ہوم » نیوز » معیشت

EPF Vs NPS: بجٹ میں تبدیلی سے ہے الجھن! سمجھئے ای پی ایف اور این پی ایس میں کونسا ریٹائرمنٹ پلان بہتر

EPF vs NPS: آج جب سرمایہ کاری کے بہت سارے متبادل موجود ہیں تو بیشتر سرمایہ کاروں کو یہ الجھن رہتی ہے کہ کس متبادل میں سرمایہ کاری کی جائے۔

  • Share this:
EPF Vs NPS: بجٹ میں تبدیلی سے ہے الجھن! سمجھئے ای پی ایف اور این پی ایس میں کونسا ریٹائرمنٹ پلان بہتر
ای پی ایف اور این پی ایس میں کونسا ریٹائرمنٹ پلان بہتر

آج جب سرمایہ کاری کے بہت سے متبادل موجود ہیں تو بیشتر سرمایہ کاری کو یہ الجھن رہتی ہے کہ کس متبادل میں سرمایہ کاری کی جائے۔ بیشتر ملازمین کے لئے نیشنل پینشن سسٹم (این پی ایس) اور امپلائز پرویڈنٹ فنڈ (ای پی ایف) سرمایہ کاری کے بہترین متبادل ہیں۔ ان دونوں متبادل میں سرمایہ کاری سے دوہرا فائدہ ملتا ہے، ٹیکس بچت کے ساتھ ان سے سرمایہ کاروں کو اچھا ریٹرن بھی حاصل ہوتا ہے۔ حالانکہ، دونوں میں کونسا متبادل بہتر ہے، یہ امپلائی کی رسک لینے کی صلاحیت، سیکورٹی لاک ان، لکویڈٹی اور میچیورٹی وغیرہ فیکٹرس پر بھی منحصر کرتی ہے۔ این پی ایس اور ای پی ایف میں بہتر متبادل چننے کے لئے کچھ اہم نکات نیچے دیئے جا رہے ہیں، جن کی بنیاد پر آپ فیصلہ کرسکتے ہیں کہ کس میں سرمایہ کاری بہتر ہوگی۔


 ای پی ایف میں تعاون


پرویڈنٹ فنڈ سے منسلک قانون کئی دہائیوں سے ہے اور 20 سے زیادہ ملازمین والے کمپنیوں کو اسے 15 ہزار سے کم کی بیسک سیلری ماسک والے اپنے امپلائی کو آفر کرنا لازمی ہے۔ حالانکہ اس سے زیادہ کی بیسک سیلری والے ملازمین بھی اس میں تعاون کرسکتے ہیں۔


ای پی ایف میں منیمم کانٹریبیوشن پی ایف سیلری کا 12 فیصد ہوتا ہے، جو بیسک سیلری، ڈی اے (مہنگائی بھتہ)، فوڈ کنسیشن کا کیش ویلو اور ریٹیننگ الاونس کا ایگریگیٹ ہوتا ہے۔ ملازمین کی خواہش کے مطابق، بیشتر تعاون 15 ہزار روپئے کا 12 فیصدی یعنی 1800 روپئے فی ماہ تک محدود کیا جاسکتا ہے۔ حالانکہ اہلکار چاہیں تو اپنی 100 فیصدی بیسک سیلری کو ای پی ایف میں والنٹری تعاون کرسکتے ہیں۔

این پی ایس میں تعاون

ای پی ایس کے مخالف این پی ایس گزشتہ دہائی میں شروع کیا گیا تھا اور ہندوستانی حکومت کے ذریعہ شروع کیا گیا پنشن کم انوسٹمنٹ ہے۔ ہندوستانی شہری اور اوور سیز سٹیزن آف انڈیا کارڈ ہولڈرس اس میں سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔ این پی ایس ایک والنٹری کانٹریبیوشن اسکیم ہے، جس میں Tier 1 میں 500 روپئے اور Tier 2 کھاتے میں کم ازکم ایک ہزار روپئے کا منیمم کانٹریبیوشن کیا جاسکتا ہے۔ کوئی بھی انفرادی طور پر اپنے امپلائر کے ذریعہ یا آزاد طور پر این پی ایس سے جڑ سکتا ہے۔ اس میں پیسے کو سرمایہ کاری کرکے اپنی رسک لینے کی صلاحیت کے مطابق ایکوئٹی، کارپوریٹ ڈیٹ اور گورنمنٹ بانڈس میں سرمایہ کاری کے لئے متبادل کا انتخاب کرسکتے ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Mar 16, 2021 12:01 PM IST