உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    JIO: اب جیو بھی میٹاورس (Metaverse) میں کرے گا 15 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری، ہندوستان کی بھی ہوگی حصہ داری!

    جیو Jio

    جیو Jio

    جیو کے ڈائریکٹر آکاش امبانی (Akash Ambani) نے کہا کہ ہم اے آئی ایم ایل (AI/ML)، اے آر (AR) میٹاورس (Metaverse) اور Web 3.0 کے شعبوں میں TWO کے تحت بانی ٹیم کے مضبوط تجربے اور صلاحیتوں سے متاثر ہیں۔

    • Share this:
      جیو پلیٹ فارمز (Jio Platforms) نے دو پلیٹ فارمز انکارپوریٹڈ میں 15 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کا اعلان کیا ہے، جسے TWO بھی کہا جاتا ہے۔ ان میں سیلیکون ویلی پر مبنی ڈیپ ٹیک اسٹارٹ اپ جسے پرناو مستری (Pranav Mistry) نے قائم کیا تھا، جس کے 25 فیصد ایکویٹی حصص ہے۔

      جیو کے ڈائریکٹر آکاش امبانی (Akash Ambani) نے کہا کہ ہم اے آئی ایم ایل (AI/ML)، اے آر (AR) میٹاورس (Metaverse) اور Web 3.0 کے شعبوں میں TWO کے تحت بانی ٹیم کے مضبوط تجربے اور صلاحیتوں سے متاثر ہیں۔ ہم انٹرایکٹو AI، عمیق گیمنگ اور میٹاورس کے شعبوں میں نئی ​​مصنوعات کی ترقی میں تیزی لانے کے لیے TWO کے ساتھ مل کر کام کرنے کے منتظر ہیں۔

      ٹی ڈبلیو او ایک مصنوعی حقیقت (AR) پر مبنی کمپنی ہے جس کی توجہ انٹرایکٹو اور عمیق AI تجربات کی تعمیر پر ہے۔ ٹی ڈبلیو او کا مصنوعی حقیقت پلیٹ فارم ریئل ٹائم AI وائس اور ویڈیو کالز، ڈیجیٹل انسانوں، عمیق جگہوں اور زندگی جیسی گیمنگ کو قابل بناتا ہے۔ ایک بیان کے مطابق ٹی ڈبلیو او اپنی انٹرایکٹو AI ٹیکنالوجیز کو سب سے پہلے صارفین کی ایپلی کیشنز میں لانے کا ارادہ رکھتا ہے جس کے بعد تفریح ​​اور گیمنگ کے ساتھ ساتھ انٹرپرائز حل بشمول خوردہ، خدمات، تعلیم، صحت اور تندرستی سے متعلق دیگر شعبوں کو شامل کیا گیاہے۔

      ٹی ڈبلیو او میں بانی ٹیم کے پاس معروف عالمی ٹیکنالوجی کمپنیوں کے ساتھ تحقیق، ڈیزائن اور آپریشنز میں کئی سال کا قائدانہ تجربہ ہے۔ میڈیا کو دیے گئے ایک بیان کے مطابق ٹی ڈبلیو او نئی ٹیکنالوجیز کو اپنانے کو تیزی سے ٹریک کرنے اور اے آئی، میٹاورس اور مخلوط حقائق جیسی خلل ڈالنے والی ٹیکنالوجیز بنانے کے لیے جیو کے ساتھ مل کر کام کرے گا۔

      جیو ہندوستان کی ڈیجیٹل تبدیلی کی بنیاد ہے۔ ہم ٹی ڈبلیو او میں جیو کے ساتھ شراکت داری کے لیے پرجوش ہیں تاکہ اے آئی کی حدود کو آگے بڑھایا جا سکے اور مصنوعی حقیقت کی ایپلی کیشنز کو صارفین اور کاروباروں کے لیے بڑے پیمانے پر متعارف کرایا جا سکے۔ وائٹ اینڈ کیس نے لین دین کے لیے جیو کے قانونی مشیر کے طور پر کام کیا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: