உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہندوستان میں کووڈ۔19 کے دوران ڈائریکٹ بینیفٹ ٹرانسفر کی عالمی بینک کے صدر نے کی تعریف

    اس اسکیم کو حال ہی میں سال کے آخر تک بڑھا دیا گیا۔

    اس اسکیم کو حال ہی میں سال کے آخر تک بڑھا دیا گیا۔

    نریندر مودی حکومت نے 2020 میں پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا کا آغاز کیا تاکہ کووڈ وبائی مرض کے دوران ملک میں تقریباً 80 کروڑ لوگوں کو مفت راشن فراہم کیا جا سکے۔ ایسا لگتا ہے کہ اس نے ڈی بی ٹی میں اضافے میں بڑا کردار ادا کیا ہے۔ اس اسکیم کو حال ہی میں سال کے آخر تک بڑھا دیا گیا تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Mumbai | Delhi | Jammu | Hyderabad | Karnal
    • Share this:
      عالمی بینک کے صدر ڈیوڈ مالپاس کی کورونا وائرس وبا کے دوران لوگوں کی مدد کرنے میں ہندوستان کے ڈائریکٹ بینیفٹ ٹرانسفر (DBT) پروگرام کے لئے تعریف اس وقت سامنے آئی ہے جب ہندوستان نے پچھلے ڈھائی سال میں اپنی ڈائریکٹ بینیفٹ ٹرانسفر کوریج میں تیزی سے اضافہ کرکے نیا ریکارڈ قائم کیا ہے۔ مالپاس نے کہا ہے کہ ڈیجیٹل کیش ٹرانسفر کی مدد سے ہندوستان قابل ذکر 85 فیصد دیہی گھرانوں اور 69 فیصد شہری گھرانوں کو خوراک یا نقد امداد فراہم کرنے میں کامیاب ہوا ہے۔ دوسری قومیں وسیع سبسڈی کے بجائے ہندوستان کے ٹارگٹڈ کیش ٹرانسفر کے اقدام کو اپنائے۔

      نیوز 18 نے اس سے قبل 18 ستمبر کو اطلاع دی تھی کہ 2015 سے ہندوستان کا مجموعی ڈی بی ٹی اعداد و شمار گزشتہ ماہ 25 ٹریلین روپے سے تجاوز کر گیا تھا اور اس رقم کا 56 فیصد سے زیادہ لوگوں کو پچھلے ڈھائی سال میں دیا گیا تھا۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے پہلے کہا تھا کہ ڈی بی ٹی کووڈ۔19 کے دوران لوگوں کے لیے ایک نجات دہندہ ثابت ہوا ہے۔

      ہندوستان نے 21-2020 میں ڈی بی ٹی کے ذریعے 5.52 ٹریلین روپے منتقل کیے جب وبائی بیماری نے ملک کو متاثر کیا، جو پچھلے مالی سال کے 3.81 ٹریلین روپے کے اعداد و شمار سے تقریباً 45 فیصد زیادہ ہے۔ 22-2021 میں ڈی بی ٹی کی منتقلی بڑھ کر 6.3 ٹریلین روپے تک پہنچ گئی اور موجودہ مالی سال میں اب تک (چھ ماہ میں) تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق کل ڈی بی ٹی کی منتقلی 2.82 ٹریلین روپے تک پہنچ گئی ہے۔

      پچھلے مالی سال میں تقریباً 73 کروڑ لوگوں نے ڈی بی ٹی کے فوائد نقد اور 105 کروڑ لوگوں کو موصول ہوئے، ان میں سے بہت سے فائدہ اٹھانے والوں کو ایک سے زیادہ فوائد ملے۔ اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ 53 مرکزی وزارتوں کی 319 اسکیمیں ڈی بی ٹی اسکیم سے منسلک ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      یو جی نیٹ کونسلنگ 2022 دس اکتوبر سے شروع ہونے کی توقع، میڈیکل کونسلنگ کمیٹی کی نوٹس جاری

      ڈی بی ٹی کے تحت 22-2021 میں ریکارڈ تعداد میں 783 کروڑ ٹرانزیکشنز ہوئیں، جو کہ 21-2020 میں 603 کروڑ ٹرانزیکشنز اور 20-2019 مالی سال میں 438 کروڑ ٹرانزیکشنز سے بھی بڑی چھلانگ تھی۔ یہ پچھلے دو سال میں لین دین کی تعداد میں تقریباً 79 فیصد اضافہ ہے

      یہ بھی پڑھیں: 

      امت شاہ کے جموں وکشمیر دورے کے کیا رہے مثبت نتائج، جانئے دفاعی اور سیاسی ماہرین کی رائے

      نریندر مودی حکومت نے 2020 میں پردھان منتری غریب کلیان انا یوجنا کا آغاز کیا تاکہ کووڈ وبائی مرض کے دوران ملک میں تقریباً 80 کروڑ لوگوں کو مفت راشن فراہم کیا جا سکے۔ ایسا لگتا ہے کہ اس نے ڈی بی ٹی میں اضافے میں بڑا کردار ادا کیا ہے۔ اس اسکیم کو حال ہی میں سال کے آخر تک بڑھا دیا گیا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: