سپا سینٹر کی آڑ میں سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، قابل اعتراض حالت میں ملے 7 لڑکے اور 4 لڑکیاں

پولیس نے جائے واقعہ پر سات لڑکوں اور چار لڑکیوں کو قابل اعتراض حالت میں پایا ، جس کے بعد انہیں حراست میں لے لیا ۔

Sep 27, 2019 11:46 PM IST | Updated on: Sep 27, 2019 11:46 PM IST
سپا سینٹر کی آڑ میں سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، قابل اعتراض حالت میں ملے 7 لڑکے اور 4 لڑکیاں

علامتی تصویر

اترپردیش کے غازی آباد میں کوی نگر تھانہ حلقہ کے پاش آر ڈی سی راج نگر علاقہ میں کوی نگر پولیس نے ایک سپا سینٹر پر چھاپہ مارا ۔ پولیس نے جائے واقعہ پر سات لڑکوں اور چار لڑکیوں کو قابل اعتراض حالت میں پایا ، جس کے بعد انہیں حراست میں لے لیا ۔ پولیس کو مسلسل شکایت مل رہی تھی کہ یہاں وینیٹی سپا میں ایروما تھیراپی اور اپٹن تھیراپی کے نام پر سیکس ریکیٹ کا دھندہ چلایا جارہا ہے ۔ ان شکایات کے بعد پولیس نے یہ کارروائی کی ۔ پولیس حراست میں لئے گئے لڑکوں اور لڑکیوں کا میڈیکل چیک اپ کروانے کی کارروائی کررہی ہے ۔

دراصل غازی آباد کے پاش راج نگر علاقہ میں چل رہے ایک وینیٹی سپا سینٹر کے اندر سیکس ریکیٹ چلائے جانے کی اطلاع پولیس کو ملی تھی ، جس کے بعد پولیس کی ٹیم نے یہاں چھاپہ ماری کی ۔ پولیس کے مطابق یہاں سپا کے نام پر سیکس ریکیٹ چلایا جارہا تھا ۔ چار لڑکیوں اور سات لڑکوں کو پولیس نے حراست میں لیا ہے ، جس میں یہاں کام کرنے والے کچھ لوگ بھی شامل ہیں ، جو پولیس کو دیکھ کر فرار ہونے کی کوشش کررہے تھے ۔

Loading...

پولیس کے مطابق یہاں طویل عرصہ سے یہ ریکیٹ چل رہا تھا ۔ مصروف اور پاش علاقہ میں غلط کام کرکے کافی پیسہ کمایا جارہا تھا ۔ پولیس اب ان کے کام کرنے کے طریقوں کا پتہ لگانے کے ساتھ ساتھ اس سپا سینٹر سے وابستہ لوگوں کی تلاش بھی کررہی ہے ۔ پولیس کی اس کارروائی کے بعد اس طرح کے دیگر سپا سینٹروں کی آڑ میں ہورہے غلط کاموں پر روک لگنے کا امکان ہے۔

Loading...