اپنا ضلع منتخب کریں۔

    J&K News : دیہی علاقوں میں سیاحت کی صنعت کو بڑھاوا دینے کیلئے سرکار کی منفرد پہل، 75 دیہات میں ٹورسٹ ویلیج نیٹ ورک کا آغاز

    Jammu and Kashmir News : ایل جی حکومت سیاحت کو فروغ دینے اور نوجوانوں کے لئے پائیدار اور مستحکم روزگار فراہم کرنے کے سلسلے میں جموں وکشمیر میں 75 سے زائد گاؤں کو ٹورزم ولیج کے طور پر تبدیل کرنے کے مقصد سے اقدامات کررہی ہے۔ مشن یوتھ کے تحت شروع ہونے والی اس پہل میں تاریخی اعتبار سے ایم  75 دیہات میں یہ اسکیم شروع ہوگی۔

    Jammu and Kashmir News : ایل جی حکومت سیاحت کو فروغ دینے اور نوجوانوں کے لئے پائیدار اور مستحکم روزگار فراہم کرنے کے سلسلے میں جموں وکشمیر میں 75 سے زائد گاؤں کو ٹورزم ولیج کے طور پر تبدیل کرنے کے مقصد سے اقدامات کررہی ہے۔ مشن یوتھ کے تحت شروع ہونے والی اس پہل میں تاریخی اعتبار سے ایم 75 دیہات میں یہ اسکیم شروع ہوگی۔

    Jammu and Kashmir News : ایل جی حکومت سیاحت کو فروغ دینے اور نوجوانوں کے لئے پائیدار اور مستحکم روزگار فراہم کرنے کے سلسلے میں جموں وکشمیر میں 75 سے زائد گاؤں کو ٹورزم ولیج کے طور پر تبدیل کرنے کے مقصد سے اقدامات کررہی ہے۔ مشن یوتھ کے تحت شروع ہونے والی اس پہل میں تاریخی اعتبار سے ایم 75 دیہات میں یہ اسکیم شروع ہوگی۔

    • Share this:
    Jammu and Kashmir News : جموں وکشمیر کو قدرت نے بے پناہ خوبصورتی سے نوازا ہے ، جس کی وجہ سے یہ خطہ دنیا بھر کے سیاحوں کی توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے ۔ یوٹی میں سیاحت کو فروغ دینے کے لئے سرکار کی جانب سے وقتاً فوقتاً کئی اقدامات کئے جاتے رہے ہیں ۔ تاہم ایل جی انتظامیہ کی طرف سے سیاحت کو فروغ دینے کے لیے منفرد اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ ایسے ہی ایک اقدام کے طور پر سرکار نے مشین یوتھ کے تحت ٹورسٹ ویلیج نیٹ ورک پروگرام کا آغاز کیا۔ اس پروگرام کے تحت مقامی افراد کو سیاحت کی صنعت میں شامل کیا گیا ہے ، تاکہ زیادہ سے زیادہ بے روزگار نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کئے جاسکے۔ یہ پروگرام آزادی کا امرت مہوتسو جشن کے تحت شروع کیا گیا ہے۔

    ایل جی حکومت سیاحت کو فروغ دینے اور نوجوانوں کے لئے پائیدار اور مستحکم روزگار فراہم کرنے کے سلسلے میں جموں وکشمیر میں 75 سے زائد گاؤں کو ٹورزم ولیج کے طور پر تبدیل کرنے کے مقصد سے اقدامات کررہی ہے۔ مشن یوتھ کے تحت شروع ہونے والی اس پہل میں تاریخی اعتبار سے ایم  75 دیہات میں یہ اسکیم شروع ہوگی۔ اس اقدام سے جموں وکشمیر میں دیہی معیشت مضبوط ہوگی، نوجوانوں کو کاروبار اور روزگار کے کثیر مواقع فراہم ہوں گے ۔ نیز خواتین کو بھی مالی اعتبار سے بااختیار بنایا جائے گا۔

    اس منفرد پہل کے بارے میں تبصرہ کرتے ہوئے جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ انتظامیہ ہر گاؤں کی انفرادیت کو تسلیم کرنے کے ساتھ ساتھ علاقے کے تاریخی پس منظر اور تہذیب وتمدن کو فروغ دینے میں مددگار ثابت ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ اس پہل سے ان دیہات میں فلم شوٹنگ کو ممکن بنانے میں بھی مدد ملے گی ، جس سے ان علاقوں کی مالی حالت بہتر بنانے میں مددگار ثابت ہوگی ۔ ان تمام دیہات کو ڈیجیٹل فٹ پرنٹ فراہم ہوگی تاکہ زیادہ سے زیادہ نوجوانوں کو روزگار کے مواقع میسر رہیں۔

    اس منفرد اقدام کا ذکر کرتے ہوئے منوج سنہا نے کہا کہ اس اقدام کے تحت ان دیہات کے مکینوں کو مالی امداد بھی فراہم کی جائے گی ۔ تاکہ وہ مستقل طور پر ترقی کے منازل کو طے کرسکیں۔ ٹورسٹ ویلیج نیٹ ورک قائم کرنے کا ایک اور مقصد یہ بھی ہے کہ ان مقامات کو سیاحتی نقشے پر لایا جاسکے ، جو آج تک سیاحوں کی نظروں سے اوجھل تھے۔ ٹورسٹ ویلیج نیٹ ورک قائم کرنے کی یہ پہل سیاحوں کو قیام کرنے کی سہولت مہیا کرائے گی ۔ تاکہ ان گاؤں کے مکین کم سے کم سرمایہ کاری کرکے اپنا روزگار کما سکے۔ اس ضمن میں سرکار نے ادھمپور ضلع میں واقع قدرتی خوبصورتی سے مالا مال پنچاری گاؤں کا انتخاب کیا ہے ، جہاں سیاح گاؤں میں رہ کر قدرتی مناظر کا لطف اٹھا سکیں گے۔

    سرکار کا کہنا ہے کہ اس اقدام سے پچھڑے اور نظرانداز کئے گئے علاقوں کی ترقی کو ممکن بنایا جاسکتا ہے۔ اس اقدام سے ان دیہات میں آباد باشندوں کی مالی حالت سدھارنے میں بھی کافی حد تک مدد مل پائے گی۔ اس ٹورزم ولیج نیٹ ورک کے ذریعے ملک کی دیگر ریاستوں اور جموں وکشمیر کے تہذیبی ورثے کا تبادلہ کرنے میں مدد مل پائے گی ۔

    واضح رہے کہ دنیا بھر میں ہوم سٹے کا نظریہ پروان چڑھ رہاہے اور ہندوستان کی سکم ،اتراکھنڈ اور کیرل جیسی ریاستوں میں اس اقدام سے عام لوگوں کی مالی حالت میں سدھار دیکھا گیا ہے۔ اگر اس اقدام کو بہتر طریقے سے زمینی سطح پر لاگو کیا جائے تو وہ دن دور نہیں جب راجوری، پونچھ، بسولی ، بنی ، بھدرواہ اور بسنت گڑھ نیز بلاور جیسے نظرانداز کئے گئے علاقوں میں ٹورزم صنعت پروان چڑھے گی اور ان علاقوں کے لوگ اقتصادی طور پر خوشحال زندگی بسر کرسکیں گے اور یوں جموں وکشمیر کے تمام دیہی علاقے رفتہ رفتہ مالی اعتبار سے خوشحال ہو جائیں گے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: