உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹیکس چوری کا معاملہ:یوپی، دہلی سمیت کئی ریاستوں میں 100 سے زیادہ مقامات پر Income tax کی چھاپہ ماری

    Income Tax raid: جن ریاستوں میں محکمہ انکم ٹیکس کارروائی کر رہا ہے ان میں بنیادی طور پر اتر پردیش، دہلی، مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ، ہریانہ اور گجرات شامل ہیں۔

    Income Tax raid: جن ریاستوں میں محکمہ انکم ٹیکس کارروائی کر رہا ہے ان میں بنیادی طور پر اتر پردیش، دہلی، مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ، ہریانہ اور گجرات شامل ہیں۔

    Income Tax raid: جن ریاستوں میں محکمہ انکم ٹیکس کارروائی کر رہا ہے ان میں بنیادی طور پر اتر پردیش، دہلی، مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ، ہریانہ اور گجرات شامل ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Uttar Pradesh
    • Share this:
      ملک کی کئی ریاستوں میں 100 سے زیادہ مقامات پر انکم ٹیکس کے چھاپے جاری ہیں۔ اس کارروائی میں نیم فوجی دستوں کی بھی مدد لی جا رہی ہے۔ ذرائع کے مطابق انکم ٹیکس حکام چھاپے مارنے کے لیے صبح 6.30 بجے مختلف مقامات پر پہنچ گئے تھے۔ ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق یہ چھاپہ سیاسی جماعت کے نام پر چندہ جمع کرنے کے معاملے میں مارا گیا ہے۔ محکمہ انکم ٹیکس اس دھوکہ دہی کے مرتکب افراد کے خلاف کارروائی کر رہا ہے۔ محکمہ نے اتر پردیش میں تقریباً دو درجن مقامات پر چھاپے مارے ہیں۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق ٹیکس چوری کے ذریعے کروڑوں روپے کے فراڈ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

      جن ریاستوں میں محکمہ انکم ٹیکس کارروائی کر رہا ہے ان میں بنیادی طور پر اتر پردیش، دہلی، مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ، ہریانہ اور گجرات شامل ہیں۔ انکم ٹیکس کی یہ کارروائی چھوٹی سیاسی جماعتوں سے متعلق ہے، جنہوں نے لوگوں سے چندہ لیا اور بعد میں نقد رقم واپس کی۔ محکمہ کی یہ کارروائی الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر مبنی ہے۔ اس کے ساتھ وہ کارپوریٹس بھی محکمہ انکم ٹیکس کے نشانے پر ہیں جنہوں نے انٹری آپریٹرز کے ذریعے سیاسی جماعتوں کو چندہ دیا ہے۔

       

      ڈپریشن میں ہیں Waseem Rizvi عرف جتیندر تیاگی، خودکشی پر کی بات، بولے نہیں ملا وہ پیار۔۔۔

      کچھ برا ہونے کے ڈر سے آرہا پسینہ، کہیں Anxiety Attack تو نہیں؟ جانئے اہم معلومات

      موصولہ اطلاعات کے مطابق راجستھان میں 53 مقامات پر چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ محکمہ انکم ٹیکس نے یہاں مڈ ڈے میل کے تاجروں پر بھی چھاپے مارے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی دہلی اور دہلی کے باہر کارروائی کے لیے نیم فوجی دستوں کا استعمال کیا جا رہا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: