உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مہنگائی بھتے میں نہیں ہوا اضافہ، جانیے اس کی 2 بڑی وجہ

     آل انڈیا اکاؤنٹس اینڈ آڈٹ کمیٹی کے جنرل سکریٹری ہری شنکر تیواری کے مطابق، مہنگائی الاؤنس میں ہر سال دو گنا اضافہ ہوتا ہے۔ ایک مرتبہ جنوری میں اور دوسرا جولائی میں۔ ابھی تک، جنوری 2022 میں ڈی اے بڑھانے کا کوئی اعلان نہیں ہے۔ اس کی 2 بڑی وجوہات ہو سکتی ہیں۔

    آل انڈیا اکاؤنٹس اینڈ آڈٹ کمیٹی کے جنرل سکریٹری ہری شنکر تیواری کے مطابق، مہنگائی الاؤنس میں ہر سال دو گنا اضافہ ہوتا ہے۔ ایک مرتبہ جنوری میں اور دوسرا جولائی میں۔ ابھی تک، جنوری 2022 میں ڈی اے بڑھانے کا کوئی اعلان نہیں ہے۔ اس کی 2 بڑی وجوہات ہو سکتی ہیں۔

    آل انڈیا اکاؤنٹس اینڈ آڈٹ کمیٹی کے جنرل سکریٹری ہری شنکر تیواری کے مطابق، مہنگائی الاؤنس میں ہر سال دو گنا اضافہ ہوتا ہے۔ ایک مرتبہ جنوری میں اور دوسرا جولائی میں۔ ابھی تک، جنوری 2022 میں ڈی اے بڑھانے کا کوئی اعلان نہیں ہے۔ اس کی 2 بڑی وجوہات ہو سکتی ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ہولی گزر گئی۔ لیکن سرکاری ملازمین ایک اور اچھی خبر کے منتظر ہیں۔ وہ اپنے مہنگائی الاؤنس(Dearness Allowance) میں اضافے کا انتظار کر رہے ہیں۔ مرکزی حکومت عام طور پر مارچ میں مہنگائی الاؤنس میں اضافے کا اعلان کرتی ہے۔ لیکن مارچ کا نصف سے زیادہ وقت گزر چکا ہے اور ابھی تک کوئی اعلان نہیں ہوا۔ ماہرین کی مانیں تو مہنگائی الاؤنس میں تاخیر کی کوئی ٹھوس وجہ نہیں ہے۔ مہنگائی الاؤنس میں اضافے کو کابینہ کی منظوری کے ساتھ ہی جنوری 2022 سے نافذ کیا جائے گا۔

      اے جی آفس برادرہڈ کے سابق صدر اور آل انڈیا اکاؤنٹس اینڈ آڈٹ کمیٹی کے جنرل سکریٹری ہری شنکر تیواری کے مطابق، مہنگائی الاؤنس میں ہر سال دو گنا اضافہ ہوتا ہے۔ ایک مرتبہ جنوری میں اور دوسرا جولائی میں۔ ابھی تک، جنوری 2022 میں ڈی اے بڑھانے کا کوئی اعلان نہیں ہے۔ اس کی 2 بڑی وجوہات ہو سکتی ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      مہنگائی کادوہراجھٹکا!137دن بعدPetrol-Dieselکی قیمت80 پیسے لیٹر،رسوئی گیس LPGکے بھی بڑھےدام

      کیبنٹ نوٹ تیار نہ ہوا ہو
      ہری شنکر تیواری کے مطابق، اس کی بڑی وجہ یہ ہو سکتی ہے کہ مہنگائی الاؤنس میں اضافے کے لیے کابینہ کا نوٹ ابھی تیار نہیں ہے۔ نوٹ میں مہنگائی الاؤنس میں کتنا اضافہ کیا جائے گا اور اس سے سرکاری خزانے پر کتنا اثر پڑے گا، اس کی تفصیلات ابھی باقی ہیں۔ یہ اضافہ کتنے سرکاری ملازمین پر لاگو ہوگا، یہ بھی اعداد و شمار باقی ہیں۔ حکومت نے پنشنرز کے لیے مہنگائی بھتہ جیسے مہنگائی ریلیف میں اضافے کا اعلان کیاہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      ملک میں2030تک بڑھ کر32.64ملین ٹن ہوگی دالوں کی مانگ،پیداوار بڑھاکر فائدہ اٹھاسکتے ہیں کسان

      مجوزہ بجٹ
      ہری شنکر تیواری کے مطابق سرکاری ملازمین کا مالی سال فروری میں ہی مکمل ہوتا ہے۔ اس لیے اس وقت تک ان کا ٹیکس بھی کاٹا جاتا ہے۔ پھر 31 مارچ کو مالی سال کے اختتام کے چکر میں کام بڑھ جاتا ہے۔ تاخیر کی ایک وجہ یہ بھی ہو سکتی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: