اپنا ضلع منتخب کریں۔

     نقدی بحران سے جوجھ رہا پاکستان 'جگاڑ' سے ادا کرے گا 1ارب ڈالر کا قرض

    پاکستان کے سینٹرل بینک کے سربراہ نے جمعہ کو یہ اطلاع دی۔ 1.08 بلین امریکی ڈالر کے بانڈ کی ادائیگی 5 دسمبر کو ہونی ہے اور موجودہ معاشی مشکلات کی وجہ سے خدشہ ہے کہ پاکستان بیرونی ذمہ داریوں سے چوک کر سکتا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Pakistan
    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان، جو بڑھتی ہوئی مہنگائی، گرتی ہوئی معیشت اور نقدی کی کمی سے جوجھ رہا ہے، مقررہ تاریخ سے تین دن پہلے 2 دسمبر کو ایک ارب ڈالر کے بین الاقوامی بانڈز کی ادائیگی کرے گا۔ پاکستان کے سینٹرل بینک کے سربراہ نے جمعہ کو یہ اطلاع دی۔ 1.08 بلین امریکی ڈالر کے بانڈ کی ادائیگی 5 دسمبر کو ہونی ہے اور موجودہ معاشی مشکلات کی وجہ سے خدشہ ہے کہ پاکستان بیرونی ذمہ داریوں سے چوک کر سکتا ہے۔

      ادائیگی کی تفصیلات بتاتے ہوئے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے گورنر جمیل احمد نے کہا کہ ایشین انفراسٹرکچر انویسٹمنٹ بینک سمیت کثیر جہتی اور دوطرفہ ذرائع سے اگلے ہفتے منگل تک 500 ملین امریکی ڈالر کا بندوبست کر لیا گیا ہے۔

      2023 کے آخر تک حالات بہتر ہوں گے۔
      گورنر نے کہا کہ نومبر میں 1.8 بلین امریکی ڈالر کی ادائیگی کے باوجود زرمبادلہ کے ذخائر مستحکم ہیں۔ اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ 18 نومبر کو سنٹرل بینک کے پاس 7.8 بلین ڈالر تھے لیکن یہ ایک ماہ کی درآمدات کے لیے بمشکل کافی ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: