உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Stock Market: اسٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاری کیسے شروع کریں؟ کیا ہیں رہنما ہدایات

    میوچل فنڈز سرمایہ کاروں سے جمع کی گئی رقم کو سیکیورٹی بازاروں میں لگاتے ہیں۔

    میوچل فنڈز سرمایہ کاروں سے جمع کی گئی رقم کو سیکیورٹی بازاروں میں لگاتے ہیں۔

    آج کے دور میں حصول دولت اور بہترین کمائی کے لیے ایک اچھا ذریعہ اسٹاک مارکیٹ (Stock Market) ہے۔ اس کے مختلف طریقے ہیں جن کے ذریعے کوئی شخص بازار میں عوامی طور پر درج اسٹاک میں پیسہ لگا سکتا ہے۔

    • Share this:
      اسٹاک مارکیٹ وہ مقام ہوتا ہے، جہاں حصص (Shares) کے تبادلے اور کاروباری سرگرمیوں انجام دی جاتی ہیں، جہاں عوامی سطح پر کمپنیوں کے حصص کی خرید، فروخت اور اجرا ہوتا ہے۔ ایسی مالی سرگرمیاں ادارہ جاتی رسمی تبادلے (چاہے فزیکل ہو یا الیکٹرانک) یا اوور دی کاؤنٹر (OTC) بازاروں کے ذریعے کی جاتی ہیں جو ضابطوں کے ایک متعین سیٹ کے تحت کام کرتی ہیں۔

      آج کے دور میں حصول دولت اور بہترین کمائی کے لیے ایک اچھا ذریعہ اسٹاک مارکیٹ (Stock Market) ہے۔ اس کے مختلف طریقے ہیں جن کے ذریعے کوئی شخص بازار میں عوامی طور پر درج اسٹاک میں پیسہ لگا سکتا ہے۔

      سرمایہ کاری کے دوران بڑے منافع کی بھی امید کی جاسکتی ہے۔
      سرمایہ کاری کے دوران بڑے منافع کی بھی امید کی جاسکتی ہے۔


      اسٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاری کے لیے درکار دستاویزات:

      آپ کا پین کارڈ

      آپ کا آدھار کارڈ

      آپ کے فعال بینک اکاؤنٹ سے منسوخ شدہ چیک پر آپ کا نام

      دستاویزات کی فہرست پر مبنی آپ کی رہائش کا ثبوت جو آپ کے اسٹاک بروکر، ڈپازٹری شرکت کنندہ یا بینک نے قبول کیا ہے۔

      آپ کی پاسپورٹ سائز کی تصاویر

      ڈیمیٹ اکاؤنٹ (Demat Account):

      ڈیمیٹ اکاؤنٹ وہ ہوتا ہے جو اکاؤنٹ ہولڈر کے نام پر کسی کے حصص رکھتا ہے۔ ڈیمیٹ اکاؤنٹ آپ کے حصص کے لیے الیکٹرانک ہاؤس (electronic house) کا کام کرتا ہے۔ اسے جمع کرنے والے شریک کی مدد سے آن لائن کھولا جاتا ہے۔ بہت سے بینک اپنے سرمایہ کاروں کو ڈیمیٹ اکاؤنٹ کی خدمات بھی پیش کرتے ہیں۔ ڈیمیٹ اکاؤنٹ کھولنا آسان عمل ہے۔ جسے چند منٹوں میں اپنے گھر کے آرام سے ہی انجام دیا جا سکتا ہے۔

      تجارتی اکاؤنٹ (Trading Account):

      ڈیمیٹ اکاؤنٹ اور ٹریڈنگ اکاؤنٹ ساتھ ساتھ چلتے ہیں۔ ڈیمیٹ سے مراد ’ڈی میٹریلائزڈ‘ ہے جو اس بات کی نشاندہی کرتا ہے کہ یہ آپ کے حصص کا ذخیرہ ہے۔ دوسری طرف ایک تجارتی اکاؤنٹ وہ اکاؤنٹ ہے جس کے ساتھ آپ وہ سیکیورٹیز خریدتے اور بیچتے ہیں جن کی آپ اسٹاک مارکیٹ میں تجارت کرنا چاہتے ہیں۔

      جب بات شروع کرنے والوں کے لیے اسٹاک میں سرمایہ کاری کی ہو، تو آپ ڈیمیٹ اور ٹریڈنگ اکاؤنٹ دونوں کے بغیر ایسا نہیں کر سکتے۔ بمبئی اسٹاک ایکسچینج (Bombay Stock Exchange) اور نیشنل اسٹاک ایکسچینج (National Stock Exchange) دونوں بنیادی ایکسچینج ہیں جہاں زیادہ تر اچھے معیار کے اسٹاک درج ہیں۔

      تاہم کچھ اسٹاک صرف ان دونوں ایکسچینجز میں سے کسی ایک پر دستیاب ہوسکتے ہیں۔ اس لیے ایک عام ٹِپ یہ ہے کہ اپنا ٹریڈنگ اکاؤنٹ ایک ڈپازٹری شریک کے ساتھ کھولیں جو BSE اور NSE دونوں پر ٹریڈنگ کی پیشکش کرتا ہے۔

      لنک شدہ بینک اکاؤنٹ (Linked Bank Account):

      جیسا کہ آپ اسٹاک میں سرمایہ کاری کرنے کا انتخاب کر رہے ہیں، آپ وقت کے ساتھ ساتھ ان کی خرید و فروخت کرتے رہیں گے۔ اس کے لیے آپ کو ایک بینک اکاؤنٹ درکار ہوگا جو آپ کے تجارتی اکاؤنٹ سے منسلک ہو۔ یہ اس بات کو یقینی بناتا ہے کہ جب آپ تجارت کرتے ہیں تو پیسہ آپ کے اکاؤنٹ میں بغیر کسی رکاوٹ کے آتا ہے۔ یہ زیادہ تر بروکرز کے ذریعہ لازمی ہے جن کے ساتھ آپ ڈیمیٹ اور ٹریڈنگ اکاؤنٹ کھولنے کا انتخاب کریں گے۔

      ان دنوں آپ کو ایک میں دو اکاؤنٹ مل سکتے ہیں جو ڈیمیٹ اکاؤنٹ اور ٹریڈنگ اکاؤنٹ دونوں کے طور پر کام کرتے ہیں۔ کچھ بروکرز ایک اکاؤنٹ میں تین بھی پیش کرتے ہیں جہاں کوئی اپنے بینک اکاؤنٹ سے براہ راست تجارت کر سکتا ہے اور اپنی سیکیورٹیز کو اسی جگہ پر اسٹور کر سکتا ہے۔

      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ  تعلیم و روزگار اور بزنس  کی خبروں کے لیے  نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔ 
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: