உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایپل جیسی کمپنیوں کو 45 ارب کی مراعات دے گا مرکز، چین کے پروڈکشن Base کو ملے گا چیلنج

    ایپل جیسی کمپنیوں کو 45 ارب کی مراعات دے گا مرکز، چین کے پروڈکشن Base کو ملے گا چیلنج (تصویر: فائل فوٹو)

    ایپل جیسی کمپنیوں کو 45 ارب کی مراعات دے گا مرکز، چین کے پروڈکشن Base کو ملے گا چیلنج (تصویر: فائل فوٹو)

    یہ فیصلہ ایپل، ڈیل، ایچ پی اور آسٹک جیسی کمپنیوں کو مقامی پروڈکشن بڑھانے یا شروع کرنے کے مقصد سے ہے۔ حالانکہ، ایپل پہلے سے ہی ہندوستان میں آئی فون کی اسمبلنگ کررہی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • New Delhi, India
    • Share this:
      ملک میں لیپ ٹاپ اور ٹیبلیٹ بنانے والی اور ایکسپورٹ ہب کے لئے غیر ملکی الیکٹرانک کمپنیوں کو حکومت 45 ارب روپے کی مراعاتی رقم دے سکتی ہے۔ حکومت کے اس قدم سے چین کے پروڈکشن بیس کو چیلنج ملے گا۔ ساتھ ہی ہندوستان کو ایکسپورٹ ہب بنانے میں مدد ملے گی۔

      وزارت ٹیکنالوجی نے اس معاملے میں صنعت کے حکام کو ایک ایڈوائزری جاری کی ہے۔ اس میں فی کمپنی مراعات کی رقم 4000 کروڑ روپے سے زیادہ ہو سکتی ہے۔ ہندوستان اس طرح کے پروڈکٹس کی درآمدات کو کم کرنے اور طویل مدتی میں ملک کو ایکسپورٹ ہب بنانے کے لیے ٹیبلیٹ اور پروڈکشن کو بڑھانا چاہتا ہے۔

      مراعات کی رقم آلات کی مقامی پیداوار پر منحصر ہوگی جو تیار پروڈکٹس پر 6 فیصدی کے برابر ہوسکتا ہے۔ حالانکہ، انڈسٹری سے بات چیت کے بعد اس منصوبہ میں تبدیلی بھی لائی جاسکتی ہے۔ گزشتہس ال ہندوستان نے مقامی طور پر تیار کردہ لیپ ٹاپ، ٹیبلیٹ اور پرسنل کمپیوٹر جیسے آئی ٹی پروڈکٹس کے ایکسپورٹ کے لئے 73.5 ارب روپے کا پروگرام شروع کیا تھا، لیکن کم مراعات یا ترغیب کی وجہ سےیہ کوشش کمپنیوں کو راغب کرنے میں ناکام ہوگئی تھی۔ حکومت پہلے سے ہی گھریلو کمپنیوں کو پی ایل آئی کے تحت سرمایہ کاری کرنے کے لئے راغب کررہی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      اکتوبر میں بینکوں میں چھٹیوں کی برسات، 21 دن برانچ بند، آن لائن سروس سے چلانا ہوگا کام

      یہ بھی پڑھیں:
      ٹاٹا کی کمپنی بھی بنائے گی آئی فون، اس وجہ سے کم ہوسکتی ہے قیمتیں

      پانچ سال میں 7 ارب روپے کی کرنی ہوگی سرمایہ کاری
      یہ فیصلہ ایپل، ڈیل، ایچ پی اور آسٹک جیسی کمپنیوں کو مقامی پروڈکشن بڑھانے یا شروع کرنے کے مقصد سے ہے۔ حالانکہ، ایپل پہلے سے ہی ہندوستان میں آئی فون کی اسمبلنگ کررہی ہے۔ وہ اب مقامی طور پر آئی پیڈ بنانے کا کام شروع کرسکتی ہے۔ اس مراعاتی رقم کو پانے کے لئے کمپنیوں کو ملک میں پانچ سال میں 7 ارب روپے کی سرمایہ کاری کرنی ہوگی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: