உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بڈگام اور بارہمولہ میں جنگلی جانوروں نے مچائی دہشت، انسانی آبادی میں جنگلی جانوروں کی مداخلت سے لوگ پریشان

    بڈگام اور بارہمولہ میں جنگلی جانوروں نے مچائی دہشت، انسانی آبادی میں جنگلی جانوروں کی مداخلت سے لوگ پریشان، بڈگام اور بارہمولہ میں تیندووں کے حملے کئی لوگ جسمانی طور

    بڈگام اور بارہمولہ میں جنگلی جانوروں نے مچائی دہشت، انسانی آبادی میں جنگلی جانوروں کی مداخلت سے لوگ پریشان، بڈگام اور بارہمولہ میں تیندووں کے حملے کئی لوگ جسمانی طور

    وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے بیروہ میں جنگلی جانوروں نے دہشت مچائی ہے۔ یہاں آئے روز تیندوے اور ریچھ نمودار ہوتے ہیں، جن سے لوگوں کا جینا حرام ہوگیا ہے۔ گزشتہ کئی روز سے بڈگام کے بیروہ کے مختلف مقامات پر تیندوے نمودار ہوئے۔ بیروہ کے آروہ میں محکمہ وائلڈ لائف نے ایک تیندوے کو پکڑنے میں کامیابی حاصل کی۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ آروہ میں گزشتہ کئی روز سے تیندوے نے دہشت مچائی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    بڈگام: وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے بیروہ میں جنگلی جانوروں نے دہشت مچائی ہے۔ یہاں آئے روز تیندوے اور ریچھ نمودار ہوتے ہیں، جن سے لوگوں کا جینا حرام ہوگیا ہے۔ گزشتہ کئی روز سے بڈگام کے بیروہ کے مختلف مقامات پر تیندوے نمودار ہوئے۔ بیروہ کے آروہ میں محکمہ وائلڈ لائف نے ایک تیندوے کو پکڑنے میں کامیابی حاصل کی۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ آروہ میں گزشتہ کئی روز سے تیندوے نے دہشت مچائی۔ تیندوے کی وجہ سے یہاں کے لوگ اپنے گھروں میں سہم کر رہ گئے نہ یہاں لوگ اپنی کھیتوں میں جاسکتے تھے نہ ہی گھروں سے باہر آسکتے۔

    لوگوں نے محکمہ وائلڈ لائف کو مطلع کیا، جس کے بعد متعلقہ محکمہ کی ٹیم نے کارروائی کرتے ہوئے اس تیندوے کو پکڑنے میں کامیابی حاصل کی۔ لوگوں نے متعلقہ محکمہ کا شکریہ ادا کیا۔ دوسری جانب، ٹنگمرگ کے قاضی پورہ میں تیندوے نے ایک 25 سال کے نوجوان پر حملہ کیا، جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگیا۔ اسے فوراً سب ڈسٹرکٹ ٹنگمرگ پہنچایا گیا، جہاں ان کی نازک حالت دیکھتے ہی سری نگر اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں ان کا علاج ومعالجہ چل رہا ہے۔ ٹنگمرگ میں کچھ دن پہلے بھی کچھ لوگوں پر جنگلی جانوروں نے حملے کئے، جس کے نتیجے میں یہ لوگ جسمانی طور معذور ہوگئے ہیں۔ آج بڈگام کے سوئیہ بگ میں تیندوے نے ایک 9 برس کے بچے پر حملہ کرکے موت کی آغوش میں پہنچایا۔

    بتایا جاتا ہے کہ یہ اپنے گھر سے باہر نکلا تھا، اسی دوران تیندوے نے اس پر حملہ کیا۔ حالانکہ اسے نزدیکی اسپتال پہنچایا گیا، جہاں وہ نبرد آزما نہ ہو سکے۔ وادی کشمیر میں مختلف مقامات پر آئے روز ایسے دلخراش واقعات پیش آتے ہیں۔ ان حادثات کو دیکھتے ہوئے لوگوں میں کافی تشویش پائی جارہی ہے۔ سماجی کارکن تنویر احمد نے نیوز 18 اردو کے ساتھ بات چیت کرتے کہا کہ جنگلی جانوروں کی انسانی آبادی میں مداخلت سے کافی خوف وہراس پایا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسے واقعات کو روکنے کی اشد ضرورت ہے۔  محمد حسین نامی ایک مقامی نوجوان نے نیوز 18 اردو کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ جنگلات کے کٹاؤ کی وجہ سے شاید جنگلی جانوروں کا انسانی آبادی کی رخ ہونے لگا ہے۔ انہوں نے محکمہ جنگلات اور وائلڈ لائف کے ملازمین کو چوکس رہنے کی اپیل کی۔ ایسے حالات میں اس طرح کے اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے تاکہ لوگوں کی جانیں تلف ہونے سے بچ جائیں۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: