உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سری نگر: پنزی نارہ میں خطرناک سڑک حادثہ، تین افراد کی موقع پر موت، دو شدید زخمی

    سری نگر: پنزی نارہ میں خطرناک سڑک حادثہ، تین افراد کی موقع پر موت، دو شدید زخمی

    جموں وکشمیر کے سری نگر کے مضافات میں واقع پنزی نارہ میں ایک بیانک سڑک حادثے میں پنزی نارہ سے ہی تعلق رکھنے والے تین نوجوان موقع پر ہی ہلاک ہوئے ہیں جبکہ دو دیگر شدید زخمی ہوگئے۔

    • Share this:
    سری نگر: جموں وکشمیر کے سری نگر کے مضافات میں واقع پنزی نارہ میں ایک بیانک سڑک حادثے میں پنزی نارہ سے ہی تعلق رکھنے والے تین نوجوان موقع پر ہی ہلاک ہوئے ہیں جبکہ دو دیگر شدید زخمی ہوگئے۔ پنزی نارہ میں یہ سڑک حادثہ سری نگر بانڈی پورہ ہائی وے پر اس وقت پیش آیا جب اسکوٹی پر سوار تین افراد اور ویگنار گاڑی میں سوار دوافراد کے درمیان خطرناک ٹکر ہوئی جس کے نتیجے میں سکوٹی پر سوار تین نوجوانوں کی موقع پر ہی موت ہوئی۔ جبکہ گاڑی میں سوار بارہمولہ سے تعلق رکھنے والے دو افراد شدید زخمی ہوگئے۔

    ہلاک شدہ تینوں نوجوان پنزی نارہ سے تعلق رکھتے ہیں۔ فوت شدہ تینوں کی شناخت سمیر احمد ڈار، مشتاق احمد ملک، شاہد فیاض کے طور پر ہوئی۔ حادثے کے فوراً بعد متعلقہ پولیس اسٹیشن کی پارٹی جائے حادثہ پر پہنچ گئی، جس کے بعد انہوں نے تحقیقات شروع کردی۔ جیسے ہی ان تینوں کی لاشوں کو اپنے اپنے گھروں کو پہنچائی تو وہاں قیامت صغریٰ برپا ہوئی۔ تینوں میتوں کے نماز جنازہ میں کاروان اسلامی کے سربراہ مولانا غلام رسول حامی اور دیگر علماء نے شرکت کی۔

    پنزی نارہ میں یہ سڑک حادثہ سری نگر بانڈی پورہ ہائی وے پر اس وقت پیش آیا، جب اسکوٹی پر سوار تین افراد اور ویگنار گاڑی میں سوار دوافراد کے درمیان خطرناک ٹکر ہوئی۔
    پنزی نارہ میں یہ سڑک حادثہ سری نگر بانڈی پورہ ہائی وے پر اس وقت پیش آیا، جب اسکوٹی پر سوار تین افراد اور ویگنار گاڑی میں سوار دوافراد کے درمیان خطرناک ٹکر ہوئی۔


    نیوز 18 اردو کے ساتھ بات کرتے ہوئے کاروان اسلامی کے سربراہ مولانا غلام رسول حامی نے کہا کہ نوجوان ٹریفک کا استعمال کریں، لیکن محتاط انداز میں سڑکوں پر گاڑیاں چلائیں۔ انہوں نے کہا کہ بچوں کو ہمیشہ اس بات کا خیال رکھنا چاہئے کہ وہ اپنے والدین کے سہارے کے لئے ہیں، لیکن ایسا نہ ہو کہ والدین ہی ان کا سہارا بن جائیں۔ غلام رسول حامی نے نیوز 18اردو کو مزید بتایا کہ ہر ایک کو سڑک پر چلنے کے دوران فہم و فراست کے ساتھ کام لینا چاہئے۔ حامی کا کہنا ہے کہ لوگ سڑکوں پر ٹریفک قوانین کی پاسداری اور عمل آوری کریں۔

    شاہد نامی ایک مقامی نوجوان نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ پنزی نارہ کا یہ انتہائی خطرناک سڑک حادثہ تھا۔ اس حادثے میں 6 بچے اپنے والد سے محروم ہوگئے۔ ان بچوں پر قیامت ٹوٹ پڑی جب انہوں نے اپنے والد کی لاش دیکھی۔ کیونکہ چند گھنٹے پہلے یہ والد اپنے بچوں کے ساتھ کھیلتے ہنستے تھے۔ انہیں کیا پتہ تھا کہ وہ کئی گھنٹوں بعد اپنے والد کی میت دیکھیں گے۔ واضح رہے جموں وکشمیر میں آئے روز جگہ جگہ سڑک حادثات رونما ہوتے ہیں۔ جن میں بیشتر جانیں نوجوان کی تلف ہوتی ہیں۔ ایسے حادثات کو روکنے کے لئے جانکاری اور بیداری پروگرام منعقد کرنے کی بھی ضرورت ہے۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: