உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہندوستان میں کرپٹو کرنسی کیلئے کافی امکانات ہیں ، لیکن شفافیت کتنی ہے؟

    ہندوستان میں کرپٹو کرنسی کیلئے کافی امکانات ہیں ، لیکن شفافیت کتنی ہے؟ (Image: Reuters)

    ہندوستان میں کرپٹو کرنسی کیلئے کافی امکانات ہیں ، لیکن شفافیت کتنی ہے؟ (Image: Reuters)

    10 کروڑ سے زیادہ سرمایہ کاروں کے ساتھ ہندوستان ، امریکہ اور روس سمیت دنیا کے دیگر ممالک کے مقابلہ میں کافی آگے ہے ۔

    • Share this:
      کرپٹو کرنسی کو اپنانے کی بات کریں تو دنیا کے دیگر ممالک کے مقابلہ میں ہندوستان کافی آگے ہے ۔ بروکر چوزر (Brokerchooser) کی ایک رپورٹ کے مطابق کرپٹو کرنسی میں سرمایہ کاری کرنے والے سرمایہ کاروں کی تعداد پر نظر ڈالیں تو 10 کروڑ سے زیادہ سرمایہ کاروں کے ساتھ ہندوستان امریکہ اور روس سمیت دنیا کے دیگر ممالک کے مقابلہ میں کافی آگے ہے ۔

      امریکہ میں صرف 2.74 کروڑ کرپٹو سرمایہ کار ہیں ۔ وہیں روس میں ان کی تعداد 1.73 کروڑ ہے ۔ Zerodha کے فاونڈر نتن کامت نے بھی اپنے ٹویٹ میں اس بات کو ہائی لائٹ کیا ہے کہ ہندوستان دنیا کا ساتواں سب سے بڑا کرپٹو اویئر ملک ہے ۔ اس کے علاوہ کل آبادی میں کرپٹو سرمایہ کاروں کی تعداد کے نظریہ سے بھی ہندوستان پانچواں سب سے بڑا ملک ہے ۔ ملک میں کرپٹو کرنسی کے بازار میں سالانہ بنیاد پر تقریبا 651 فیصد کا اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے ۔

      ملک میں کرپٹو مارکیٹ کی ترقی کی کہانی یہیں نہیں ختم ہوجاتی ہے ۔ سبھی رپورٹس سے یہ پتہ چلتا ہے کہ ہندوستان کرپٹو کرنسی کے اڈپشن کے نظریہ سے 154 ممالک میں دوسرے نمبر پر ہے ۔ یہاں تک کہ کرپٹو کو لے کر ملک کے لوگوں کے ذریعہ جانکاری حاصل کرنے کے نظریہ سے دیکھیں تو ملک میں ہر سکینڈ 36 لاکھ لوگ انٹرنیٹ پر کرپٹو کرنسی سرچ کرتے ہیں ۔

      وہیں امریکہ میں یہ تعداد 69 لاکھ سرچ فی سکینڈ ہے ۔ اس طرح انٹرنیٹ پر کرپٹو سرچ کے معاملہ میں ہندوستان امریکہ کے بعد دنیا میں دوسرے مقام پر ہے ۔ یہ اعداد و شمار گزشتہ 12 ماہ کے ہیں ۔

      یہ اعداد و شمار ملک میں کرپٹو سے وابستہ جوش کو بیان کرتے ہیں ۔ لیکن اس کے سرمایہ کاروں سے وابستہ شفافیت اور ضوابط کی وضاحت کے نظریہ سے دیکھیں تو اس کا کافی فقدان ہے ۔

      ایک طرف جہاں کرپٹو کرنسی سرمایہ کاری کے ایک بڑے متبادل کی شکل میں ابھر رہی ہے تو وہیں دوسری طرف لیجنڈوں کا ماننا ہے کہ ملک میں سرمایہ کاروں کی سرمایہ کاری کی سیکورٹی کو لے کر ضوابط اور شفافیت کا فقدان ہے ۔ ملک میں مسلسل ترقی کرتے کرپٹو مارکیٹ کیلئے ضوابط میں زیادہ وضاحت اور شفافیت کی ضرورت ہے ۔

      ملک میں کرپٹو انڈسٹری کے صحت مند فروغ میں اپنا اہم کردار نبھاتے ہوئے کرپٹو ایکسچینج WazirX نے اپنی پہلی ٹرانسپیرنسی رپورٹ جاری کی ہے ، جس میں اپریل سے ستمبر 2021 کی مدت میں کمپنی سے مختلف لا انفورسمنٹ ایجنسی کی طرف سے مانگی گئی جانکاریوں ، جانکاریوں کی نوعیت ، یوزر ویریفکیشن اور کسٹمر سپورٹ کیلئے کئے گئے بندوبست کی تفصیلات کی گئی ہیں ۔

      WazirX کا منصوبہ ہے کہ وہ ششماہی بنیاد پر اس طرح کی ٹرانسپیرنسی رپورٹ جاری کرے گی ۔ اس کے ساتھ ہی WazirX  نے ایک بلاک چین ریسرچ اور اینالسس پلیٹ فارم لانچ کرنے کا بھی اعلان کیا ہے ، جس کا نام بلاک چین پیپر ہوگا ۔

      کمپنی نے اس رپورٹ میں بتایا ہے کہ اس کو اپریل سے ستمبر 2021 کی مدت میں مختلف لا انفورسمنٹ ایجنسیوں سے تقریبا 377 درخواستیں ملی ہیں ۔ ان میں 38 غیر ملکی لا انفورسمنٹ ایجنسیاں ہیں جبکہ 339 ہندوستانی لا انفورسمنٹ ایجنسیاں ہیں ۔

      کمپنی نے بتایا ہے کہ اس نے سبھی درخواستوں کا جواب دیدیا ہے اور اس کی کمپلائنس ریٹ 100 فیصدی ہے ۔ یہ دھیان دینے کی بات ہے کہ اس پوچھ تاچھ سے وابستہ سبھی معاملات مجرمانہ نوعیت کے معاملات ہیں ۔

      اس رپورٹ میں کمپنی نے مزید بتایا ہے کہ اس نے اپریل سے ستمبر 2021 کی مدت میں تقریبا 14469 اکاونٹ بلاک کئے ہیں ۔ اس میں سے تقریبا 90 فیصدی اکاونٹ صارفین کی درخواست پر بلاک کئے گئے ہیں اور باقی ماندہ اکاونٹس ادائیگی سے وابستہ تنازعات اور لا انفورسمنٹ ایجنسیوں کی جانچ کی وجہ سے بلاک کئے گئے ہیں ۔

      شفافیت کے تئیں بڑھتی یہ توجہ اس وقت بڑھی ہے جب WazirX ( 83 لاکھ ) اور کائنسوچ کوبیر جیسے کرپٹو ایکسچینجز نے جرودھا ( 70 لاکھ) جیسے پلیٹ فارم کو پیچھے چھوڑ دیا ہے ۔

      اس پر تبصرہ کرتے ہوئے WazirX کے فاونڈر اور سی ای او نشچل شیٹی نے کہا کہ ٹرانسپیرنسی رپورٹ ہمارے لئے کافی اہم ہے ۔ یہ اپنے آپ میں ایک ماڈل ہے ۔ اس سے ہندوستان میں کرپٹو سے متعلق تصورات اور ریگولیشنز میں بڑی تبدیلی ہوگی ۔ ہماری کارکردگی ، مارکیٹ کیپ اور ٹریڈنگ والیوم کو پیش نظر رکھتے ہوئے ہمیں یونیکارن مانا جاتا ہے ۔

      حالانکہ ایوولیوشن ہمارے لئے اندرونی نہیں ہے ۔ ٹرانسپیرنسی رپورٹ جیسی ہماری پہل کرپٹو مارکیٹ کے اعتبار میں اضافہ کرے گی اور یہ سرمایہ کاروں کیلئے زیادہ پرکشش بنے گا ۔ ہم پازیٹیو ریگولیشن جیسے بڑے ہدف پر توجہ مرکوز کررہے ہیں اور ہم نئے اقدامات کے ذریعہ اس کیلئے راہ ہموار کررہے ہیں ۔

      اسی سلسلہ میں WazirX کے ڈائریکٹر آف پبلک پالیسی اریترا سرکھیل نے کہا کہ ایکسچینج اپنے صارفین اور پالیسی میکرس کیلئے ہندوستان میں کرپٹو کاروبار سے وابستہ سبھی معاملات میں پوری طرح شفافیت لانے کیلئے پابند عہد ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: