جس نے دی فیس بک کو پہلی فنڈنگ، زکربرگ نے کیسے کر دیا تھا اسی کو باہر، کہانی اتنی دلچسپ کی بن گئی فلم

مارک زکربرگ

مارک زکربرگ

مارک زکربرگ فیس بک کے قیام کے 4 سال بعد 2008 میں ارب پتی بنے۔ اس وقت ان کی عمر صرف 23 سال تھی اور وہ دنیا کے سب سے کم عمر ارب پتی تھے۔ انہوں نے فوربس کی فہرست میں 321 ویں نمبر پر ڈیبیو کیا تھا.

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • New Delhi, India
  • Share this:
    مارک زکربرگ فیس بک کے قیام کے 4 سال بعد 2008 میں ارب پتی بنے۔ اس وقت ان کی عمر صرف 23 سال تھی اور وہ دنیا کے سب سے کم عمر ارب پتی تھے۔ انہوں نے فوربس کی فہرست میں 321 ویں نمبر پر ڈیبیو کیا تھا اور پھر ان کی مجموعی مالیت 1.5 بلین ڈالر تھی۔ یہ تو تقریباً سبھی جانتے ہیں کہ فیس بک کی بنیاد مارک زکربرگ نے رکھی تھی لیکن کیا آپ یہ بھی جانتے ہیں کہ وہ کمپنی کے واحد بانی نہیں تھے۔ اس وقت زکربرگ کے پاس ویب سائٹ شروع کرنے کے لیے پیسے بھی نہیں تھے۔ اسی دوران انٹری ہوئی ایڈورڈو سیورین (eduardo saverin) نامی شخص کی۔

    ایڈورڈو بھی زکربرگ کی طرح ہارورڈ کا طالب علم تھا۔ دونوں ایک ہی ہاسٹل میں رہتے تھے اور بہت اچھے دوست تھے۔ کالج کے ابتدائی دنوں میں زکربرگ کو سوشل نیٹ ورکنگ سائٹ بنانے کا خیال آیا۔ دعویٰ کیا جاتا ہے کہ اس نے یہ آئیڈیا ہارورڈ کے دو دیگر طالب علموں سے چرایا تھا۔ تاہم، زکربرگ نے ایڈورڈو کو اس خیال کے بارے میں بتایا۔ ویب سائٹ چلانے کے لیے سرورز کی ضرورت تھی، جس کے لیے رقم کی ضرورت تھی۔ زکربرگ نے ایڈورڈو سے اس کام کے لیے ایک بینک اکاؤنٹ میں 15000 ڈالر ڈالنے کو کہا جس کی رسائی ان دونوں کے پاس ہوگی۔

    چٹان سا مضبوط 'چناب پل' تیز ہوا، زلزلے اور دھماکے سب برداشت کرلے گا، دنیا کا بلند ترین ریلوے پل

    رائزنگ انڈیا کے منچ پر وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا، 2047 میں دنیا میں نمبر 1ہوگا ہندوستان

    فیس بک 2004 میں بنائی گئی
    Thefacebook.com کا آغاز 2004 میں ہوا۔ تاہم کچھ عرصے بعد دونوں کے درمیان کام کے حوالے سے کچھ دراڑ آگئی۔ مارک زکربرگ نے الزام لگایا کہ سیورین نے ان کو دیا گیا کوئی کام نہیں کیا۔ اتنا ہی نہیں، سیورین نے زکربرگ سے بات کیے بغیر فیس بک پر اشتہارات چلائے جس کے وہ سخت خلاف تھے۔ اس کے فوراً بعد زکربرگ نے سیورین کو کمپنی سے نکالنے کا فیصلہ کیا اور Delaweap Corporation کے نام سے ایک نئی کمپنی بنائی۔ اس کمپنی نے  فیس بک کی پرانی ہولڈنگ کمپنی Florida LLC کو حاصل کیا۔ نئی کمپنی میں سیورین کے حصص کو 24 فیصد سے کم کرکے 10 فیصد کر دیا گیا۔

    طویل چلی لڑائی
    اس کے چند دن بعد مارک زکبرگ نے ایڈورڈو سیورین کو کمپنی سے باہر جانے کا راستہ دکھایا۔ قانونی لڑائیوں کا دور یہاں سے شروع ہوا۔ مزے کی بات یہ ہے کہ پہلا مقدمہ فیس بک کی جانب سے سیورین کے خلاف درج کیا گیا تھا۔ اس کے بعد سیورین نے جوابی کارروائی کی۔ اس طویل لڑائی کا نتیجہ سیورین کے حق میں آیا۔ اسے اپنی 15000 ڈالر کی سرمایہ کاری کے لیے ایک بڑی رقم ملی۔ تاہم آج تک اس رقم کا انکشاف نہیں کیا گیا ہے۔ سیورین آج ایک سرمایہ کار ہے اور اس کے اثاثے 10 بلین ڈالر کے لگ بھگ ہیں۔

    دی سوشل نیٹ ورک
    فیس بک کی اس کہانی پر 2010 میں ہالی ووڈ کے ایک بہت بڑے ڈائریکٹر نے دی سوشل نیٹ ورک کے نام سے فلم بنائی۔ یہ فلم ایک کتاب The Accidental Billionaire پر مبنی تھی۔ یہ فیس بک کے آغاز سے لے کر سیورین کے جنگ جیتنے تک کی کہانی دکھائی گئی ہے۔
    Published by:sibghatullah
    First published: