உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    انڈیگو کا بڑا اعلان، یکم ستمبر سے ان روٹس کیلئے ملے گی سیدھی فلائٹ، چیک کریں تفصیلات

    بتادیں کہ مہینے کی شروعات سے ایئرلائن نے ممبئی ، دہلی ، حیدرآباد اور اندور سے جبل پور کے لیے 20 اگست سے سیدھی پروازیں شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔

    بتادیں کہ مہینے کی شروعات سے ایئرلائن نے ممبئی ، دہلی ، حیدرآباد اور اندور سے جبل پور کے لیے 20 اگست سے سیدھی پروازیں شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔

    بتادیں کہ مہینے کی شروعات سے ایئرلائن نے ممبئی ، دہلی ، حیدرآباد اور اندور سے جبل پور کے لیے 20 اگست سے سیدھی پروازیں شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔

    • Share this:
      نئی دہلی. بجٹ ایئر لائن انڈیگو (Indigo) یکم ستمبر سے گوالیر کو مدھیہ پردیش اور دہلی (Delhi-Gwalior and Indore-Gwalior route) سے جوڑنے والی روزانہ پروازیں (Daily Flights) شروع کرے گی۔ ہوا بازی کے وزیر جیوتیرادتیہ سندھیا (Aviation Minister Jyotiraditya Scindia) نے 13 اگست کو ایک ٹویٹ میں کہا کہ انڈیگو ایئرلائنز یکم ستمبر سے روزانہ کی بنیاد پر دہلی-گوالیر اور اندور-گوالیر کے درمیان نئی فلائٹ روٹس کا کام شروع کرے گی۔

      وزیر کی جانب سے یہ اعلان 12 اگست کو انڈیگو کی اپنی پہلی بریلی-ممبئی پرواز کو ہری جھنڈی دکھانے کے ایک دن بعد سامنے آیا ہے جو علاقائی رابطہ اڑے دیش کا عام شہری (اڑان) اسکیم کے تحت آپریٹ ہوگی۔

      بریلی یوپی کا 8 واں ہوائی اڈہ ہے۔۔
      شہری ہوا بازی کی وزارت نے ٹویٹ کرکے کہا ،UDAN کے تحت کمرشیل فلائٹ آپریٹ کے لیے بریلی ہوائی اڈے کو تیار کیا گیا ہے۔ لکھنؤ ، وارانسی ، گورکھپور ، کانپور ، ہندون ، آگرہ اور پریاگراج کے بعد بریلی اترپردیش کی 8 ویں ریاست ہے۔ انڈیگو نے جمعرات کو ایک پریس ریلیز میں کہا کہ بریلی سے اس کی نئی پرواز 2021 میں ملک کے سات بڑے علاقائی مقامات کو جوڑنے کے منصوبے پر پیش رفت کی نشاندہی کرتی ہے۔

      دیگر فلائٹس کا بھی اعلان
      بتادیں کہ مہینے کی شروعات سے ایئرلائن نے ممبئی ، دہلی ، حیدرآباد اور اندور سے جبل پور کے لیے 20 اگست سے سیدھی پروازیں شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے علاوہ مدھیہ پردیش شہر سے مزید 4 پروازیں 28 اگست سے شروع ہوں گی۔ ایئرلائن ہفتے میں چار دن بریلی سے ممبئی کے لیے پروازیں آپریٹ کرے گی جبکہ 14 اگست سے یہ ہفتے میں تین بار بنگلورو کے لیے پروازیں آپریٹ ہوں گی۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: