உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    India - Japan: جاپان اگلے 5 سال میں ہندوستان میں کرےگاکثیرسرمایہ کاری، PM Modi نے بتائی اہم باتیں

    Youtube Video

    پی ایم مودی نے کہا کہ اس تناظر میں جاپانی کمپنیاں طویل عرصے سے ہمارے برانڈ ایمبیسیڈر ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان صاف توانائی کی شراکت اس سمت میں فیصلہ کن قدم ثابت ہوگی۔ ہندوستان اور جاپان دونوں ہی ایک محفوظ، بھروسہ مند، متوقع اور مستحکم توانائی کی فراہمی کی اہمیت کو سمجھتے ہیں۔

    • Share this:
      وزیر اعظم ہند نریندر مودی (Narendra Modi) نے ہفتہ کے روز کہا ہے کہ جاپان اگلے پانچ سال میں ہندوستان میں سرمایہ کاری کا ہدف بڑھا کر 3.2 لاکھ کروڑ روپے یا 5 ٹریلین ین کرے گا۔ ہندوستان اور جاپان نے وزیر اعظم نریندر مودی اور ان کے جاپانی ہم منصب فومیو کشیڈا (Fumio Kishida) کے درمیان دو طرفہ بات چیت کے بعد چھ معاہدوں پر دستخط کئے۔ وزیر اعظم مودی نے کہا کہ ہماری حکومت جاپانی کمپنیوں کو ہر ممکن تعاون فراہم کرنے کے لئے پرعزم ہے۔

      مودی نے انڈیا-جاپان اکنامک فورم (India-Japan Economic Forum) میں کہا کہ ترقی، خوشحالی اور شراکت داری ہندوستان-جاپان تعلقات کی بنیاد ہے۔ دونوں رہنماؤں نے اپنے ملکوں کے درمیان سائبر سیکیورٹی، تعمیراتی شعبہ، معلومات کے تبادلے اور تعاون کے شعبوں میں معاہدوں سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔

      قبل ازیں کشیڈا کا استقبال پی ایم مودی نے دہلی کے حیدرآباد ہاؤس (Hyderabad House in Delhi) میں کیا اور دونوں رہنماؤں نے نتیجہ خیز بات چیت کی۔ ہندوستان-جاپان شراکت داری کو آگے بڑھانے کی طرف ایک اور قدم اٹھاتے ہوئے انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی اور ثقافتی روابط کو فروغ دینے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا۔

      مزید پڑھیں: Russia-Ukraine War: جملہ 203 نوبل انعام یافتگان نے دی یہ بڑی وارننگ! دنیا میں دوڑے گی خونی لہر

      دو طرفہ بات چیت اور اقتصادی فورم کے بعد ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پی ایم مودی نے کہا کہ جاپان، ہندوستان میں سب سے بڑے سرمایہ کاروں میں سے ایک ہے۔ ہندوستان-جاپان ممبئی-احمد آباد ہائی اسپیڈ ریل کوریڈور پر ’ایک ٹیم، ایک پروجیکٹ‘ کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج ہندوستان دنیا کے لیے ’میک ان انڈیا‘ (Make in India) کے ذریعے بے پناہ امکانات پیش کر رہا ہے۔

      پی ایم مودی نے کہا کہ اس تناظر میں جاپانی کمپنیاں طویل عرصے سے ہمارے برانڈ ایمبیسیڈر ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان صاف توانائی کی شراکت اس سمت میں فیصلہ کن قدم ثابت ہوگی۔ ہندوستان اور جاپان دونوں ہی ایک محفوظ، بھروسہ مند، متوقع اور مستحکم توانائی کی فراہمی کی اہمیت کو سمجھتے ہیں۔ یہ پائیدار اقتصادی ترقی کے ہدف کو حاصل کرنے اور موسمیاتی تبدیلی کے مسئلے سے نمٹنے کے لیے ضروری ہے۔

      Crude Oil پر مودی حکومت کی مشکل: روس سے سستاخام تیل خریدنے کی خواہش پرامریکہ نے کیاخبردار

      جاپان کے نکی اخبار کے مطابق کشیڈا کا 5 ٹریلین ین (جاپانی کرنسی) کا ہدف پانچ سال میں سرمایہ کاری اور فنانسنگ میں 3.5-ٹریلین ین سے زیادہ ہے جس کا اعلان اس وقت کے جاپانی وزیر اعظم شنزو آبے نے اپنے 2014 کے دورہ ہندوستان کے دوران کیا تھا۔ جاپان فی الحال ہندوستان کے شہری بنیادی ڈھانچے کی ترقی کے ساتھ ساتھ جاپان کی شنکانسن بلٹ ٹرین ٹیکنالوجی پر مبنی تیز رفتار ریلوے کی حمایت کر رہا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: