உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اگر 31 مارچ تک نہیں مکمل کرلیے یہ 7 ضروری کام، تو ڈیڈلائن ختم ہونے پر لگے گا بھاری جرمانہ!

    اگر 31 مارچ تک نہیں مکمل کرلیے یہ 7 ضروری کام، تو ڈیڈلائن ختم ہونے پر لگے گا بھاری جرمانہ!

    اگر 31 مارچ تک نہیں مکمل کرلیے یہ 7 ضروری کام، تو ڈیڈلائن ختم ہونے پر لگے گا بھاری جرمانہ!

    کئی ایسے بے حد ضروری کام ہیں جن کی معیاد 31 مارچ طئے کردی جاتی ہے۔ اگر آپ اس دی گئی ڈیڈ لائن سے پہلے ان کاموں کو نہیں نمٹاتے ہیں تو آپ کو بھاری رجمانہ دینا پڑسکتا ہے۔ تو آئیے جانتے ہیں 31 مارچ سے پہلے کن کاموں کو مکمل کرنا ضروری ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی:مارچ کا مہینہ ہمیشہ ہی بے حد اہم مانا جاتا ہے، کیونکہ اس مہینے کی آخری تاریخ کو مالی سال ختم ہوجات اہے۔ ایسے میں کئی ایسے بے حد ضروری کام ہیں جن کی معیاد 31 مارچ طئے کردی جاتی ہے۔ اگر آپ اس دی گئی ڈیڈ لائن سے پہلے ان کاموں کو نہیں نمٹاتے ہیں تو آپ کو بھاری رجمانہ دینا پڑسکتا ہے۔ تو آئیے جانتے ہیں 31 مارچ سے پہلے کن کاموں کو مکمل کرنا ضروری ہے۔

      1- مالی سال 2019-20 کے لئے ITR کریں ویری فائی
      انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ (IT Department) کے مطابق، جنہوں نے اب تک مالی سال 2019-20 کے لئے اپنے انکم ٹیکس ریٹرن (Income Tax Return) کا ای ویری فیکیشن (itr verification date) نہیں کیا ہے وہ ٹیکس پیئرس 28 فروری 2022 تک اپنی آئی ٹی آر (ITR) کا ای ویری فیکیشن کرسکتے ہیں۔

      2- اس ڈیٹ سے پہلے جمع کریں لائف سرٹیفکیٹ
      حکومت نے پینشن حاصل کرنے والوں کے لئے لائف سرٹیفکیٹ (life certificate for pensioners) جمع کرنے کی آخری تاریخ 31 دسمبر،2021 سے بڑھا کر 28 فروری، 2022 کردی ہے۔ اب پینشنرس اپنا لائف سرٹیفکیٹ 28 فروری، 2022 تک جمع کرسکتے ہیں۔

      3- مالی سال 2020-21 کے لئے ایڈوانس ٹیکس کی ادائیگی کی آخری تاریخ
      مالی سال 2021-22 کے لئے ایڈوانس ٹیکس ادائیگی کرنے کی آخری تاریخ 15 مارچ 2022 ہے۔ اگر آپ انکم ٹیکس بریکیٹ میں آتے ہیں تو آپ کو وقت پر اپنا ٹیکس ادا کرنا ہوتا ہے۔ وہیں، اگر کوئی شخص اس تاریخ تک ایڈوانس ٹیکس پیمنٹ نیہں کرتا ہے، تو دفعہ 234A/23B کے تحت انٹرسٹ لاگو ہوگا۔ دھیان رکھیے کہ سینئر سٹیزنس کو ایڈوانس ٹیکس کی ادائیگی سے چھوٹ دی گئی ہے۔

      4- پین کارڈ کو کریں آدھار سے لنک
      اگر آپ نے ابھی تک اپنے آدھار نمبر کے ساتھ پین کو لنک (PAN Aadhaar liking deadline) نہیں کیا ہے، تو آپ اسے ہر حال میں 31 مارچ 2022 سے پہلے کرلیں۔ اگر اس تاریخ تک آپ کا پین ااپ کے آدھار نمبر سے جڑا نہیں ہے، تو نہ صرف آپ کا پین بے کار ہوجائے گا، بلکہ آپ کو 1000 روپے جرمانہ بھی بھرنا ہوگا۔

      5-بیلیٹیڈ آئی ٹی آر فائلنگ
      اگر آپ 31 دسمبر 2021 کو مالی سال 2020-21 کے لئے اپنا آئی ٹی آر فائل کرنے سے رہ گئے ہیں تو ابھی آپ کے پاس ایک موقع ہے۔ آپ طئے شدہ تاریخ 31 مارچ، 2022 تک بیلیٹیڈ ریٹرن بھرسکتے ہیں۔ دراصل، 1 جنوری 2022 کے درمیان انکم ٹیکس ریٹرن داخل کیا گیا اور 31 مارچ 2022 کو زیر التوا آئی ٹی آر کہا جائے گا۔ دیر سے آئی ٹی آر فائل کرنے پر 5000 روپے (5 لاکھ روپے تک کی مجموعی انکم کے لئے 1000 روپے) کا لیٹ فائن لگایا جائے گا۔

      6- مالی سال 2021-22 کے لئے ٹیکس سیونگ پریکٹیس
      اگر آپ نے مالی سال 2021-22 کے لئے پرانی ٹیکس سسٹم کا آپشن منتخب کیا ہے تو آپ نے 31 مارچ 2022 تک اپنی ٹیکس سیونگ پریکٹس پورا کرلی ہے، اسے یقینی بنالیں۔ اس کا مطلب یہ ہوگا کہ ٹیکس پیئرس کو یہ یقینی بنانا ہوگا کہ انہوں نے سبھی سیکشن کے تحت دستیاب ڈیڈکشن کا فائدہ اٹھایا ہے۔

      7- بینک KYC
      ریزرو بینک آف انڈیا (RBI) نے کے وائی سی کو پورا کرنے کی معیاد کو 31 دسمبر 2021 سے بڑھا کر 31 مارچ 2022 کردی ہے۔ آر بی آئی نے مالی اداروں کو رواں مالی سال 2021-22 کے آخر تک کے وائی سی اپ ڈیٹ (Bank KYC update)کرنے کو لے کر کوئی کارروائی نہیں کرنے کی صلاح دی ہے۔ KYC کے تحت گاہکوں سے اُس کے پین کارڈ، پتہ جیسے آدھار، پاسپورٹ ود یگر کو اپ ڈیٹ کرانے کے لئے بینک کہتا ہے۔ اس کے ساتھ ہی حالیہ فوٹوگراف اور دیگر جانکاری بھی مانگی جاتی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: