உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: راجوری اور پونچھ اضلاع سے دہشت گردوں کی دراندازی کروانے کی پاکستان کیوں کررہا سازش؟ دفاعی ماہرین نے بتائی یہ بڑی وجہ

    J&K News: راجوری اور پونچھ اضلاع سے دہشت گردوں کی دراندازی کروانے کی پاکستان کیوں کررہا سازش؟ دفاعی ماہرین نے بتائی یہ بڑی وجہ

    J&K News: راجوری اور پونچھ اضلاع سے دہشت گردوں کی دراندازی کروانے کی پاکستان کیوں کررہا سازش؟ دفاعی ماہرین نے بتائی یہ بڑی وجہ

    Jammu and Kashmir News: جموں و کشمیر میں ایل او سی اور بین الاقوامی سرحد کی حفاظت کرنے والی ہندوستانی فوج اور دیگر فورسز کی چوکسی کی وجہ سے دہشت گردوں کی طرف سے جموں و کشمیر میں دراندازی کی زیادہ تر کوششوں کو ناکام بنا دیا گیا اور دراندازوں کو اس کوشش کے دوران ہی موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu | Srinagar | Jammu | Rajouri
    • Share this:
    جموں و کشمیر : جموں و کشمیر میں ایل او سی اور بین الاقوامی سرحد کی حفاظت کرنے والی ہندوستانی فوج اور دیگر فورسز کی چوکسی کی وجہ سے دہشت گردوں کی طرف سے جموں و کشمیر میں دراندازی کی زیادہ تر کوششوں کو ناکام بنا دیا گیا اور دراندازوں کو اس کوشش کے دوران ہی موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔ اس کے باوجود پاکستان یوٹی میں دہشت گردی، انتشار اور بدامنی پیدا کرنے کے لیے دہشت گردوں کو اس طرف دھکیل رہا ہے۔ ایل او سی کے اس پار بیٹھے دہشت گردی کے ماسٹر مائنڈ کشمیر اور جموں دونوں ڈویژنوں میں ایل او سی کے پار دہشت گردوں کو جموں و کشمیر میں دھکیلنے کی کوشش کررہے ہیں۔ اگرچہ پچھلے سالوں کے مقابلے میں رواں سال دراندازی کی کوششوں میں کمی آئی ہے، تاہم حالیہ عرصے میں جموں ڈویژن کے راجوری اور پونچھ سیکٹروں میں اس طرح کی کوششوں کی تعداد کشمیر کے علاقے میں ایل او سی کے قریب کے علاقوں کے مقابلے زیادہ ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: جے کے سی اے منی لانڈرنگ کیس میں فاروق عبداللہ کو ضمانت


    تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اس کی ایک وجہ یہ ہے کہ پاکستان جموں خطے کے پرامن ماحول کو خراب کرنا چاہتا ہے۔ سابق ڈی جی پی ایس پی وید نے نیوز 18 سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کا خیال ہے کہ اس حکمت عملی سے وادی کشمیر میں دہشت گردوں پر بڑھتے ہوئے دباؤ کو کم کرنے کے لیے سیکورٹی فورسز کو پھیلانے میں مدد ملے گی ،"جموں خطہ پچھلے کئی برسوں سے کافی حد تک پرامن رہا ہے کیونکہ اس خطے میں دہشت گردی پھنپ نہیں پائی ۔ پاکستان میں مقیم ہینڈلرز جموں کے پرامن ماحول کو خراب کرنا چاہتے ہیں تاکہ حفاظتی عملے کو ان علاقوں میں بھی تعینات کیا جائے جس سے کشمیر میں دہشت گردوں پر بڑھتے ہوئے دباؤ کو کم کیا جاسکے۔ اس بات کو یقینی بنانے کے لیے راجوری اور پونچھ ان کے لیے اہم ہیں۔

    راجوری اور پونچھ کا انتخاب کرنے کی دوسری وجہ یہ ہے کہ ان دونوں سیکٹروں میں کشمیر کے مقابلے خاص طور پر سردیوں کے موسم میں دراندازی کرنا آسان ہے کیونکہ کشمیر کے علاقے جوایل او سی کے قریب ہیں وہاں برف کی گہرائی  زیادہ ہوتی ہے"۔جموں خطے میں پاکستان کی طرف سے ڈرون کی سرگرمیوں میں اضافے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے ایس پی وید نے کہا کہ اس نے پولیس اور دیگر سیکورٹی ایجنسیوں کے لیے ایک بڑا چیلنج کھڑا کر دیا ہے۔ ان کے بقول، سیکورٹی فورسز ایسی کوششوں کو ناکام بنانے کے لیے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کر رہی ہیں تاہم بعض اوقات یہ ڈراپنگ سلیپر سیلز کو موصول ہوتی ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: Ghulam Nabi Azadجموں میں طاقت کا کریں گے مظاہرہ ،15ستمبر کو ہوسکتا ہے پارٹی کا اعلان


    ایسں پی وید نے کہا،"پاکستان کی طرف سے ڈرون کی سرگرمیوں میں اضافہ ہوا ہے، اسلحہ، گولہ بارود اور منشیات جموں و کشمیر میں موجود دہشت گردوں کی مدد کے لیے گرائے جا رہے ہیں اور سلیپر سیلز کی مدد کے بغیر یہ کھیپ متعلقہ جگہوں اور افراد تک پہنچانا ناممکن ہے۔‘‘ ان کے مطابق پاکستان کے ناپاک عزائم کو ناکام بنانے کے لیے جموں و کشمیر پولیس، مرکزی ایجنسیوں کے انٹیلی جنس نیٹ ورک اور عام شہریوں کے درمیان قریبی تال میل ضروری ہے۔

     

    دفاعی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ پہاڑی علاقوں میں برف باری شروع ہونے سے پہلے پاکستان مزید دہشت گردوں کو جموں و کشمیر میں دھکیلنے کی کوشش کرے گا۔ اس لیے آنے والے دو ماہ میں دراندازی کی کوششوں میں اضافے کا امکان ہے اس لیے سیکورٹی ایجنسیوں کو اپنی چوکسی مزید بڑھانے کی ضرورت ہے
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: