உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سونے کے زیورات کی لازمی ہال مارکنگ کی وجہ سے خریداری پر زبردست اثر ، جانئے کیوں

    سونے کے زیورات کی لازمی ہال مارکنگ کی وجہ سے خریداری پر زبردست اثر ، جانئے کیوں

    سونے کے زیورات کی لازمی ہال مارکنگ کی وجہ سے خریداری پر زبردست اثر ، جانئے کیوں

    آل انڈیا جیم اینڈ جیولری ڈومیسٹک کونسل کے ڈائریکٹر دنیش جین کہتے ہیں کہ اب زیورات کو وزن کے مسئلے کے لیے دوبارہ لیبارٹری جانا پڑے گا ، تصدیق کی جائے گی اور تب ہی گاہک کے حوالے کیا جائے گا۔

    • Share this:
      نئی دہلی : حکومت کو 40 لاکھ روپے سے زائد ٹرن اوور والے زیورات پر لازمی ہال مارکنگ hallmarking لگانے کو پچاس دن ہو چکے ہیں۔ اگلی بار جب آپ سونا خریدنے کے لیے زیورات کی دکان پر جائیں گے تو یہ آپ کے لیے اہم ہے۔ اس کی اہمیت کیوں ہے؟ جانیے تفصیلات

      صرف وہی خریدیں جس کا آپ سے وعدہ کیا گیا ہے

      ہال مارکنگ اس بات کو یقینی بنائے گا کہ آپ صرف اصلی سونے کے لیے ادائیگی کر رہے ہیں ۔ اس سے پہلے کچھ جیولرس تھے جو 18 قیراط کے زیورات بیچتے تھے اور صارفین سے 22 قیراط کے زیورات کی قیمت وصول کرتے تھے اور  وہ زیادہ خالص ہونے کا دعویٰ کرتے تھے ۔ اب یہ لازمی ہال مارکنگ ایکٹ اس طرح کی دھوکہ دہی کے طریقوں کو روکے گا ۔

      ہال مارکنگ کا مطلب یہ بھی ہو سکتا ہے کہ آپ کو زیورات کا ایک چھوٹا سا حصہ چیکنگ کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے ۔ اگر اس کے لیے سرٹیفیکیشن کے لیے آگ پرکھنے کا طریقہ درکار ہو۔ لیکن آپ صرف اس وزن کی ادائیگی کریں گے جو آپ کو ملتا ہے، اس طرح کے سکریپج کے بعد یہ بھی مصدقہ ہے۔

      انڈیا بلین اینڈ جیولرز ایسوسی ایشن کے قومی سیکرٹری سریندر مہتا کا کہنا ہے کہ آپ اس بات کا اندازہ کر سکتے ہیں کہ لوگو کی جانچ پڑتال سے زیورات کا ایک ٹکڑا اصل میں نشان زد ہے۔ ہال مارک شدہ زیورات کے ٹکڑے پر تین لوگو موجود ہیں-بیورو آف انڈین سٹینڈرڈز (BIS) لوگو ، اصلیت کا نشان اور چھ ہندسوں کا ہال مارکنگ انوکھا شناختی کارڈ (HUID) ہو۔
      ہال مارک شدہ زیورات کے لیے زیادہ اخراجات:

      ماہرین کا کہنا ہے کہ آپ کے ہال مارک شدہ زیورات کی قیمت بڑھنے کا پابند ہے۔ ہندوستان بھر میں تقریبا 933 لیبارٹریوں کو موجودہ زیورات کو ہال مارک کرنے کا کام سونپا گیا ہے (، مارکیٹ کی رپورٹوں کے مطابق کم از کم 5 کروڑ ٹکڑے ) وہ زیورات کے ٹکڑوں کو نشان زد کرنے کے لیے چوبیس گھنٹے کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے اپنی مشینری میں سرمایہ کاری کی ہے اور چوری اور دھوکہ دہی سے اپنے آپ کو بچانے کے لیے اپنے انشورنس کور میں بھی اضافہ کیا ہے۔ یہ سب آپ کو کس طرح متاثر کرتا ہے،

      اضافی قیمت آپ کو دی جائے گی۔ پوپلے گروپ کے ڈائریکٹر راجیو پوپلے نے ہال مارکنگ کی لاگت میں تین گنا اضافے کا تخمینہ لگایا ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ ’’لیبز زیورات قبول نہیں کر رہی ہیں کیونکہ وہ پہلے ہی اپنی انشورنس کوریج کی حد تک اسٹاک کر چکے ہیں‘‘۔

      اس لیے حیران نہ ہوں اگر آپ کے زیورات کے انوائس میں فی ہفتہ 35 روپے کے بجائے ستمبر سے 100 روپے فی ٹکڑا ہال مارکنگ/ سرٹیفیکیشن چارج کا ذکر ہے۔ پوپلے نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ فی یونٹ چارج 35 روپے ہے ، لہذا بالی کی ایک جوڑی فی ہال مارکنگ کے لیے 70 روپے زیادہ ہوگی۔" جون 2021 سے پہلے اگر آپ چاہتے تھے کہ 24 انچ کی زنجیر کو 20 انچ تک کم کیا جائے تو اندرون ملک ٹیکنیشن لمبائی کو فوری طور پر کم کر سکتا تھا اور آپ کو شام کی شادی میں تحفے یا پہننے کے لیے زیورات سونپ سکتا تھا۔

      آل انڈیا جیم اینڈ جیولری ڈومیسٹک کونسل کے ڈائریکٹر دنیش جین کہتے ہیں کہ اب زیورات کو وزن کے مسئلے کے لیے دوبارہ لیبارٹری جانا پڑے گا ، تصدیق کی جائے گی اور تب ہی گاہک کے حوالے کیا جائے گا۔ لہذا اگر آپ اپنی مرضی کے زیورات ڈھونڈتے ہیں تو پہلے سے منصوبہ بنائیں۔ پوپلے کہتے ہیں کہ لیبارٹریز کو ہال مارکنگ کرنے میں 14 دن سے زیادہ کا وقت لگ رہا ہے، جو پہلے 24-48 گھنٹوں میں کیا جا سکتا تھا‘‘۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: