உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    فائنانس سے وابستہ سرکاری کمپنی کا 80 فیصدی بڑھا منافع ، NPA میں بھی بہتری

    فائنانس سے وابستہ سرکاری کمپنی کا 80 فیصدی بڑھا منافع ، NPA میں بھی بہتری

    فائنانس سے وابستہ سرکاری کمپنی کا 80 فیصدی بڑھا منافع ، NPA میں بھی بہتری

    IIFCL Result : آئی آئی ایف سی ایل کو 2006 میں حکومت ہند کے ایک مکمل ملکیت والے ادارے کے طور پر قائم کیا گیا تھا ، جو ہندوستان میں بنیادی ڈھانچے کے شعبے کی طویل مدتی مالیاتی ضروریات کو پورا کرتی ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : انڈیا انفراسٹرکچر فائنانس کمپنی لمیٹڈ کا خالص منافع مالی سال 2021-22 کی چوتھی سہ ماہی میں 80 فیصد بڑھ کر 514 کروڑ روپے تک پہنچ گیا۔ اس کی بڑی وجہ قرضوں میں اضافہ اور پھنسے قرضوں میں کمی ہے۔ بتادیں کہ سرکاری ملکیت والی انفراسٹرکچر فائنانس کمپنی آئی آئی ایف سی ایل نے گزشتہ مالی سال میں 285 کروڑ روپے کا خالص منافع کمایا تھا۔

       

      یہ بھی پڑھئے: نڈسٹری بن گئی ہے تعلیم .... مہنگی پڑھائی پر Supreme Court کا تلخ تبصرہ، جانئے پوری تفصیل


      آئی آئی ایف سی ایل کے منیجنگ ڈائریکٹر پی آر جے شنکر نے کہا کہ کمپنی نے 2019-20 میں درج 51 کروڑ روپے کے مقابلہ میں منافع میں تقریباً 10 گنا اضافہ درج کیا ہے اور بہتر کارکردگی جاری رکھی ہے۔ تاہم جے شنکر نے کہا کہ موجودہ مارکیٹ کے حالات اور دیگر بیرونی عوامل کاروبار کی رفتار کا تعین کریں گے۔

       

      یہ بھی پڑھئے : ای ڈی کی بڑی کارروائی، سونیا اور راہل گاندھی کو بھیجا سمن


      نیز آئی آئی ایف سی ایل کا مجموعی این پی اے ایک سال پہلے کے 13.9 فیصد سے گھٹ کر 9.22 فیصد رہ گیا ۔ کمپنی کا خالص این پی اے بھی ایک سال پہلے کی مدت میں 5.39 فیصد سے کم ہو کر 3.65 فیصد پر آگیا ہے ۔

      آئی آئی ایف سی ایل کو 2006 میں حکومت ہند کے ایک مکمل ملکیت والے ادارے کے طور پر قائم کیا گیا تھا ، جو ہندوستان میں بنیادی ڈھانچے کے شعبے کی طویل مدتی مالیاتی ضروریات کو پورا کرتی ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: