உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Defense Companies in Profit:کارپوریٹائزیشن کے بعد دفاعی کمپنیوں نے کمایا خوب منافع، جانیے کتنا ہوا فائدہ

    کارپوریٹائزیشن سے دفاعی کمپنیوں کو ہوا خوب فائدہ۔

    کارپوریٹائزیشن سے دفاعی کمپنیوں کو ہوا خوب فائدہ۔

    Defense Companies in Profit: او ایف بی میں کام کرنے والے ملازمین نے بھی کارپوریٹائزیشن کی مخالفت کی تھی۔ لیکن حکومت نے یقین دہانی کرائی تھی کہ کسی ملازم کو نوکری سے نہیں نکالا جائے گا اور ان کمپنیوں کو منافع بخش کمپنیوں میں تبدیل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

    • Share this:
      Defense Companies in Profit: ملک کی دفاعی کمپنیوں کے کارپوریٹائزیشن کے بعد ایک بڑی خوشخبری سامنے آئی ہے۔ وزارت دفاع کے ماتحت تمام سات بڑے دفاعی PSUs میں سے چھ نے کارپوریٹائزیشن کے چھ ماہ کے اندر بھاری منافع کمانا شروع کر دیا ہے۔ جبکہ گزشتہ تین سالوں سے یہ ساتوں کمپنیاں خسارے میں چل رہی تھیں۔ اس کے ساتھ ایک کمپنی کو 500 کروڑ کے گولہ بارود کا ایکسپورٹ آرڈر بھی ملا ہے۔

      وزارت دفاع نے جمعہ کو ایک بیان جاری کیا اور کہا کہ Yantra India Limited (YIL) کو چھوڑ کر، تمام سات کمپنیوں نے اکتوبر 2021 سے اس سال اپریل تک چھ مہینوں میں کل 8400 کروڑ کا کاروبار کیا ہے۔ اس میں سے Munition India Limited (MIL) کو 500 کروڑ کا ایکسپورٹ آرڈر بھی ملا ہے اور اس نے 28 کروڑ کا منافع بھی کمایا ہے۔ جبکہ گزشتہ تین سالوں سے یہ کمپنی 677 کروڑ کے خسارے میں چل رہی تھی۔ اگرچہ YIL کمپنی اب بھی 111 کروڑ کے خسارے میں چل رہی ہے لیکن اسے ہندوستانی ریلوے سے ایکسل بنانے کا بہت بڑا آرڈر بھی ملا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      ریلائنس اوریو اے ای کے تعزیز نے 2 بلین ڈالر کے شیئر ہولڈر معاہدہ پر دستخط کئے

      آپ کو بتادیں کہ پچھلے سال اکتوبر میں دسہرہ کے موقع پر، حکومت نے 7 نئے دفاعی PSUs بنانے کے لیے آرڈیننس فیکٹری بورڈ (OFB) کے تحت 41 کمپنیوں اور فیکٹریوں کو کارپوریٹائز کیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      IMF: ہندوستان میں بڑھتا افراط زر! تیل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں پر قابو پانے کا کیا ہے منصوبہ؟

      او ایف بی میں کام کرنے والے ملازمین نے بھی کارپوریٹائزیشن کی مخالفت کی تھی۔ لیکن حکومت نے یقین دہانی کرائی تھی کہ کسی ملازم کو نوکری سے نہیں نکالا جائے گا اور ان کمپنیوں کو منافع بخش کمپنیوں میں تبدیل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔ اس کے علاوہ ان کمپنیوں اور کارخانوں میں جدید قسم کا گولہ بارود، اسلحہ اور دیگر فوجی ساز و سامان بنایا جائے گا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: