உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Video : کشمیر میں لشکر کے دہشت گرد کے گھر پر لہرایا ترنگا، دیکھئے اس کے والد نے کیا کہا؟

    Video : کشمیر میں لشکر کے دہشت گرد کے گھر پر لہرایا ترنگا، دیکھئے اس کے والد نے کیا کہا؟ ۔ تصویر : News18

    Video : کشمیر میں لشکر کے دہشت گرد کے گھر پر لہرایا ترنگا، دیکھئے اس کے والد نے کیا کہا؟ ۔ تصویر : News18

    Jammu and Kashmir : دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ کے کمانڈر خبیب بھٹ کے ڈوڈہ میں واقع گھر پر ترنگا لہرا رہا ہے ۔ ان دنوں خبیب پی او کے کے مظفرآباد میں دہشت گرد کیمپ میں دہشت گردوں کو ٹریننگ دے رہا ہے ۔

    • Share this:
      ڈوڈہ: دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ کے کمانڈر خبیب بھٹ کے ڈوڈہ میں واقع گھر پر ترنگا لہرا رہا ہے ۔ ان دنوں خبیب پی او کے کے مظفرآباد میں دہشت گرد کیمپ میں دہشت گردوں کو ٹریننگ دے رہا ہے ۔ وہیں جموں و کشمیر کے ڈوڈہ کے پتھری میں واقع اس کے گھر میں والد اور بھائی ترنگا لہرا رہے ہیں ۔ اس واقعہ کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگیا ہے ۔ اس کے والد داود بھٹ نے وائرل ویڈیو میں کہا کہ ترنگا ہماری شان ہے اور ہم کافی خوش ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: یوم آزادی سے قبل کشمیر میں ملی ٹینٹوں کا 24 گھنٹے میں دوسرا حملہ


      والد داود بھٹ اور بھائی راحل نے کہا کہ ترنگا ہماری جان ہے اور اس کو ہر ہندوستانی کو اپنے گھر میں لہرانا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی ترنگے کو شان سے لہرائیں اور اس کیلئے دیگر لوگوں کو بھی بیدار کریں ۔ داود اور راحل نے اپنے گھر میں ترنگا لہرایا اور دیگر لوگوں کو بیدار بھی کیا ۔ داود بھٹ نے کہا کہ ملک کے وزیر اعظم مودی نے جو ہر گھر ترنگا مہم شروع کی ہے، اس سے ہر گاوں ، ہر پنچایت اور ملک کا ہر شہری خوش ہے ۔ کشمیر کے اس گاوں میں ہم بھی خوش ہیں ۔ یہ بہت اچھا کام ہے ۔

      یہ بھی پڑھئے: مقدس گپھا میں آخری درشن کے ساتھ ہی امرناتھ یاترا اختتام پذیر


      داود نے کہا کہ ترنگا ہمارا ہے، اس کو ہم کسی کو دکھانے کیلئے نہیں لہراتے ہیں۔ ترنگا تو ہر وطن پرست کو لہرانا چاہئے، جو لوگ خبیب کو لے کر پوچھتے ہیں، وہ جان لیں کہ ہم کسی سے نہیں ڈرتے، ہم وطن پرست ہیں، اس لئے ترنگا ہمارے گھر کی شاد ہے ۔

      انہوں نے مزید کہا کہ خبیب جب ملے اور جہاں ملے اس کو مار دینا ۔ لوگ اس کے نام سے ڈرتے ہیں ، اس نے کئی گھر برباد کئے ہیں ۔ خبیب ترنگا اٹھاتا اور ملک کی فوج میں بھرتی ہوتا تو ہمیں خوشی ہوتی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: