உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وادی کشمیر میں موسم سرما کی آمد، پہاڑی علاقوں میں تیاریاں شروع، بازاروں میں گرم ملبوسات و کانگڑیوں کی خریداری

    شوپیان ضلع میں آجکل بازاروں میں لوگوں کا کافی رش دیکھنے کو مل رہا ہے جس دوران لوگوں کی بھاری تعداد گرم ملبوسات کے ساتھ ساتھ کانگڑیوں کی خریداری کررہے ہیں۔

    شوپیان ضلع میں آجکل بازاروں میں لوگوں کا کافی رش دیکھنے کو مل رہا ہے جس دوران لوگوں کی بھاری تعداد گرم ملبوسات کے ساتھ ساتھ کانگڑیوں کی خریداری کررہے ہیں۔

    شوپیان ضلع میں آجکل بازاروں میں لوگوں کا کافی رش دیکھنے کو مل رہا ہے جس دوران لوگوں کی بھاری تعداد گرم ملبوسات کے ساتھ ساتھ کانگڑیوں کی خریداری کررہے ہیں۔

    • Share this:
    وادی کشمیر میں موسمِ سرما شروع ہوا ہے اور سردیوں میں آے روز اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ موسم سرما کی شروعات نومبر کے مہینے سے ہوتے ہیں جو مارچ کے مہینے تک جاری رہے گا اور ان پانچ مہینے میں وادی کشمیر میں کافی زیادہ سردی رہتی ہے اور درجہ حرارت بہت نیچے گر جاتا ہے۔سردیوں سے بچنے کیلئے لوگ آج سے ہی تیاریاں شروع کر رہے ہیں۔ جنوبی کشمیر کے پہاڑی ضلع شوپیان میں بھی لوگ موسم سرما کی تیاریوں میں مصروف ہیں یہاں کے لوگ سیب کے درختوں کی شاخ تراشی کرکے شاخوں کو جمع کرتے ہیں جس کے بعد جلا کر ان سے کوئلہ حاصل کرتے ہیں۔ کوئلے کو موسم سرما کے لئے ذخیرہ کیا جاتا ہے۔ سرما شروع ہوتے ہی کوئلہ گرمی دینے والی کشمیر کی روایتی آلہ کانگڑی میں بھر کر گرمی حاصل کرنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔ یہاں کے لوگ موسم سرما کی آمد کے ساتھ ہی غذائی اجناس اور اشیاءضروریہ کا وافر اسٹاک اپنے گھروں میں موجود رکھتے ہیں اور سردیوں سے بچنے کے لئے روایتی کانگڑیوں میں استعمال ہونے والے کوئلے کی کئی بوریاں گھروں میں دستیاب رکھتے ہیں اسکے علاؤہ گرم ملبوسات کا بڑھ چڑھ کراستعمال کرتے ہیں۔

    شوپیان ضلع میں آج کل بازاروں میں لوگوں کا کافی رش دیکھنے کو مل رہا ہے جس دوران لوگوں کی بھاری تعداد گرم ملبوسات کے ساتھ ساتھ کانگڑیوں کی خریداری کررہے ہیں۔ سڑکوں پر جگہ جگہ چھاپڑی فروشوں نے چھاپڑی لگائی ہیں جن پر گرم ملبوسات،کمبل اور کانگڑیاں سجای گئی ہیں اور لوگ موسم سرما کی آمد کی تیاریوں میں خریداری کررہے ہیں۔

    موسم سرما میں کافی برفباری ہوتی ہے اور کہی سیاح وادی کشمیر کا رُخ کرکے برفباری کا مزہ لیتے ہیں اور لطف اندوز ہوتے ہیں وہیں موسم سرما میں کشمیریوں کی زندگی کئی مسائل کی وجہ سے بڑی مشکل ہوتی ہے۔جہاں بھاری برسات اور برفباری کی وجہ سے عبورو مرور مشکل ہوکے رہ جاتا ہے وہیں بجلی اور اسکی وجہ سے پانی کی سپلائی میں رکاوٹ آنے پر لوگ گونا گوں مشکلات کا شکار ہوجاتے ہیں. کہی دنوں تک بجلی کی سپلائی متاثر ہوکر رہ جاتی ہے جبکہ درجہ حرارت منفی تک گرنے کی وجہ سے پانی کی پایپیں منہدم ہونے سے پانی بھی بند ہو جاتا ہے اور لوگوں کو کافی زیادہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: