உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عظیم پریم جی کی کمپنی وپرو Wipro ہوئی پچھیے، HCL Tech بنی ہندوستان کی تیسری سب سے بڑی IT کمپنی

    Youtube Video

    HCL Tech and Wipro: بزنس انسائیڈر کی مذکورہ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ ایچ سی ایل ​​ٹیک نے آمدنی، منافع اور مارکیٹ کیپٹلائزیشن کے لحاظ سے وپرو کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ جس کی اہم وجہ ایچ سی ایل کی جانب سے نئی ٹیکنالوجیز اور ڈیجٹس کے شعبہ میں جدت اور پہل ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Hyderabad | Kolkata | Mumbai | Lucknow
    • Share this:
      نئی دہلی: بزنس انسائیڈر کی ایک رپورٹ کے مطابق شیو نادر کی ایچ سی ایل ٹیکنالوجیز (HCL Technologies) نے ایک بار پھر عظیم پریم جی (Azim Premji) کی کمپنی وپرو (Wipro) کو سرمایہ کاری کے معاملے میں پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ ایچ سی ایل ٹیک نے پچھلے کچھ سال سے وپرو کے مقابلے میں اپنی خالص آمدنی میں اضافہ درج کیا ہے۔ یہ کوئی نئی بات نہیں ہے، کیونکہ ہر کاروبار میں کمی زیادتی آتی رہتی ہے۔ لیکن وپرو مارکیٹ کیپٹلائزیشن کے معاملے میں اب بھی پیچھے ہے۔

      اگر ہم دونوں آئی ٹی کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں کا جائزہ لیں تو ہمیں پتہ چلے گا کہ پچھلے ایک سال کے دوران دونوں کے حصص کی قیمتوں میں زبردست گراوٹ آئی ہے۔ ایچ سی ایل ٹیک کے حصص کی قیمت 20.76 فیصد گر گئی ہے، وہیں وپرو کی قیمت 35.58 فیصد گر گئی ہے۔ حصص کی قیمتوں میں یہ بڑی گراوٹ وپرو کے مارکیٹ کیپ میں کمی کی ایک وجہ ہو سکتی ہے۔

      بزنس انسائیڈر کی مذکورہ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ ایچ سی ایل ​​ٹیک نے آمدنی، منافع اور مارکیٹ کیپٹلائزیشن کے لحاظ سے وپرو کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ جس کی اہم وجہ ایچ سی ایل کی جانب سے نئی ٹیکنالوجیز اور ڈیجٹس کے شعبہ میں جدت اور پہل ہے۔ ملک میں ہر جگہ ہر آئے دن ٹیکنالوجیز کا استعمال بڑھتے ہی جارہا ہے۔ جو کہ اب ہر ایک کی ضرورت بنتے جارہی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      غلطی سے ڈلیٹ کر دیا ہے WhatsApp میسیج تو اس نئے فیچر سے جلد لا سکیں گے واپس

      یہ ایک دلچسپ بات ہے کہ وپرو نے کبھی بھی انفارمیشن ٹیکنالوجی فرم کے طور پر شروعات نہیں کی۔ ابتدائی طور پر اس کا نام ویسٹرن انڈیا ویجیٹیبل پروڈکٹس لمیٹڈ رکھا گیا تھا، جسے بعد میں وپرو کا مخفف کر دیا گیا۔ ابتدائی چند دہائیوں تک وپرو سبزیوں اور ریفائنڈ تیلوں کو تیار کرتا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      انسانوں سے پالتو جانوروں میں پھیل رہا ہے Monkeypox! ان احتیاطی تدابیر پر کریں عمل

      سال 1977 میں عظیم پریم جی کے اپنے والد سے کمپنی کی باگ ڈور سنبھالنے کے تقریباً ایک دہائی بعد انفارمیشن ٹیکنالوجی کی طرف ایک تبدیلی لائی گئی۔ 7 جون 1977 کو کمپنی کا نام ویسٹرن انڈیا ویجیٹیبل پروڈکٹس لمیٹڈ سے بدل کر وپرو پروڈکٹس لمیٹڈ کر دیا گیا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: