ایسے مقابلوں میں حصہ لے سکیں۔ ایسوسیشن کے صدر کے مطابق ویل چیر کرکٹ فیڈریشن آف انڈیا کے تعاون سے جلد ہی جموں کشمیر میں بین اضلاع مقابلے ہوں گے، جن کا مقصد اچھے کھلاڑی چُن کر انھیں قومی اور عالمی سطح پر کھیلنے کا موقعہ دیا جائے گا۔ کشمیر سے وِیل چیر باسکٹ بال کے عالمی مقابلوں میں کئی کھلاڑی ملک کی نمائندگی کرچکے
    ہیں۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: