உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایئر انڈیا میں بہت جلد 30 نئے ہوائی جہازوں کا ہوگا اضافہ، بین الاقوامی مسافروں کیلئے ہوگی خصوصی پروازیں

    ایئر انڈیا کے وسیع باڈی والے بیڑے میں اس وقت 43 طیارے ہیں

    ایئر انڈیا کے وسیع باڈی والے بیڑے میں اس وقت 43 طیارے ہیں

    Tata Groupتوقع ہے کہ چار A321 طیارے سال 2023 کی پہلی سہ ماہی میں ایئر انڈیا کے بیڑے میں شامل ہوں گے، جبکہ 21 A320 کو 2023 کے دوسرے نصف حصے میں شامل کیا جائے گا۔ یہ طیارے گھریلو شعبوں کے ساتھ ساتھ مختصر سفر کے لیے بھی تعینات کیے جائیں گے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • INTER, IndiaUSAUSAUSA
    • Share this:
      ایئر انڈیا (Air India) نے اپنے موجودہ بیڑے میں 25 ایربس نارو باڈی اور 5 بوئنگ وائیڈ باڈی طیارے شامل کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ ایئر انڈیا نے 25 ایئربس نارو باڈی اور 5 بوئنگ وائیڈ باڈی طیاروں کے لیے لیز اور لیٹر آف انٹینٹ پر دستخط کیے ہیں جو 2022 کے آخر میں شروع کیے جائیں گے۔ جس سے ایئر لائن کے بیڑے میں 25 فیصد سے زیادہ کا اضافہ ہوگا۔ یہ نئے طیارے اس سال کے شروع میں ٹاٹا گروپ (Tata Group) کے ذریعہ ایئر انڈیا کے حصول کے بعد بڑی پیش رفت ہوگی۔ لیز پر لیے جانے والے طیاروں میں یہ طیارے شامل ہیں:

      21 عدد Airbus A320neos

      4 عدد Airbus A321neos

      5 عدد Boeing B777-200LRs

      ایئر لائن کے مطابق B777-200LRs دسمبر 2022 اور مارچ 2023 کے درمیان بیڑے میں شامل ہوں گے اور ہندوستانی میٹرو شہروں سے ریاستہائے متحدہ امریکہ کے سفر کے لیے اپنی سہولیات فراہم کریں گے۔ ممبئی سان فرانسسکو کے ساتھ ساتھ نیویارک کے علاقے کے دونوں بین الاقوامی ہوائی اڈوں، نیوارک لبرٹی اور جان ایف کینیڈی کے لیے پروازوں میں اضافہ ہوگا، جبکہ بنگلور سے سان فرانسسکو کے لیے ہفتہ وار سروس دستیاب ہوگی۔ ان طیاروں کے نتیجے میں ایئر انڈیا پہلی بار پریمیم اکانومی ہول پروازیں پیش کرے گا۔

      یہ بھی پڑھئے: ’تعلیمی اداروں میں باصلاحیت اور صنعتوں کی ضروریات کو پورا کرنے والے طلبہ کو کیا جائے تیار‘
      سابق ممبر اسمبلی چودھری ذاکر حسین نے کہا کہ جب انہوں نے ہریانہ وقف بورڈ کے ایڈمنسٹریٹر کی ذمہ داری سنبھالی تھی، اس وقت وقف بورڈ مالی تنگی کا شکار تھا ، لیکن ریاست کے وزیر اعلی اور ہریانہ وقف بورڈ کے افسران کی سخت محنت اور کئی سالوں سے لیز کی تجدید نہیں ہونے کی وجہ سے حالات خراب تھے، لیکن جیسے ہی وقف بورڈ کی اراضی کی لیز کی تجدید کی گئی تو کروڑوں روپے کی آمدنی حاصل ہوئی ۔

      یہ بھی پڑھئے: وارانسی کے ڈسٹرکٹ جج اے کے وشویش کون ہیں؟ جنھوں نے سنایا گیانواپی مسجد کیس کا فیصلہ

      توقع ہے کہ چار A321 طیارے سال 2023 کی پہلی سہ ماہی میں ایئر انڈیا کے بیڑے میں شامل ہوں گے، جبکہ 21 A320 کو 2023 کے دوسرے نصف حصے میں شامل کیا جائے گا۔ یہ طیارے گھریلو شعبوں کے ساتھ ساتھ مختصر سفر کے لیے بھی تعینات کیے جائیں گے۔ جس سے بین الاقوامی سفر میں بھی آسانی ہوگی۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: