உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    خوردنی تیل کی درآمدات کوکم کرنےکےاقدامات پرتبادلہ خیال، مرکزوریاستوں کےدرمیان NITI Aayog کی میٹنگ

     وزیر اعظم نریندر مودی

    وزیر اعظم نریندر مودی

    کیرالہ کے وزیر اعلیٰ پنارائی وجین (Pinarayi Vijayan) نے میٹنگ میں مطالبہ کیا کہ آئین کی کنکرنٹ لسٹ (مشترکہ فہرست) میں شامل موضوعات پر قانون سازی ریاستوں کے ساتھ مناسب مشاورت کے بعد ہی شروع کی جانی چاہئے اور مرکز کو ریاستی فہرست میں شامل اشیاء میں قانون سازی سے باز رہنا چاہئے۔

    • Share this:
      نیتی آیوگ کے رکن رمیش چند نے کہا کہ مرکز اور ریاستوں نے اتوار کے روز ملک کے کچھ حصوں میں شدید دباؤ کے درمیان خوردنی تیل (edible oil) پر درآمدی انحصار کو کم کرنے اور فصلوں کو متنوع بنانے کے لیے ضروری اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔ نیتی آیوگ (NITI Aayog) کی گورننگ کونسل کی ساتویں میٹنگ میں ریاستوں نے دالوں اور خوردنی تیل کے لیے موثر کم از کم امدادی قیمت (MSP) کی ضرورت پر زور دیا۔ اس اجلاس کی صدارت وزیر اعظم نریندر مودی (Narendra Modi) نے کی۔

      انہوں نے مزید کہا کہ اس ملاقات کے دوران وزیراعظم نے زرعی تنوع کی ضرورت اور خوردنی تیل میں خود کفالت کی ضرورت کی وضاحت کی۔ وزیر اعظم نے ذکر کیا کہ ہندوستان 1 روپیے ٹریلین کا خوردنی تیل درآمد کر رہا ہے اور ملک خوردنی تیل کی اپنی کل طلب کا نصف درآمدات سے پورا کر رہا ہے۔

      چاند نے کہا کہ ریاستوں نے اپنے تجربات کو شیئر کیا کہ وہ کس طرح فصلوں کو متنوع بنا رہے ہیں، خاص طور پر وہ ریاستیں جہاں قدرتی وسائل اور پانی وافر مقدار میں دستیاب ہے۔ ریاستوں نے اس بارے میں بھی معلومات شیئر کیں کہ وہ کسانوں کو فصل کے انداز کو تبدیل کرنے کے لیے کس قسم کی ترغیبات دیتے ہیں۔

      ریاستوں نے اپنی تشویش کا اظہار کیا۔ کیرالہ کے وزیر اعلیٰ پنارائی وجین (Pinarayi Vijayan) نے میٹنگ میں مطالبہ کیا کہ آئین کی کنکرنٹ لسٹ (مشترکہ فہرست) میں شامل موضوعات پر قانون سازی ریاستوں کے ساتھ مناسب مشاورت کے بعد ہی شروع کی جانی چاہئے اور مرکز کو ریاستی فہرست میں شامل اشیاء میں قانون سازی سے باز رہنا چاہئے۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      Islamic Jihad: فلسطینی اسلامی جہاد کیا ہے؟ اسرائیل کیوں بنا رہا ہے اسے خاص نشانہ؟

      بیان میں کہا گیا ہے کہ کیرالہ کے وزیر اعلیٰ نے ضروری اشیاء پر جی ایس ٹی کے نفاذ پر نظرثانی کا مطالبہ بھی کیا اور ریاستوں کو مزید پانچ سال تک جی ایس ٹی معاوضہ جاری رکھنے کی درخواست کی۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Israel bombs Gaza: ’یہ یوکرئن نہیں غزہ ہے‘ غزہ پر اسرائیلی بمباری سے فلسطینی عوام میں شدید بے چینی!

       

      خبر رساں ایجنسی اے این آئی کی خبر کے مطابق اوڈیشہ کے وزیر اعلی نوین پٹنائک (Naveen Patnaik) نے مرکز پر زور دیا کہ وہ اوڈیشہ کو خاص توجہ دے اور ڈیزاسٹر پروفنگ کے لیے فنڈز دے کیونکہ ریاست تقریباً ہر سال قدرتی آفات سے متاثر ہوتی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: