ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: پلوامہ میں سیکورٹی دستوں کے ساتھ تصادم، اب تک 2 دہشت گرد ڈھیر

جموں وکشمیر کے پلوامہ ضلع کے ٹکین علاقے میں سیکورٹی دستوں کے ساتھ دہشت گردوں کے تصادم کی خبر ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، تصادم میں اب تک 2 دہشت گرد ڈھیر ہو گئے ہیں۔ فائرنگ میں ایک مقامی شخص بھی زخمی ہوا ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: پلوامہ میں سیکورٹی دستوں کے ساتھ تصادم، اب تک 2 دہشت گرد ڈھیر
پلوامہ میں سیکورٹی دستوں کے ساتھ تصادم: فائل فوٹو

سری نگر۔ جموں وکشمیر (Jammu-Kashmir) کے پلوامہ (Pulwama) ضلع کے ٹکین علاقے میں سیکورٹی دستوں کے ساتھ دہشت گردوں کے تصادم کی خبر ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، تصادم میں اب تک 2 دہشت گرد ڈھیر ہو گئے ہیں۔ فائرنگ میں ایک مقامی شخص بھی زخمی ہوا ہے۔


سیکورٹی دستوں کو ٹکین گاوں میں کچھ دہشت گردوں کے چھپے ہونے کی اطلاع ملی تھی۔ اس کے فوج کی 55 آر آر، سی آر پی ایف اور مقامی پولیس کی ایس او جی نے تلاشی مہم چلائی تھی۔ ایسے میں خود کو گھرا ہوا دیکھ کر دہشت گردوں نے فائرنگ شروع کر دی جس کے بعد جوابی کارروائی میں سلامتی دستوں نے دو دہشت گردوں کو مار گرایا ہے۔ فی الحال دونوں طرف سے فائرنگ جاری ہے۔



اس سے پہلے جموں وکشمیر نگروٹا میں ناکے پر سلامتی دستوں نے دراندازی کی کوشش کر رہے جیش محمد کے 4 دہشت گردوں کو مار گرایا تھا۔ دراصل، سلامتی دستوں نے بان ٹول پلازہ کے پاس ایک ناکہ لگایا تھا۔ گاڑیوں کی جانچ کے دوران دہشت گردوں کے ایک گروپ نے سلامتی دستوں پر فائرنگ شروع کر دی۔ فائرنگ کے بعد دہشت گرد جنگل کی طرف بھاگنے لگے۔ پھر تصادم شروع ہو گیا۔ تصادم میں 4 دہشت گرد مارے گئے۔

مانا جا رہا ہے کہ 3۔4 دہشت گرد ٹرک کے ذریعہ جموں۔ سری نگر ہائی وے کے راستے کشمیر جانے کی کوشش کر رہے تھے۔ اسی دوران سلامتی دستوں نے دہشت گردوں کو گھیر لیا اور پھر تصادم شروع ہو گیا۔ اس واقعہ کے پیش نظر جموں۔ سری نگر قومی شاہراہ کے ساتھ متصل نگروٹا میں سیکورٹی سخت کر دی گئی ہے۔ اس واقعہ کے بعد سے گاڑیوں کی آمد ورفت پر نظر رکھی جا رہی ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Dec 09, 2020 09:32 AM IST