ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جنوبی کشمیر کے نوجوان قلمکار کو گجرات کی ساہیتہ اکیڈمی کی طرف سے ایوارڈ

نیوز ایٹین اردو سے بات کرتے ہوئے عدنان نے بتایا کہ انہیں یہ ایوارڈ حاصل ہونے سے بہت خوشی ملی ہے کیونکہ کہیں نہ کہیں ان کی تحریروں کی پذیرائی ہوئی ہے۔ عدنان نے بتایا کہ ابھی تک انہوں نے تقریباً پچاس کتابیں لکھی ہیں جس میں دیگر مدیروں نے بھی ان کا ساتھ دیاہے۔

  • Share this:
جنوبی کشمیر کے نوجوان قلمکار کو گجرات کی ساہیتہ اکیڈمی کی طرف سے ایوارڈ
جنوبی کشمیر کے نوجوان قلمکار کو گجرات کی ساہیتہ اکیڈمی کی طرف سے ایوارڈ

جنوبی کشمیر کا سب ضلع ترال ہمیشہ علم وادب کا گہوارہ رہا ہے۔ وہیں، سب ضلع میں کم عمر بچے اور نوجوان کتابیں تحریر کرنے میں اپنی دلچسی دکھا رہے ہیں۔ چندری گام ترال سے تعلق رکھنے والے ایک نوجوان عدنان شفیع نے بھی بارہویں جماعت سے ہی کتابیں تحریر کرنا شروع کر دی ہیں۔ حال ہی میں انہوں نے  ایک کتاب (ٹیرس فال ان مئے ہارٹ) تحریر کی ہے جس پر انہیں (گلوبل فرٹنیٹی آف پویٹس ہریانہ) نے حوصلہ افزائی کی تھی اور چند روز قبل اس جوان  سال قلمکار کو گجرات ساہیتہ اکیڈمی کی طرف سے ایوارڈ سے نوازا گیا ہے۔


یہ ایوارڈ انہیں آن لائن تحریروں کے سلسلے میں دیا گیا ہے اور اس مقابلے میں 80 ممالک کے تین سو پچاس ادیبوں اور شاعروں نے حصہ لیا تھا جس میں انڈیا سے ایک سو کے قریب ادیب منتخب ہوئے تھے اور وادی کشمیر سے تعلق رکھنے والے جواں سال قلم کار عدنان شفیع بھی اس میں شامل ہے۔


نیوز ایٹین اردو سے بات کرتے ہوئے عدنان نے بتایا کہ انہیں یہ ایوارڈ حاصل ہونے سے بہت خوشی ملی ہے کیونکہ کہیں نہ کہیں ان کی تحریروں کی پذیرائی ہوئی ہے۔ عدنان نے بتایا کہ ابھی تک انہوں نے تقریباً پچاس کتابیں لکھی ہیں جس میں دیگر مدیروں نے بھی ان کا ساتھ دیاہے۔ اتنا ہی نہیں عدنان (بریٹش) اور( یو ایس اے) کی دو میگزین میں بطور اکیورینگ ایڈیٹر کام کررہے ہیں اور نیپال کے ایک آن لائن نیوز پیپر کے ساتھ بھی منسلک ہیں۔ عدنان چندری گام ترال کے ایک متوسط گھرانے سے تعلق رکھتے ہیں۔


عدنان کے والد محمد شفیع نے نیوز ایٹین کو بتایا کہ وہ ایک نجی اسکول میں بحثیت استاد کام کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انہیں اپنے بچے پر فخر ہے کہ اس نے ان مشکل حالات میں بھی سخت محنت کر کے اپنے علاقے کے ساتھ ساتھ وادی کا نام بھی روشن کیا ہے۔ عدنان کی اس کامیابی کو لیکر علاقے کے لوگ کافی خوش نظر آرہے ہیں۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 22, 2020 08:39 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading