ہوم » نیوز » معیشت

سائبر حملے کا سب سے زیادہ خطرہ بینکوں پر ہوا! 118 کروڑ روپئے کا نقصان 

ٹکنالوجی کے اس بدلتے دور میں چیزیں آسان ہونے کے ساتھ۔ساتھ خطرناک بھی ہوگئی ہیں۔ دنیا میں سائبر اٹیک کے واقعات میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔ جانئے سائبر حملوں سے سب سے زیادہ متاثرہ شعبے کون سے ہیں؟

  • Share this:
سائبر حملے کا سب سے زیادہ خطرہ بینکوں پر ہوا! 118 کروڑ روپئے کا نقصان 
ٹکنالوجی کے اس بدلتے دور میں چیزیں آسان ہونے کے ساتھ۔ساتھ خطرناک بھی ہوگئی ہیں۔ دنیا میں سائبر اٹیک کے واقعات میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔ جانئے سائبر حملوں سے سب سے زیادہ متاثرہ شعبے کون سے ہیں؟

ٹکنالوجی کے اس بدلتے دور میں چیزیں آسان ہونے کے ساتھ۔ساتھ خطرناک بھی ہوگئی ہیں۔  دنیا میں سائبر اٹیک کے واقعات میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔ جانئے سائبر حملوں سے سب سے زیادہ متاثرہ شعبے کون سے ہیں؟ سائبر کرائم سے متاثرہ شعبے میں انشیورنس پانچویں نمبر پر رہا ہے۔ 2018 میں سائبر کرائم سے 1.58 کروڑ کا نقصان ہوا ہے۔ جو گزشتہ سال کے مقابلے میں 22فیصدسے زیادہ ہے۔ اس معاملے میں چوتھا سب سے زیادہ متاثرہ شعبہ آٹوموٹو رہا ہے۔ سائبر حملوں کی وجہ سے 2018 میں اس نے 15.8 ملین ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔ جو گزشتہ سال کے مقابلے میں 47فیصد سے زیادہ ہے۔

سائبر کرائم سے متاثر تیسرا سب سے بڑا شعبہ انفارمیشن  اینڈ  ٹکنالوجی  اسافٹ ویئر ہے۔ سال 2018 میں اس شعبے کو 160 ملین ڈالر کا نقصان جھیلنا پڑا ہے۔ 2017 کے موزازنہ میں یہ اعداد و شمار 11فیصد سے زیادہ تھے۔ دوسرا مقام پر سب سے زیادہ سائبر کرائم کا شکار بننے والا شعبہ یوٹیلیٹی رہا ہے۔ یہ پبلک سروس اور انفراسٹرکچر سے جڑا شعبہ ہے۔ سائبر کرائم سے وجہ سے اسے 1.78 کروڑ ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔

سائبر کرائم کی وجہ سے سب سے زیادہ بینکنگ شعبے کو نقصان پہنچا ہے۔ 2018 میں یہ نقصان 18.8 کروڑ ڈالر کا رہا، جو 2017 کے مقابلے میں 11 فیصد اضافہ رہا ہے۔


یہ بھی پڑھیں: وہاٹس ایپ سے جاسوسی کے کون۔کون ہوئے شکار؟ مودی حکومت نے 4 دن میں طلب کیا جواب

First published: Nov 01, 2019 10:00 AM IST