اپنا ضلع منتخب کریں۔

    تشدد کے واقعات میں جموں و کشمیر میں کافی کمی، حالات ہو رہے ہیں بہتر: وجے کمار

     پولیس کا کہنا ہے کہ اس وقت وادی کشمیر کے کُل دس اضلاع میں سے تین اضلاع دہشت گردوں سے پاک ہوچکے ہیں اور ان اضلاع میں کوئی بھی ایکٹو ملی ٹنٹ نہیں ہے۔

    پولیس کا کہنا ہے کہ اس وقت وادی کشمیر کے کُل دس اضلاع میں سے تین اضلاع دہشت گردوں سے پاک ہوچکے ہیں اور ان اضلاع میں کوئی بھی ایکٹو ملی ٹنٹ نہیں ہے۔

    پولیس کا کہنا ہے کہ اس وقت وادی کشمیر کے کُل دس اضلاع میں سے تین اضلاع دہشت گردوں سے پاک ہوچکے ہیں اور ان اضلاع میں کوئی بھی ایکٹو ملی ٹنٹ نہیں ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir, India
    • Share this:
      رمیش امباردار:
      جموں و کشمیر میں تشدد کے واقعات میں کافی کمی واقع ہوئی ہے اور حالات بہتری کی اور جارہے ہیں۔ حالانکہ گزشتہ ایک برس سے اگرچہ اقلیتی فرقے کے لوگوں کی ٹارگیٹ کلنگ کا سلسلہ جاری ہے تاہم مجموعی طور پر گزشتہ برسوں کے مقابلے میں دہشت گردانہ کاروائیوں میں کافی کمی دیکھنے کو ملی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس وقت وادی کشمیر کے کُل دس اضلاع میں سے تین اضلاع دہشت گردوں سے پاک ہوچکے ہیں اور ان اضلاع میں کوئی بھی ایکٹو ملی ٹنٹ نہیں ہے۔ پولیس کے ایڈیشنل ڈائیریکٹر جنرل وجے کمار کے مطابق جموں و کشمیر میں سرگرم لشکر طیبہ اور جیش محمد جیسی دہشت گرد تنظیمیں اس وقت کسی کمانڈر کے بغیر ہیں کیونکہ حفاظتی عملے نے ان دہشت گرد جماعتوں کے تمام سرغنہ کمانڈروں کو ہلاک کر دیا ہے انہوں نے کہا کہ بانڈی پورہ، کپواڑہ اور گاندربل اضلع میں اس وقت کوئی بھی دہشت گرد سرگرم نہیں ہے۔

      ان کے مطابق تیرہ پولیس ڈسٹرکٹس پر مبنی کشمیر صوبے میں اسوقت اکاسی دہشت گرد سرگرم ہیں جن میں سے اُنتیس دہشت گرد مقامی اور باون دہشت گرد غیر ملکی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سکیورٹی فورسز ملٹینسی کو قابو کرنے میں لگے ہیں اور مقامی ہائی برڈ دہشت گردوں اور غیر ملکی دہشت گردوں کے خاتمے کے لئے کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انہیں امید ہے کہ آئیندہ دو برس میں جموں و کشمیر سے دہشت گردی کا مکمل طور پرصفایا کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ وقت میں وادی میں صرف حزب المجاہدین کا ایک سرغنہ کمانڈر فاروق نالی دو ہزار پندرہ سے سرگرم ہے اور اسے ہلاک کرنے یا پکڑنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

      News18 Showreel: کارتک آرین نے فلموں کو لیکر کی بات، بھول بھلیا2 کو بتایا باکس آفس اوپنر




      وجے کمار نے یہ بھی کہا کہ اس وقت وادی میں پندرہ سے اٹھارہ ہائی برڈ دہشت گرد سرگرم ہیں اور ان میں سے زیادہ تر دہشت گرد جنوبی کشمیر کے پلوامہ، شوپیاں، کولگام اور اننت ناگ میں سرگرم ہیں اور یہی لوگ ٹارگیٹ کلنگ میں ملوث ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سال پولیس نے دہشت گردوں کے ایک سو اُنیس ماڈیول بے نقاب کئے ہیں۔ ایڈیشنل ڈائیریکٹر جنرل پولیس وجے کمار نے یہ بھی بتایا کہ وادی کشمیر میں دہشت گردوں کی چوتھی کیٹیگری ان دہشت گردوں کی ہے جنہیں مذہب کے نام پر گمراہ کرکے دہشت گردوں کے صفوں میں شامل کرنے کی کوششیں جاری ہیں تاہم ایسے دہشت گردوں نے ابھی تک کوئی دہشت گردانہ واقع انجام نہیں دیا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: