உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بجلی صارفین کے لیے اسکیم! حکومت نے دیا ون ٹائم سیٹلمنٹ کا آفر

    وزیر اعلیٰ پرمود ساونت نے کہا کہ ریاستی کابینہ نے بدھ کو اپنی کابینہ کی میٹنگ میں بجلی کے بلوں کے لیے ون ٹائم سیٹلمنٹ (او ٹی ایس) اسکیم کو دوبارہ متعارف کرانے کی منظوری دی ہے۔ اس اسکیم کا ہدف 402 کروڑ روپے بجلی کے بقایا جات کی وصولی ہے۔

    وزیر اعلیٰ پرمود ساونت نے کہا کہ ریاستی کابینہ نے بدھ کو اپنی کابینہ کی میٹنگ میں بجلی کے بلوں کے لیے ون ٹائم سیٹلمنٹ (او ٹی ایس) اسکیم کو دوبارہ متعارف کرانے کی منظوری دی ہے۔ اس اسکیم کا ہدف 402 کروڑ روپے بجلی کے بقایا جات کی وصولی ہے۔

    وزیر اعلیٰ پرمود ساونت نے کہا کہ ریاستی کابینہ نے بدھ کو اپنی کابینہ کی میٹنگ میں بجلی کے بلوں کے لیے ون ٹائم سیٹلمنٹ (او ٹی ایس) اسکیم کو دوبارہ متعارف کرانے کی منظوری دی ہے۔ اس اسکیم کا ہدف 402 کروڑ روپے بجلی کے بقایا جات کی وصولی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Goa, India
    • Share this:
      نئی دہلی. بجلی کے صارفین کو راحت دیتے ہوئے، گوا حکومت نے چھ ماہ کی میعاد کے ساتھ زیر التواء بجلی بلوں کی ادائیگی کے لیے ون ٹائم سیٹلمنٹ اسکیم کو واپس لایا ہے۔ وزیر اعلیٰ پرمود ساونت نے کہا کہ ریاستی کابینہ نے بدھ کو اپنی کابینہ کی میٹنگ میں بجلی کے بلوں کے لیے ون ٹائم سیٹلمنٹ (او ٹی ایس) اسکیم کو دوبارہ متعارف کرانے کی منظوری دی ہے۔ اس اسکیم کا ہدف 402 کروڑ روپے بجلی کے بقایا جات کی وصولی ہے۔

      ساونت نے کہا، ’’یہ اسکیم اگلے چھ ماہ تک لاگو ہوگی۔‘‘ سی ایم نے کہا کہ یہ اسکیم اس سال کے شروع میں شروع کی گئی تھی، لیکن اس وقت بہت سے لوگوں نے اس کا فائدہ نہیں اٹھایا۔ اس اسکیم کے تحت 17,801 ایسے صارفین ہیں جن کے بجلی کے بلز زیر التواء ہیں۔

      ریاستی وزیر توانائی سدین دھاولیکر نے میڈیا کو بتایا کہ بجلی صارفین کی درخواستوں کے بعد اسکیم کو بحال کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان صنعتی یونٹوں کو بھی اس سکیم میں شامل کیا گیا ہے جنہوں نے بجلی کے واجبات ادا نہیں کئے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: