உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    موسم خزاں کے دوران jammu and kashmir میں سیاحوں کی آمد نے گزشتہ پانچ سالوں کا توڑا ریکارڈ

    دہلی سے آئے ایک سیاح  نے کہا کہ چناروں کے تناور درختوں سے گرنے والے پتے دیکھ کر ایسا گُماں ہوتا ہے کہ جیسے آپ کسی اور ہی دُنیا میں آچکے ہیں۔

    دہلی سے آئے ایک سیاح نے کہا کہ چناروں کے تناور درختوں سے گرنے والے پتے دیکھ کر ایسا گُماں ہوتا ہے کہ جیسے آپ کسی اور ہی دُنیا میں آچکے ہیں۔

    دہلی سے آئے ایک سیاح نے کہا کہ چناروں کے تناور درختوں سے گرنے والے پتے دیکھ کر ایسا گُماں ہوتا ہے کہ جیسے آپ کسی اور ہی دُنیا میں آچکے ہیں۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر: محکمہ سیاحت کی جانب سے رواں سال موسم خزاں autumn season کے دوران زیادہ سے زیادہ سیاحوں کو کشمیر کی سیاحت پر راغب کرنے کے لئے کی گئی کوششوں کے مثبت نتائیج سامنے آئے ہیں۔ محکمے نے ملک کے مختلف حصوں میں تشہیری مہم چلانے کے علاوہ جموں و کشمیر کے مختلف سیاحتی مقامات پر Iconic Tourism Festival کے تحت کئی پروگرام منعقد کئے تھے۔ نتیجے کے طور پر بھاری تعداد میں سیاح موسم خزاں کے دوران وارد کشمیر ہوئے اور یہاں کے حسین نظاروں کا لطف اٹھایا۔ موسم خزاں کے دوران سیاحت خاص طور پر چناروں کے سُرخ پتوں کی خوبصورتی سے محضوض ہوئے۔ دہلی سے آئے ایک سیاح راجندر شرما نے کہا کی وہ وہ ماضی میں بھی کشمیر کی سیر کرچکے ہیں تاہم وہ پہلی بار موسم خزاں کے دوران کشمیر آئے۔ اپنے تجربات نیوز ایٹین سے ساجھا کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ چناروں کے سرخ پتے کشمیر کی خوبصورتی میں مزید چار چاند لگاتے ہیں۔

    انہوں نے کہا کہ چناروں کے تناور درختوں سے گرنے والے پتے دیکھ کر ایسا گُماں ہوتا ہے کہ جیسے آپ کسی اور ہی دُنیا میں آچکے ہیں۔ سرینگر شہر کے مضافات میں واقع نشاط باغ میں آتش چنار کا لطف لینے والی انیتا نامی خاتون سیاح نے کہا کہ انہوں نے اس طرح کے نظارے صرف فلموں میں ہی دیکھے تھے تاہم آج یہاں آکر انہیں کافی مسرت ہوئی ہے۔
    اعداد و شمار کے مطابق اس سال اکتوبر کے مہینے میں ترانوے ہزار سے زیادہ سیاح کشمیر وادی کی سیر پر آئے جبکہ رواں ماہ کے دوران اب تک ایک لاکھ پانچ ہزار سیاح موسم خزاں کے دوران کشمیر کی خوبصورتی کا لطف اٹھانے کے لئے وادی پہنچے۔ڈائیریکٹر ٹیورازم کشمیر جی این ایتو کے مطابق گزشتہ پانچ برسوں میں موسم خزاں کے دوران کشمیر آنے والے سیاحوں کی یہ سب سے بڑی تعداد ہے۔نیوز ایٹین اردو کے ساتھ بات کرتے ہوئے جی این ایتو نے کہا کہ موسم خزاں میں وارد کشمیر ہونے والی سیاحوں کی یہ تعداد کافی حوصلہ افزا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رواں برس اب تک چار لاکھ پچیس ہزار سے زائید سیاح کشمیر کی سیر پر آئے ہیں اور محکمہ کے امید ہے کہ موسم سرما کے دوران بھاری تعداد میں سیاح کشمیر کا رُخ کریں گے۔


    آئیندہ مہینوں کے دوران زیادہ سے زیادہ سیاحوں کو کشمیر کی سیر پر راغب کرنے کے لئے کئے جانے والے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے جی این ایتو نے کہا کہ محکمہ کرسمس کی چھُٹیوں کے دوران زیادہ سے زیادہ سیاحوں کو راغب کرنے کے لئے بڑے پیمانے پر کرسمس کا جشن منانے کے لئے مختلف پروگرام منعقد کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ اس کے علاوہ نئے سال کی آمد کا جشن منانے کے لئے وادی کے کئی سیاحتی مقامات پر خصوصی پروگراموں کا اہتمام کیا جارہا ہے۔ ڈاکٹر جی این ایتو نے کہا کہ گیارہ دسمبر کو مونٹینرنگ ڈے کے موقع پر خصوصی پروگرام تشکیل دئیے جارہے ہیں تاکہ مہم جوئی کے شوقین سیاحوں کو کشمیر آنے پر آمادہ کیا جاسکے۔

    ڈائیریکٹر ٹیورازم کشمیر نے کہا کہ محکمہ اس مرتبہ پہلی بار جنوری دو ہزار بائیس کے دوسرے ہفتے میں کشمیر وادی کی مختلف آبی پناہ گاہوں پر برڈ واچنگ کی سہولت دستیاب رکھے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں محکمہ وائیلڈ لائیف کا تعاون حاصل کیا جارہا ہے۔ ان پروگراموں کی تشہیر کے لئے جموں و کشمیر محکمہ سیاحت مہاراشٹر سمیت ملک کی کئی دیگر ریاستوں میں خصوصی تشہیری مہم شروع کرچکا ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ سیاح موسم سرما کے دوران کشمیر کی سیر پر آئیں۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: